کنبہ پروری کا الزام لگنے پر ریلی میں اپنے بیٹے اور پوتے کے ساتھ رونے لگے سابق وزیراعظم دیوگوڑا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th March 2019, 11:36 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 14 مارچ(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) کنبہ پروری کا الزام لگتے ہی سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوگوڑا رو پڑے،ان کے ساتھ ہی بڑے بیٹے ایچ ڈی ریوننا اور پوتے پرجول ریوننا بھی رو پڑے۔بتا دیں، دیوگوڑا کے دونوں پوتوں۔ نکھل کمارسوامي کو ماڈيا اور پرجول ریوننا کو ہاسن سیٹ سے لوک سبھا کا ٹکٹ دیا گیا ہے،اس کے بعد دیوگوڑا پر کنبہ پروری کا الزام لگ رہا ہے۔ہاسن میں ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے دیوگوڑا نے کہا کہ چنن کیشو بھگوان اور آپ کی دعا سے میں نے ہاسن سے پرجول ریوننا کو میدان میں اتارا ہے۔جذباتی ہوکر دیوگوڑا نے کہا کہ میں نے سب کو ترجیح دی ہے،ہم نے ساکلیش پور میں لنگایت لیڈرکو ایم ایل سی بنایا لیکن الزام ہے کہ میں صرف اپنے بیٹوں اور پوتوں کو ہی نشستیں دیتا ہوں،میں اس وقت تک کام کروں گا جب تک میرے جسم میں طاقت ہے،میں اپنا وقت ضائع نہیں کرتا۔بتا دیں کہ پرجول، دیوگوڑا کے بڑے بیٹے اور کرناٹک حکومت میں عوامی امورکے وزیر ایچ ڈی ریوننا کے بیٹے ہیں،وہ ہاسن سیٹ سے کانگریس جے ڈيایس اتحاد کے امیدوار ہیں۔

دیوگوڑا کی آنکھوں سے آنسو نکلتے وہاں موجود جے ڈيایس حامیوں نے ان سے پرسکون ہو جانے کی درخواست کی۔اس پروگرام میں پرجول اور ان کے والد ریوننا بھی جذباتی ہو گئے،پرجول اس وقت رو پڑے، جب دیوگوڑا نے انہیں امیدوار قرار دیا اور ریوننا تب روئے جب ممبر اسمبلی بال کرشن اس بار ہاسن سیٹ سے دیوگوڑا کے الیکشن نہیں لڑنے کا ذکر کر رہے تھے۔

سابق وزیر اعظم نے کہا کہ ماڈيا میں ان کے پوتے نکھل کی امیدواری کو لے کر پیدا کئے گئے تنازعہ سے وہ دکھی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ماڈیا سے نکھل کو امیدوار بنانے کا فیصلہ جے ڈيایس لیڈروں کا تھا،میں نے اعلان نہیں کیا،مجھے بہت دکھ ہوا ہے، وہ کہہ رہے ہیں کہ نکھل واپس جاؤ،انہوں نے کہا کہ میں ماڈیا جاؤں گا،انہیں واپس جاؤ کے نعرے لگانے دیں،میں نے گزشتہ 60 برسوں میں کس کے لئے جنگ لڑی ہے،میں ماڈیا کے لوگوں کے سامنے ساری باتیں رکھوں گا۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیراعظم مودی نے کابینہ سمیت سونپا صدرجمہوریہ کو استعفیٰ، 30 مئی کو دوبارہ حلف لینےکا امکان

لوک سبھا الیکشن کے نتائج کے بعد جمعہ کی شام نریندرمودی نے وزیراعظم عہدہ سے استعفیٰ دے دیا۔ ان کے ساتھ  ہی سبھی وزرا نے بھی صدرجمہوریہ کواپنا استعفیٰ سونپا۔ صدر جمہوریہ نےاستعفیٰ منظورکرتےہوئےسبھی سے نئی حکومت کی تشکیل تک کام کاج سنبھالنےکی اپیل کی، جسے وزیراعظم نےقبول ...

نوجوت سنگھ سدھوکی مشکلوں میں اضافہ، امریندر سنگھ نے کابینہ سے باہرکرنے کے لئے راہل گاندھی سے کیا مطالبہ

لوک سبھا الیکشن میں زبردست شکست کا سامنا کرنے والی کانگریس میں اب اندرونی انتشار کھل کرباہرآنے لگی ہے۔ پہلےسے الزام جھیل رہے نوجوت سنگھ سدھو کی مشکلوں میں اضافہ ہونےلگا ہے۔ اب نوجوت سنگھ کوکابینہ سےہٹانےکی قواعد نے زورپکڑلیا ہے۔

اعظم گڑھ میں ہارنے کے بعد نروہوا نے اکھلیش یادو پر کسا طنز، لکھا، آئے تو مودی ہی

بھوجپوری سپر اسٹار نروہوا (دنیش لال یادو) نے لوک سبھا انتخابات کے دوران سیاست میں ڈبیو کیا تھا،وہ بی جے پی کے ٹکٹ پر یوپی کی ہائی پروفائل سیٹ اعظم گڑھ سے انتخابی میدان میں اترے تھے لیکن اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے سامنے نروہا ٹک نہیں پائے۔