کاروار میں زوردار بارش کے نتیجے میں دو سرکاری عمارتوں اور نو دیگر مکانوں کو نقصان؛ اُترکنڑا میں بارش کا زور ہوا کم

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 11th June 2018, 6:34 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کاروار 11/جون (ایس او نیوز) ضلع اُترکنڑا کے مختلف تعلقہ جات میں  اتوار کو ہوئی زوردار بارش کے نتیجے میں  کئی علاقوں میں مکانوں  پر درختوں کے گرنے سے نقصانات کی اطلاعات ملی ہیں۔ ضلع بھر میں سب سے زیادہ کاروار میں بارش ریکارڈ کی گئی ہے جہاں 140.4 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ، جبکہ ہلیال میں سب سے کم 18.8 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ہے۔ تین دنوں تک مسلسل بارش کے بعد آج پیر کو بارش کا  زور کم ہوگیا ہے، جس سے عید کی خریداری کرنے والوں اور عید کا کاروبار کرنے والوں کو بھی راحت مل گئی ہے۔

کاروار کے سداشیوگڑھ سے ملی اطلاع کے مطابق اتوار کو  ناخدا محلہ اور بیرے گرام میں مکانوں پر  درختوں کے گرنے سے لاکھوں مالیت کا نقصان ہوا ہے۔ ضلع بھر میں تین دنوں سے جاری موسلادھار بارش کے نتیجے میں  تالاب، ندیاں، نالے اور کنویں سب بھر گئے ہیں، کاروار کے کچھ علاقوں  میں کنوئوں کا پانی اتنا اوپر آچکا  ہے  کہ ہاتھ سے ہی پانی نکالاجاسکتا ہے۔

بتایا جارہا ہے کہ کاروار میں اتوار کو صبح ہوئی زوردار بارش کو دیکھتے ہوئے محکمہ الیکٹری سٹی نے  احتیاط کے طور پر بجلی بند کردی تھی، جس کی بنا پر الیکٹرک کھمبوں کے گرنے سے   زیادہ نقصان نہیں ہو پایا۔ خبر ہے کہ  کئی علاقوں میں الیکٹرک کھمبوں پر  درختوں کے محکمہ ہیسکام کو کافی نقصان ہوا ہے۔

کاروار ڈپٹی کمشنر دفتر کے عقب میں کمپائونڈ  کی دیوار پر درخت گرنے سے دیوار کو نقصان ہوا، اسی طرح الیکٹرک  لائن پر بھی درخت گرنے سے بجلی سپلائی متاثر ہوئی۔ یہاں نقصان کا تخمینہ قریب 30 ہزار روپیہ لگایا گیا ہے۔ کاروار ایس پی کے مکان کے کمپائونڈ میں واقع ایک مکان پر گھنا درخت گرنے سے مکان منہدم ہوگیا جس سے قریب 50 ہزار روپیوں کا نقصان ہوا ہے۔کاروار کے دیگر کئی علاقوں میں  بھی درختوں کے گرنے سے مکانات کو نقصانات ہوئے ہیں اور محکمہ روینو کے آفسران نقصانات کا تخمینہ لگانے میں جٹے ہوئے ہیں۔

آج پیر کو پورے ضلع میں بارش کا زور کافی کم ہوگیا ہے،جس سے عوام نے تھوڑی بہت راحت کی سانس لی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُترکنڑا سے چھٹی مرتبہ جیت درج کرنے والے اننت کمار ہیگڑے کی جیت کا فرق ریاست میں سب سے زیادہ؛ اسنوٹیکر کو سب سے زیادہ ووٹ بھٹکل میں حاصل ہوئے

پارلیمانی انتخابات میں شمالی کینرا کے بی جے پی امیدوار اننت کمار ہیگڈے نے پوری ریاست کرناٹک میں سب سے زیادہ ووٹوں سے کامیابی حاصل کی ہے۔ انہوں نے 479649 ووٹوں کی اکثریت سے کانگریس  جے ڈی ایس مشترکہ اُمیدور  آنند اسنوٹیکر  کو شکست دی ۔

ریاست میں کبھی ہار کا منھ نہ دیکھنے والے سیاسی لیڈروں کی ذلت بھری شکست

ریاست کرناٹکا میں انتخابی میدان میں کبھی ہار کا منھ نہ دیکھنے والے چند نامورسیاسی لیڈران جیسے ملیکا ارجن کھرگے، دیوے گوڈا، ویرپا موئیلی اورکے ایچ منی اَپا وغیرہ کو اس مرتبہ پارلیمانی انتخاب میں انتہائی ذلت آمیز شکست سے دوچار ہونا پڑا ہے۔ 

منگلورو:کلاس میں اسکارف پہننے پر سینٹ ایگنیس کالج نے طالبہ کو دیا ٹرانسفر سرٹفکیٹ۔طالبہ نے ظاہر کیاہائی کورٹ سے رجوع ہونے اور احتجاجی مظاہرے کاارادہ

کلاس روم میں اسکارف پہن کر حاضر رہنے کی پاداش میں منگلورومیں واقع سینٹ ایگنیس کالج نے پی یو سی سال دوم کی طالبہ فاطمہ فضیلا کو ٹرانسفر سرٹفکیٹ دیتے ہوئے کالج سے باہر کا راستہ دکھا دیا ہے۔

بھٹکل میں رمضان باکڑہ کی نیلامی؛ 40 باکڑوں کے لئے میونسپالٹی کو 1126 درخواستیں

رمضان کے آخری عشرہ کے لئے بھٹکل  میں لگنے والے رمضان باکڑہ کی آج میونسپالٹی کی جانب سے  نیلامی کی گئی۔ بتایا گیاہے کہ 40 باکڑوں کی نیلامی کے لئے  میونسپالٹی کے جملہ 1126 درخواست فارمس فروخت ہوئے تھے۔ 

اسمرتی ایرانی کے قریبی سابق پردھان کا گولی مار کر قتل ، علاقہ میں کشیدگی

اترپردیش کے امیٹھی میں ہفتہ دیر رات اسمرتی ایرانی کے قریبی سابق پردھان کا گولی مار کر قتل کردیا گیا ۔ اطلاعات کے مطابق جامو تھانہ حلقہ کے برولیا گاوں کے سابق پردھان سریندر سنگھ کو نامعلوم بدمعاشوں نے گولی مار کر موت کے گھاٹ اتار دیا ۔ بدمعاشوں نے واقعہ کو اس وقت انجام دیا جب ...

مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کی بھاری اکثریت کے ساتھ جیت

مسلمانوں کے خلاف ہمیشہ اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کو اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اترکنڑا لوک سبھا حلقے کے بی جے پی اُمیدوار اننت کمار ہیگڈے جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک اسلام رہے گا دہشت گردی رہے گی،اسی طرح انہوں نے  دستور کی ...