بھٹکل کے کارگیدے میں سرکاری ہاڑی زمین کو اتی کرم کرکے مکانات تعمیر کرنے کاالزام : سرکاری افسران نے زیر تعمیر 4 گھروں پر لگایا قفل

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 14th April 2018, 8:34 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل:14/اپریل (ایس او نیوز)تعلقہ کے وینکٹاپور حدود کے ہرلی سال ، کارگدے میں سرکاری ہاڑی زمین کو آتی کرم کرکے اُس پر مکانات تعمیر کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے سرکاری آفسران نے  چار مکانوں کو قفل لگاتے ہوئے اُسے اپنی تحویل میں لے لیا اور سات لوگوں کے خلاف مقدمہ بھی درج کرلیا ۔ یہ کاروائی آج سنیچرصبح کو انجام دی گئی ہے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق پدمیا شنیار نائک، شنیار درگپا نائک، عبدالرحمن عبدول کبوٹے اور ایک نامعلوم شخص نے  فاریسٹ سروے نمبر 105اور107 کی سرکاری ہاڑی زمین اور بیلکے میں سروے نمبر 395 کی سرکاری ہاڑی زمین کوقانون کی خلاف ورزی کرتے ہوئے قبضہ کیا تھا اور ان زمینات پر مکانات تعمیر کئے جارہے تھے۔ اس میں سے چار زیر تعمیر مکانات پر ڈ پٹی کمشنر کے حکم پر آج سنیچر کو سرکاری آفسران نے قفل لگادیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ سنیچر صبح تحصیلدار  اپنے عملہ اور پولس کی سیکوریٹی کے ساتھ جائے وقوع پر پہنچے  تھے اور ان زمینات کوواپس حاصل کرنے کی کاروائی کی تھی۔

آفسران کا کہنا ہے کہ  اس سے قبل ان مکانات کو تعمیر کرنے والوں کو 2مرتبہ نوٹس دے کر تاکید کی گئی تھی کہ وہ اپنے زیر تعمیر گھروں کی چھت نکال دیں۔ اس کے بعد بھی قانون کی خلاف ورزی کرتے ہوئے گھروں کی تعمیر شروع کی تو افسران کی ٹیم نے گھروں پر چھاپہ مارتے ہوئے دروازوں اور کھڑکیوں کو پلائی ووڈ لگا کر قفل جڑ دیا ۔ اور دروازے پر بورڈ چسپاں کردیا کہ اگر کوئی  غیرقانونی طورپر گھروں میں داخل ہونے کی کوشش کرتا ہے  تو اُس کے خلاف کریمنل مقدمہ دائر کیا جائے گا۔

آفسران نے الزام لگایا ہے کہ جب وہ ان مکانات پر قفل لگارہے تھے تو اُس وقت  کچھ لوگوں نے ان کے  ساتھ نازیبا سلوک  کیا۔ ان کے مطابق ہرلی سال میں جب ایک گھر کوسرکاری افسران قفل لگارہے تھےتو کچھ لوگوں نے کارروائی میں خلل ڈالا جس کی بنا پر  پولس کی مداخلت کے بعد کارروائی انجام دی گئی ۔

بتایا جارہا ہے کہ  اس  معاملے کو لے کر 192(اے) انسداد زمین مقبوضات عدالت بنگلورو کے مطابق کل 7لوگوں کے خلاف کیس درج کرلیا گیا ہے۔

کارروائی میں تحصیلدار وی پی کوٹرولی ، سرشتہ دار سنتوش بھنڈاری، وی آر نائک، راجو نائک، جالی ولیج اکاؤنٹنٹ منوج ، ہیبلے کے ولیج اکاؤنٹنٹ انیا ، شمبھو، سرکل پولس انسپکٹر کے ایل گنیش، مضافاتی پولس تھانہ کے پولس سب انسپکٹر روی  سمیت دیگر پولس اہلکار اور پولس کا خاتون عملہ شریک تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

شرالی قومی شاہراہ توسیع کا دھرنا تیسرے دن بھی جاری :  ضلع انتظامیہ کو  شاہراہ  تعمیر کا اختیار   نہیں : ایڈیشنل ڈی سی

شرالی میں گرام پنچایت کی قیادت میں 45میٹر کی توسیع والی شاہراہ تعمیر  کو لے کر  جاری دھرنے کے تیسرے دن کی دوپہر اترکنڑا ضلع ایڈیشنل ڈی سی ڈاکٹر سریش ہٹنال احتجاجیوں سے ملاقات کرتے  نیشنل ہائی وے اتھارٹی آف انڈیا کے حکم کے بنا ضلع انتظامیہ کچھ کرنا ممکن نہیں ہونے کی وضاحت کی۔ ...

بھٹکل انجمن ڈگری کالج کے زیر اہتمام 19فروری سے سہ روزہ یونیورسٹی سطح کا بیڈمنٹن ٹورنامنٹ انعقاد

کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑسے ملحق   کالجوں کے درمیان  مردوں اور خواتین کا زونل لیول سہ روزہ بیڈمنٹن ٹورنامنٹ 19فروری سے انجمن ڈگری کالج اینڈ پی جی سنٹر بھٹکل کے زیر سرپرستی انعقاد کئے جانےکی اطلاع کالج پرنسپال مشتاق شیخ نے دی۔

پلوامہ میں فوجیوں پر حملہ کے بعد اترکنڑا ضلع آٹویونین نے کیا ایک ہفتہ تک آٹو پر سیاہ پٹی باندھ کرشہید فوجیوں کوشردھانجلی دینے کا فیصلہ

جموں کشمیر کےپلوامہ میں سکیورٹی فورس پر ہوئے دہشت گرد حملے کی کڑی مذمت کرتے ہوئے ضلع کے آٹورکشاپر  اگلے ایک ہفتہ تک سیاہ پٹی باندھ کر شہید فوجیوں کو شردھانجلی دینے کا اترکنڑا ضلع آٹو رکشا یونین کے نائب صدر کرشنا نائک آسارکیری نے جانکاری دی۔

بھٹکل میں مجلس اصلاح وتنظیم کی جانب سے پلوامہ دہشت گردانہ حملہ کی کڑی مذمت: تحصیلدار کی معرفت وزیراعظم کو میمورنڈم ؛کڑی کارروائی کا مطالبہ

کشمیر کے پلوامہ میں دہشت گردانہ حملے کی کڑی مذمت کرتے ہوئے مجلس اصلاح وتنظیم بھٹکل نے تحصیلدار کی معرفت وزیر اعظم نریندر مودی کو اپیل سونپتے ہوئے دہشت گردی کا کرار ا جواب دینے کا مطالبہ کیا۔

بھٹکل: شرالی میں ہائی وے کی توسیع کے دوران ہنگامہ؛ پولس کی لی گئی مدد؛ عوامی مخالفت نظرانداز؛ 30میٹرکی ہی توسیع کے ساتھ کام شروع

شرالی میں قومی شاہراہ کی تعمیر 45میٹر کی توسیع کے ساتھ ہی کی جائے ، کسی حال میں بھی توسیع کو 30میٹر تک کم کرنے نہیں دیں گے۔  مقامی  عوام کی سخت مخالفت کے باوجود ضلع انتطامیہ بدھ کو 30 میٹر کی توسیع کے ساتھ شاہراہ تعمیری کام کی شروعات کی۔