آسام معاہدے پر عمل درآمد کے لیے کمیٹی کی تشکیل ہوگی:راج ناتھ سنگھ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 3rd January 2019, 9:02 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،3 جنوری (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)حکومت نے گذشتہ تین دہائی سے بھی زیادہ وقت سے سرد خانے میں پڑے آسام سمجھوتے کو موثر طورپر نافذ کرنے کے طریقہ کار کا مشورہ دینے کے لیے ایک اعلیٰ سطحی کمیٹی قائم کی ہے۔حکومت نے بوڈو فرقہ سے متعلق زیر التوا مسائل کو حل کرنے کے لیے بھی کئی اقدامات اٹھانے کافیصلہ لیاہے ۔وزیر اعظم نریندر مودی کی صدارت میں آج یہاں ہوئی مرکزی کابینہ کی میٹنگ میں ان فیصلوں سے متعلق تجاویز کو منظوری دی گئی۔ میٹنگ کے بعد مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ مرکز، آسام حکومت اور آل آسام اسٹوڈنٹس یونین (آسو) نے 15 اگست 1985 کو آسام معاہدہ پر دستخط کیے تھے لیکن35 سال گذر جانے کے باوجود یہ موثر طورپر نافذ نہیں ہوپایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے اس کے موثرعمل درآمدکا فیصلہ کیا ہے اور اس کے لئے ایک اعلی سطحی کمیٹی تشکیل دی ہے۔ کمیٹی اس معاہدہ کے دفعہ 6کا پورا جائزہ لے گی اور اپنی سفارشات دے گی۔ کمیٹی کا ڈھانچہ اور اس کی خدمات کی شرطوں کے بارے میں دو تین دن میں اطلاع عام کردی جائے گی۔ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ کمیٹی میں آسام کے لوگوں کی بھی نمائندگی ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی پھر جیتے تو ملک میں شاید انتخابات نہ ہوں: اشوک گہلوت

کانگریس کے سینئر لیڈر اور راجستھان کے وزیر اعلی اشوک گہلوت نے منگل کو نریندر مودی حکومت کے دور میں ’جمہوریت اور آئین‘ کو خطرہ ہونے کا الزام لگاتے ہوئے دعوی کیا کہ اگر عوام نے مودی کو پھر سے اقتدار سونپا، تو ہو سکتا ہے