گجرات فسادات: مودی کو کلین چٹ دینے کے خلاف ذکیہ جعفری کی عرضی پر جنوری میں ہوگی سماعت

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 3rd December 2018, 11:44 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،03؍ دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) سپریم کورٹ نے سال 2002 کے گجرات فسادات کے سلسلے میں ریاست کے سابق وزیر اعلی نریندر مودی کو خصوصی تفتیشی ٹیم (ایس آئی ٹی) کی طرف سے دی گئی کلین چٹ کو چیلنج دینے والی ذکیہ جعفری کی درخواست جنوری کے تیسرے ہفتے میں سماعت کے لئے درج کی۔

ذکیہ جعفری کے شوہر سابق ایم پی احسان جعفری فسادات کے دوران ایک واقعہ میں مارے گئے تھے۔ذکیہ نے ایس آئی ٹی کے فیصلے کے خلاف ان کی عرضی کو مسترد کئے جانے کے گجرات ہائی کورٹ کے پانچ اکتوبر، 2017 کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔

جسٹس اے ایم کھانولکر اور جسٹس ہیمنت گپتا کی بنچ نے معاملے کو اگلے سال جنوری کے تیسرے ہفتے میں سماعت کے لئے درج کیا۔عدالت نے پہلے کہا تھا کہ وہ اہم معاملے میں سماعت سے پہلے ذکیہ کی عرضی میں شریک درخواست گزار بننے کے سماجی کارکن تیستا سیتلواڈ کی درخواست پر بھی غور کریں گے۔گزشتہ سماعت میں ایس آئی ٹی کی جانب سے سینئر وکیل مکل روہتگی نے کہا تھا کہ ذکیہ کی عرضی قابل غور نہیں ہے۔انہوں نے معاملے میں سیتلواڈ کے دوسری عرضی بننے پر بھی اعتراض ظاہر کی تھی۔

انہوں نے کہا تھا کہ جعفری نے ایک بھی حلف نامہ جمع نہیں کیا ہے اور سارے حلف نامے سیتلواڈ نے جمع کئے ہیں جو خود کو صحافی بتاتی ہیں۔ذکیہ کی جانب سے سینئر وکیل سی یو سنگھ نے کہا تھا کہ اہم درخواست گزار 80 سال کی ہیں لہٰذا سیتلواڈ کو ان کی مدد کے لئے درخواست گزار نمبر 2 بنایا گیا ہے۔اس پر عدالت نے کہا تھا کہ درخواست گزار کی مدد کے لئے کسی کو شریک درخواست گزار بننے کی ضرورت نہیں ہے اور وہ سیتلواڈ کے دوسری عرضی بننے کی درخواست پر غور کریں گے۔

جعفری کے وکیل نے کہا تھا کہ درخواست میں نوٹس جاری کئے جانے کی ضرورت ہے کیونکہ یہ 27 فروری، 2002 سے مئی 2002 کی مدت کے دوران مبینہ بڑی سازش کے پہلو سے متعلق ہے۔ایس آئی ٹی نے اس معاملے میں آٹھ فروری 2012 کو کلوزر رپورٹ داخل کی تھی۔اس نے مودی کو اور سینئر سرکاری حکام سمیت 63 دیگر کو کلین چٹ دی تھی۔تب ایس آئی ٹی نے کہا تھا کہ ان کے خلاف استغاثہ کے قابل کوئی ثبوت نہیں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شہیدوں کے گھر ’درد کے دریا کا سیلاب‘ تھا اور مودی دریا میں شوٹنگ کر رہے تھے: راہل گاندھی

کانگریس صدر راہل گاندھی نے پلوامہ دہشت گردانہ حملے والے دن وزیر اعظم نریندر مودی کے ایک چینل کے لئے فلم کی شوٹنگ کرنے سے متعلق خبروں کو لے کر جمعہ کو ان پر حملہ بولا اور الزام لگایا کہ جب شہیدوں کے گھر دردکے دریا کا سیلاب تھا تو پرائم ٹائم منسٹر 'ہنستے ہوئے دریا میں شوٹنگ کر رہے ...

عظیم اتحادملک کے لیے اچھانہیں،اپوزیشن کے پاس کوئی نظریہ اورکوئی لیڈرنہیں ہے، امت شاہ کوپھرمہاگٹھ بندھن سے شکایت،کانگریس اورلیفٹ کونشانہ بنایا

جھک کرلوجپا،شیوسینا،جدیواورڈی ایم کے کے ساتھ اتحادکرنے والی بی جے پی صدر امت شاہ نے جمعہ کو اپوزیشن پارٹیوں کے مجوزہ مہاگٹھ بندھن پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ ملک کے لیے اچھا نہیں ہے۔

بہار کے سابق وزیرالیاس حسین کو 22 سال پرانے کول تار گھوٹالے میں 5 سال کی سزا

مرکزی تفتیشی بیورو(سی بی آئی) کی خصوصی عدالت نے جمعہ کو کول تار گھوٹالے میں بہارکے سابق وزیرالیاس حسین اورچاردیگر کو پانچ سال قید کی سزا سنائی اور ایک ٹھیکیدار کو اس معاملے میں سات سال کی سزا سنائی۔

24جولائی سے پہلے فاریسٹ اتی کرم داروں کو نکال باہر کرنے سپریم کورٹ کا آرڈر : ریاستی حکومت پر ضلع اتی کرم داروں کی امید بھری نگاہ

فاریسٹ حق قانون کے تحت فاریسٹ مکینوں کے طورپر اپنا حق جتانے کے بعد انکار کئے گئے فاریسٹ مکینوں کو  ایک ساتھ تمام کو نکال باہرکرنے سپریم کورٹ تین رکنی بنچ نے 13فروری کو فیصلہ صادر کیا ہے۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ فاریسٹ مکینوں  (اتی کرم دار )پر بجلی بن کر گراہے ، فاریسٹ افسران کو اتی ...

ہوناور: ہیسکام کے افسران راستہ بھٹک گئے۔ پوری رات جنگل میں گزارنے پر ہوئے مجبور

گیر سوپّا ڈیم کے علاقے میں گھنے جنگل سے گزرنے والی 33کے وی بجلی لائن کا معائنہ کرنے کے لئے نکلی ہوئی ہیسکام افسران اور عملے پر مشتمل ایک ٹیم میں شامل دوافسران جنگل میں راستہ بھٹک گئے جس کی وجہ سے انہیں پوری رات جنگل ہی میں گزارنی پڑی ۔

بھٹکل مجلس احیاء المدارس کے زیراہتمام انوکھی نوعیت کا  ’اجتماعی قرأت مقابلے ‘کا خوبصورت انعقاد : قرآن فیصلہ کن ، ممتاز ،مسلسل پڑھی جانی والی واحد کتاب ہے

مجلس احیاء المدارس بھٹکل کے زیر اہتمام مخدوم کالونی میں واقع مدرسہ دارالتعلیم و التربیہ میں 19فروری 2018بروز منگل کی رات منعقدہ اپنی نوعیت کے پہلے ’’اجتماعی قرأت مقابلہ ‘‘میں جامعہ اسلامیہ چوک بازار بھٹکل اول، جامعہ اسلامیہ بھٹکل کے شعبہ ثانویہ دوم اور جامعہ اسلامیہ کارگدے ...