حجاج کرام کے قافلوں کی واپسی کا آغاز

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th September 2018, 11:49 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو12؍ستمبر(ایس او نیوز) امسال سفر حج بیت اﷲ کی سعادت سے سرفراز حجاج کرام کا پہلاقافلہ بعافیت آج شام وطن لوٹ آیا۔ بنگلور کے حج بھون سے یہ قافلہ یکم اگست 2018 کی صبح روانہ ہوا تھا، سرزمین حجاز پر اپنے 42 دنوں کے قیام اور حج کی سعادت سے سرفرازی کے بعد بارگاہ رسالتؐ میں حاضری سے مشرف حجاج کرام کا پہلا قافلہ بنگلور لوٹا ہے۔ ان حجاج کی بنگلور آمد کے لئے ریاستی حج کمیٹی چیرمین وخادم الحجاج جناب روشن بیگ ، اور وزیر اقلیتی بہبود وحج ضمیر احمد خان کی نگرانی میں کیمپے گوڈا انٹرنیشنل ایرپورٹ پر قائم عارضی حج ٹرمینل میں تمام انتظامات اطمینان بخش طریقے سے مکمل کئے گئے ہیں۔ سفر حج سے لوٹنے والے حجاج کو ایر پورٹ پر کسی طرح کی پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے اس کے لئے دونوں قائدین نے حال ہی میں ایر پورٹ حکام کے ساتھ خصوصی میٹنگ کی جس میں امیگریشن، کسٹمز ، ایرانڈیا ،ایرپورٹ سیکورٹی کے لئے ذمہ دار سی آئی ایس ایف اور دیگر ایجنسیوں کے عہدیداروں کے ساتھ تمام انتظامات پر تبادلۂ خیال کیاگیا۔ امسال بنگلور سے روانہ ہونے والے جملہ حجاج کی تعداد 5700 رہی، جو یکم تا 15اگست روزانہ 300 کے حساب سے 19 پروازوں کے ذریعے سوئے حرم روانہ ہوئے تھے، دوران سفر کرناٹک سے روانہ ہونے والے چار حجاج کرام نے داعئ اجل کو لبیک کہہ دیا، ان میں بلگام کے شفیع احمد امام صاب شرول ،عبدالستار کلبرگی، محترمہ وحیدہ حسینہ خانم ٹمکور، اور محمد معین الدین بنگلور شامل ہیں۔ ان کے علاوہ باقی تمام حجاج کرام بعافیت عبادتوں میں مصروف ہیں، آنے والے 14 دنوں کے دوران یکے بعد دیگرے ان حجاج کرام کی واپسی کا سلسلہ جاری رہے گا۔ روانگی کی ترتیب کے مطابق ہی ان تمام حجاج کرام کی واپسی سعودی ایر لائنز کے طیاروں سے ہوگی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

گرفتاری کے خوف سے رکن اسمبلی جے این گنیش روپوش

بڈدی کے ایگل ٹن ریسارٹ میں ہوسپیٹ کے رکن اسمبلی آنند سنگھ پر حملہ کرنے والے رکن اسمبلی جے این ۔ گنیش کے خلاف بڑدی پولیس تھانہ میں ایف آئی آر داخل کرنے کی خبر کے بعد سے گنیش لاپتہ ہیں ۔

وسویشوریا یونیورسٹی رجسٹرار پر200کروڑ کے گھپلے کا الزام گورنر نے چھان بین کے لئے وظیفہ یاب جج کو مقرر کیا ۔ تعاون کرنے ملزم کو ہدایت

وسویشوریا ٹکنالوجیکل یونیورسٹی (وی ٹی یو) کے رجسٹرار اب مشکل میں پڑگئے ہیں۔ گورنر واجو بھائی روڈا بھائی والا نے جو یونیورسٹی کے چانسلر بھی ہیں،200کروڑ روپئے تک کے گھوٹالے کی چھان بین کا حکم دیا ہے۔

لنگایت طبقہ کے مذہبی رہنما شیوکمارسوامی کی آخری رسومات ادا، اسلامی تعلیمات اوراردو زبان سے بھی تھی واقفیت

یاست کرناٹک کی ایک عظیم شخصیت، لنگا یت طبقہ کے مذہبی رہنما، شیوکمارسوامی جی کی آج آخری رسومات انجام دی گئیں۔ بنگلورو کے قریب واقع ٹمکورشہرمیں شیوکمارسوامی جی کولنگایت رسومات کے مطابق دفنایا گیا۔ سدگنگا مٹھ میں آج اورکل لاکھوں کی تعداد میں لوگوں نے سوامی جی کا آخری ...

ملک کو ایک باضابطہ دانشمندانہ انتخابی نظام کی ضرورت ہے آئین جمہوریت کی حفاظتی حصار ہے۔ اقلیت واکثریت کے توازن کو برقرار رکھنے پر حامد انصاری کازور

سابق نائب صدر جمہوریہ ہند حامدانصاری نے کہا کہ ملک کو ایک باضابطہ سمجھدار انتخابی نظام کی ضرورت ہے ، شفاف انتخابی ماڈیول کو فروغ کی سمت بھی کوشش ہونی چاہئے ۔