گجرات فسادات: مودی کو کلین چٹ دینے کے خلاف ذکیہ جعفری کی عرضی پر جنوری میں ہوگی سماعت

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 3rd December 2018, 11:44 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،03؍ دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) سپریم کورٹ نے سال 2002 کے گجرات فسادات کے سلسلے میں ریاست کے سابق وزیر اعلی نریندر مودی کو خصوصی تفتیشی ٹیم (ایس آئی ٹی) کی طرف سے دی گئی کلین چٹ کو چیلنج دینے والی ذکیہ جعفری کی درخواست جنوری کے تیسرے ہفتے میں سماعت کے لئے درج کی۔

ذکیہ جعفری کے شوہر سابق ایم پی احسان جعفری فسادات کے دوران ایک واقعہ میں مارے گئے تھے۔ذکیہ نے ایس آئی ٹی کے فیصلے کے خلاف ان کی عرضی کو مسترد کئے جانے کے گجرات ہائی کورٹ کے پانچ اکتوبر، 2017 کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔

جسٹس اے ایم کھانولکر اور جسٹس ہیمنت گپتا کی بنچ نے معاملے کو اگلے سال جنوری کے تیسرے ہفتے میں سماعت کے لئے درج کیا۔عدالت نے پہلے کہا تھا کہ وہ اہم معاملے میں سماعت سے پہلے ذکیہ کی عرضی میں شریک درخواست گزار بننے کے سماجی کارکن تیستا سیتلواڈ کی درخواست پر بھی غور کریں گے۔گزشتہ سماعت میں ایس آئی ٹی کی جانب سے سینئر وکیل مکل روہتگی نے کہا تھا کہ ذکیہ کی عرضی قابل غور نہیں ہے۔انہوں نے معاملے میں سیتلواڈ کے دوسری عرضی بننے پر بھی اعتراض ظاہر کی تھی۔

انہوں نے کہا تھا کہ جعفری نے ایک بھی حلف نامہ جمع نہیں کیا ہے اور سارے حلف نامے سیتلواڈ نے جمع کئے ہیں جو خود کو صحافی بتاتی ہیں۔ذکیہ کی جانب سے سینئر وکیل سی یو سنگھ نے کہا تھا کہ اہم درخواست گزار 80 سال کی ہیں لہٰذا سیتلواڈ کو ان کی مدد کے لئے درخواست گزار نمبر 2 بنایا گیا ہے۔اس پر عدالت نے کہا تھا کہ درخواست گزار کی مدد کے لئے کسی کو شریک درخواست گزار بننے کی ضرورت نہیں ہے اور وہ سیتلواڈ کے دوسری عرضی بننے کی درخواست پر غور کریں گے۔

جعفری کے وکیل نے کہا تھا کہ درخواست میں نوٹس جاری کئے جانے کی ضرورت ہے کیونکہ یہ 27 فروری، 2002 سے مئی 2002 کی مدت کے دوران مبینہ بڑی سازش کے پہلو سے متعلق ہے۔ایس آئی ٹی نے اس معاملے میں آٹھ فروری 2012 کو کلوزر رپورٹ داخل کی تھی۔اس نے مودی کو اور سینئر سرکاری حکام سمیت 63 دیگر کو کلین چٹ دی تھی۔تب ایس آئی ٹی نے کہا تھا کہ ان کے خلاف استغاثہ کے قابل کوئی ثبوت نہیں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی جی کا پرگیہ سنگھ ٹھاکور سے لاتعلقی ظاہر کرنا ایسا ہی ہے جیسے پاکستان کا دہشت گردی سے ۔۔۔۔ دکن ہیرالڈ میں شائع    ایک فکر انگیز مضمون

 وزیر اعظم نریندرا مودی کا کہنا ہے کہ وہ مہاتما گاندھی کے قاتل ناتھو رام گوڈسے کو دیش بھکت قرار دیتے ہوئے ”باپو کی بے عزتی“ کرنے کے معاملے پر پرگیہ ٹھاکورکو”کبھی بھی معاف نہیں کرسکیں گے۔“امیت شاہ کہتے ہیں کہ پرگیہ ٹھاکور نے جو کچھ کہا ہے(اور یونین اسکلس منسٹر اننت کمار ہیگڈے ...

لوک سبھا انتخابات؛ آخری مراحل کے انتخابات جاری؛ 918 اُمیدواروں کی قسمت داو پر؛ ای وی ایم میں خرابی کی شکایتیں؛ بنگال میں دو کاروں پر حملہ

لوک سبھا انتخابات کے ساتویں  اور آخری مرحلہ کے لئے اتوار کی صبح 7 بجے سے ووٹنگ جاری ہے۔جس میں  918 امیدواروں کی قسمت دائو پر لگی ہوئی ہے۔آج جاری انتخابات میں  وزیر اعظم نریندر مودی کا حلقہ انتخاب وارانسی بھی شامل ہے۔ 

دہشت گرد ہر مذہب میں ہیں: کمل ہاسن

تنازعات میں گھرے اداکار لیڈر کمل ہاسن نے جمعہ کو کہا کہ ہر مذہب میں دہشت گرد ہوتے ہیں اور کوئی بھی اپنے مذہب کوبہترین ہونے کا دعویٰ نہیں کر سکتا۔

بی جے پی کو280 سے زیادہ سیٹیں ملیں گی، این ڈی اے کی سیٹیں 300 سے متجاوز ہوں گی: پی مرلیدھر راؤ

بی جے پی لیڈر رام مادھو کے تخمینے کو مسترد کرتے ہوئے پارٹی کے سینئر لیڈر پی مرلیدھر راؤ نے کہا کہ بھگوا پارٹی کو 280 سے زیادہ سیٹیں ملیں گی جبکہ این ڈی اے کے سیٹوں کی تعداد 300 کے پار ہوں گی۔

مالیگاؤں 2008بم دھماکہ معاملہ: اے ٹی ایس کی عدالت سے غیر حاضری کے معاملے میں عدالت کا دخل دینے سے انکار

مالیگاؤں 2008 بم دھماکہ متاثرین جانب سے خصوصی این آئی اے عدالت میں داخل عرضداشت جس میں اس معاملے کی سب سے پہلے تفتیش کرنے والی تفتیشی ایجنسی ATSکی عدالت سے غیرحاضری پر سوال اٹھایا گیا تھا کو عدالت نے یہ کہتے ہوئے خارج کردیا کہ اے ٹی ایس کو پابند کرنا اس کے دائرہ اختیار میں نہیں ہے ...

بنگلور میں 23/ مئی کو ووٹوں کی گنتی کے دوران امتناعی احکامات نافذ

23 مئی کو لوک سبھاانتخابات کے نتائج کا اعلان ہورہا ہے۔ انتخابات کے نتائج ظاہر ہونے کے مرحلے میں کوئی ناخوشگوار صورتحال پیدا نہ ہونے پائے اس کے لئے شہر کے پولیس کمشنر سنیل کمار نے 23مئی کی صبح چھ بجے سے شہر بھر میں امتناعی احکامات نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

بلدی انتخابات کے لئے 5945 نامزدگیاں داخل

ریاست بھر کے بلدی اداروں کے لئے 29 مئی کو ہونے والے انتخابات میں حصہ لینے کے لئے نامزدگیوں کے اندراج کی تاریخ کل ختم ہونے کے بعد جملہ 5945 نامزدگیاں داخل کی گئی ہیں۔

مودی کی اقتدار میں واپسی کے تمام راستے بند: راہل گاندھی

 کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے حزب اختلاف کے طور پر کانگریس کی کارکردگی کو کامیاب بتاتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ پانچ برسوں کے دوران پارٹی نے مؤثر طریقہ سے عوام کے مسائل کو اٹھایا ہے اور وزیر اعظم نریندر مودی کو دوبارہ اقتدار میں آنے سے روکنے کے لئے ان کے تمام راستے بند کر دئے گئے ...