امریکہ کی معروف اور بڑی کار ساز کمپنی جنرل موٹرز نے کیا پانچ آٹو پلانٹس بندکرنے کا اعلان، چھ ہزار ملازموں کو دھونا پڑے گا روزگار سے ہاتھ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 28th November 2018, 12:52 PM | عالمی خبریں |

نیویارک 28؍نومبر (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا )امریکہ کی ایک معروف اور بڑی کار ساز کمپنی جی ایم نے پیر کے روز کہا ہے کہ وہ شمالی امریکہ میں اپنے پانچ آٹو پلانٹ بند کر رہی ہے اور اپنے 15 فی صد ریگولر سٹاف کو فارغ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔کمپنی نے کہا ہے کہ اس کی کاروں کی فروخت میں نمایاں کمی ہو رہی ہے اور وہ کاروبار کا مستقبل محفوظ بنانے کے لیے اس کے رخ کا از سر نو تعین کرنا چاہتی ہے۔

جنرل موٹرز اس وقت شورلیٹ، وولٹ، امپالا، کروز، بیوک، جی ٹی 6 اور ایس ٹی ایکس بنا رہی ہے۔ کمپنی کا کہنا ہے مستقبل میں یہ کاریں نہیں بنائی جائیں گی کیونکہ کاروں کی مارکیٹ ختم ہو رہی ہے اور اس کی بجائے خریداروں کا رجحان ایس یو ویز کی طرف بڑھ رہا ہے۔جنرل موٹرز جن پلانٹس کو بند کر رہا ہے وہاں کاریں تیار کی جاتی ہیں۔ یہ پلانٹس ڈیٹرائٹ، اوشاوا، انٹیریؤ، ویرن اور وائٹ مارش میں واقع ہیں۔کمپنی نے کہا ہے کہ اس منصوبے پر عمل درآمد سے اسے 2020 تک 6 ارب ڈالر کی بچت ہو گی۔جی ایم نے یہ بھی کہا ہے کہ جنوبی کوریا میں واقع آٹو پلانٹ بھی بند کیا جا رہا ہے۔

آٹو پلانٹس کی بندش سے کمپنی کے تقریباً 8000 باقاعدہ کارکن متاثر ہوں گے اور ان کی ملازمتیں جاتی رہیں گے۔ اس کے علاوہ 6000 کے قریب ان مزدوروں کو بھی اپنے روزگار سے ہاتھ دھونے پڑیں گے جو فی گھنٹہ معاوضے پر کام کرتے ہیں۔جنرل موٹرز کی بنیاد 1908 میں رکھی گئی تھی۔ اسے کام کرتے ہوئے ایک سو سال سے زیادہ کا عرصہ ہو چکا ہے۔ کمپنی کو 2009 میں شدید مالی نقصانات کے باعث دیوالیے کا سامنا کرنا پڑا تھا، تاہم حکومت کے بیل آؤٹ پروگرام کی مدد سے وہ اس مشکل سے باہر نکلنے میں کامیاب ہو گئی اور 2010 میں دوبارہ ایک منافع بخش کمپنی بن گئی۔اس وقت بھی جنرل موٹرز نقصان میں نہیں ہے لیکن شمالی امریکہ اور چین میں اس کی فروخت مسلسل گر رہی ہے جو اس کی سب سے بڑی مارکیٹ ہے۔ کمپنی خساروں سے پہلے اس بزنس سے باہر نکلنا چاہتی ہے۔کاروں میں خریداروں کی بڑھتی ہوئی عدم دلچسپی کا اثر دوسری آٹو کمپنیوں پر بھی پڑ رہا ہے۔ ایک اور بڑی کار ساز کمپنی فورڈ نے بھی اعلان کیا ہے کہ وہ اگلے سال کاریں بنانا بند کر رہی ہے۔جنرل موٹرز کے کارکنوں کی یونین نے بندش کے اعلان پر شدید نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ اس فیصلے کے خلاف لڑیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

سیٹلائٹ جی سیٹ ۔11کی کامیاب پرواز

ملک کے دیہاتوں اور ناقابل رسائی گرام پنچایتوں میں براڈ بینڈ کے رابطہ کو مستحکم کرنے کے ایک بڑے قدم کے طور پر ہندوستانی خلائی تحقیقی تنظیم (اسرو)کے سب سے بھاری اور جدیہ ترین مواصلاتی سیٹلائیٹ جی سیٹ۔11کو کامیابی کے ساتھ فرنچ گوانا کی خلائی بندرگاہ سے چہارشنبہ کی صبح کی اولین ...

مظاہروں میں تسلسل رہا تو ایمرجنسی پر غور کیا جا سکتا ہے: فرانسیسی حکومت

فرانسیسی حکومت نے واضح کیا ہے کہ بدامنی جاری رہنے کی صورت میں حکومت سرکاری املاک اور عام شہریوں کے جان و مال کے تحفظ کے تناظر میں ایمرجنسی نافذ کرنے پر غور کر سکتی ہے۔ حکومتی ترجمان نے اس صورت حال پر تشویش کا اظہار کیا کہ نقاب پوش نوجوانوں کے گروہوں نے دھاتی سلاخوں اور کلہاڑیوں ...

امریکی نیوی کے اعلیٰ افسر کی بحرین میں پراسرار ہلاکت

امریکی بحریہ کے وائس ایڈمرل اسکاٹ اسٹیرنی بحرین میں مردہ حالت میں پائے گئے ہیں۔ وہ بحرین میں متعین امریکی پانچویں بحری بیڑے کے کمانڈر، مشترکہ سمندری نگرانی کی افواج کے سربراہ اور امریکی سینٹرل کمانڈ کی بحری افواج کے کمانڈر بھی تھے۔ امریکی فوج کے عسکری آپریشنز کے سربراہ ...

پیرس میں مظاہرے، ’ہنگامی حالت نافذ کی جا سکتی ہے‘

فرانسیسی صدر ایمانوئل ماکروں نے ارجنٹائن سے وطن واپسی کے فوری بعد اتوار کے دن پیرس میں واقع تاریخی آرک دے ٹریومف کا دورہ کیا اور وہاں ہفتے کے دن ہوئے پرتشدد مظاہروں کی وجہ سے ہونے والے نقصان کا براہ راست معائنہ کیا۔خبر رساں ادارے روئٹرز نے بتایا ہے کہ فرانسیسی صدر ایمانوئل ...