ریاستی حکومت 33نئے تعلقہ جات قائم کرنے کوشاں:کاگوڈتمپا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2017, 11:37 AM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،9؍جنوری(ایس او نیوز) ریاستی حکومت نے ریاست میں 33نئے تعلقہ جات قائم کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ وزیراعلیٰ سدرامیا کی طرف سے امکان ہے کہ اگلے بجٹ میں ا ن نئے تعلقہ جات کا اعلان کردیا جائے گا۔وزیر مالگذاری کاگوڈ تمپا نے یہ بات بتائی۔انہوں نے کہاکہ نئے تعلقہ جات کی تشکیل کا معاملہ کافی عرصہ سے زیر التواء تھا۔ اگلے بجٹ میں وزیر اعلیٰ سدرامیا نے ان نئے تعلقہ جات کا اعلان کردینے کا تیقن دیا ہے۔ اخباری نمائندوں سے با ت چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ہر تعلقہ میں بنیادی انفرااسٹرکچر قائم کرنے کیلئے سو کروڑ روپیوں کی رقم صرف کی جائے گی۔ نئے تعلقہ جات کی تشکیل سے ریاستی خزانے پر 3300 کروڑ روپیوں کا افزود بوجھ پڑے گا۔ انہوں نے کہاکہ ریاست بھر میں خشک سالی سے متاثرہ علاقوں میں پینے کے پانی کی فوراً فراہمی کیلئے 350 کروڑ روپے جاری کئے جاچکے ہیں۔ ریاست میں خشک سالی سے متاثرہ علاقوں کا معائنہ کرنے کیلئے چار الگ الگ ٹیموں نے دورہ کیا ، ان چاروں ٹیموں کی طرف سے ابھی رپورٹ موصول نہیں ہوئی ہے، کل ریاستی کابینہ کی ذیلی کمیٹی میں ان رپورٹوں پر بحث ممکن ہے۔ کل کی میٹنگ میں خشک سالی سے نمٹنے کیلئے مرکزی حکومت کی طرف سے جاری کی گئی 1700 کروڑ روپیوں کی امداد کو صرف کرنے اور دیگر امور پر تفصیلی بات چیت کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کمیونسٹوں کو سبق سکھانا جانتی ہے؛ کیرالہ میں ایم پی نلین کمار کٹیل کا خطاب

کچھ دنوں پہلے منگلورو میں احتجاجی مظاہرے کے دوران ہندتوا کارکن کے قتل میں ملوث ملزموں کو گرفتار نہ کئے جانے کی صورت میں جنوبی کینر ضلع کو آگ لگادینے جیسا متنازعہ اوربھڑکاؤ بھاشن دے کر سرخیوں میں رہنے والے رکن پارلیمان نلین کمار کٹیل نے اب کیرالہ میں ایک میٹنگ کے دوران ...

یوٹی قادر کو چامراج نگر کا ضلع انچارج بنایا گیا

ریاستی وزیر اعلیٰ سدرامیا کی طرف سے جاری کیے گئے حکم کے مطابق فوڈ اینڈ سول سپلائی منسٹر جناب یو ٹی قادر کو اب چامراج نگر کا ضلع انچارج وزیر بنایا گیا ہے۔ خیال رہے کہ اس سے پہلے مسٹر قادر کولار ضلع کے انچارج وزیر کی خدمات انجام دے چکے ہیں۔

چنتامنی میں غٖیر قانونی رسوئی گیس فروخت:ایک گرفتار

حال ہی میں شہر کے مضافات میں واقع نائن ہلی کے قریب ایچ پی گیس ایجنسی کے گودام میں پیش آئے رسوئی گیس سلنڈر حادثہ کے بعد تعلقہ بھر میں غیر قانونی رسوئی گیس فروخت کرنے والوں کا پتہ لگانے کیلئے چکبالاپور ضلع سپر ٹنڈنٹ آف پولیس چائترا ڈی وائی ایس پی کرشنامورتی کے زیر نگرانی میں ...

چنتامنی: اساتذہ کے مسائل حل کرانے کیلئے ہمہ وقت تیار ہوں:ر ایل رام کرشناریڈی

ریاست کے اساتذہ کے مختلف مسائل ہے ان مسائل کو حل کرانے میں حکومتیں ناکام ہے حکومتیں اعلیٰ اورعمدہ تعلیم کا نعرہ ضرور دے رہے ہیں لیکن ان نعروں سے اساتذہ کے بنیادی مسائل کا حل ممکن نہیں ہوگا عمدہ تعلیم صرف کے نعرے کی حد تک محدو رہ جائیگی یہ بات آزاد امیدوار را یل رام کرشناریڈی نے ...

قومی سیاسی جماعتوں سے ملک مشکل میں: مانک سرکار

ملک کی 58 فیصد دولت پر محض ایک فیصد طبقہ قابض ہے۔ اس سے ملک میں معاشی مساوات کے قیام کا تصور کبھی مکمل نہیں ہوسکے گا۔ یہ بات آج منی پور کے وزیراعلیٰ مانک سرکار نے کہی۔ پریس کلب کے احاطہ میں منعقدہ پریس سے ملئے پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ملک میں آج بھی 70 سے زائد فیصد ...

سائنس وٹیکنالوجی کے فروغ پر حکومت مکمل متوجہ: سدرامیا

ریاستی حکومت شعبہئ تعلیم وسائنس کو زیادہ سے زیادہ آگے بڑھانے اور فنڈز مہیا کرنے کیلئے ہمہ وقت تیار ہے۔ خاص طور پر سائنس کے شعبے میں تعلیم حاصل کرنے والے طلبا کی حوصلہ افزائی کرنے تیار ہے۔ یہ بات آج وزیر اعلیٰ سدرامیا نے کہی۔ جواہر لال نہرو پلانیٹوریم میں 12.5 کروڑ روپیوں کی لاگت ...

مودی کی آمریت برداشت نہیں کرے گی کانگریس:پرمود تیواری

اترپردیش کانگریس رابطہ کمیٹی کے چیئرمین اور راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ پرمود تیواری نے وزیر اعظم پر حملہ بولتے ہوئے کہا کہ کانگریس پارٹی نریندر مودی کی آمریت کو برداشت نہیں کرے گی۔انہوں نے کہا کہ کس قانون کے تحت عوام کا پیسہ روکاگیاہے

اتر پردیش اسمبلی انتخابات:پہلے مرحلے کے لیے نوٹیفکیشن جاری

اتر پردیش اسمبلی انتخابات کے پہلے مرحلے کا نوٹیفکیشن آج جاری کر دیاگیاہے۔ اس کے ساتھ ہی صبح11بجے سے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کا عمل بھی شروع ہو گیا ہے، اس دور میں ریاست کے مسلم اکثریتی مغربی علاقے کے15اضلاع کی کل73سیٹوں کے لیے آئندہ 11؍فروری کو پولنگ ہوگی۔

کانگریس کے ساتھ اتحاد پر فیصلہ ایک دو دن میں متوقع :اکھلیش

اتر پردیش کے وزیر اعلی اور سماج وادی پارٹی کے صدر اکھلیش یادو نے آج کہا کہ وہ ہمیشہ اپنے والد اور ایس پی کے بانی ملائم سنگھ یادو کے ساتھ مل کر چلیں گے اور کانگریس کے ساتھ اتحاد پر ایک دو دن میں فیصلہ لے لیا جائے گا۔