گوری لنکیش قتل معاملے میں خصوصی تحقیقاتی ٹیم کو ابتدائی کامیابی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th March 2018, 8:33 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،9؍مارچ(ایس او نیوز)معروف صحافی گوری لنکیش کے قتل کے تقریباً چھ ماہ بعد اس سنسنی خیز معاملے میں ریاستی پولیس نے پہلی گرفتاری کی ہے۔ اس معاملے کی جانچ میں مصروف خصوصی تحقیقاتی ٹیم نے ہندو تنظیم سے وابستہ کے ایک کارکن کے ٹی نوین کمار کو حراست میں لیا ہے، ملزم کو گوری لنکیش کے قتل میں ملوث کلیدی ملزم کو پناہ دینے اور اسے قتل کیلئے استعمال کی گئی گن مہیا کرانے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ 55سالہ گوری لنکیش کو نامعلوم حملہ آوروں نے 5؍ ستمبر 2017کوان کی رہائش گاہ کے باہر گولی مار دی تھی۔ ڈپٹی کمشنر آف پولیس ایم این انو چیت نے بتایا کہ نوین کمار کو اس کیس میں ایک ملزم کے طور پر گرفتار کیاگیا ہے۔نوین کمار جس کی عمر 30 سال کے آس پاس ہے، اس کا تعلق کٹر ہندو بنیاد پرست تنظیم سے ہے۔اس کے خلاف غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے قانون کے تحت مقدمہ درج کرتے ہوئے اسے پولیس تحویل میں لے لیا گیا ہے۔آٹھ دن تک خصوصی تحقیقاتی ٹیم نے پوچھ تاچھ کے بعد اس کیس کے سلسلے میں بہت ساری معلومات یکجا کی ہیں۔ یاد رہے کہ وزیر داخلہ رام لنگا ریڈی نے حال ہی میں کہا تھاکہ گوری لنکیش قتل کے سلسلے میں خصوصی تحقیقاتی ٹیم جلد ہی ایک کلیدی ملزم کو گرفتار کرلے گی۔اس دوران نوین کمار کے خاندان والوں نے دعویٰ کیا ہے کہ گوری لنکیش قتل کیس سے نوین کا کچھ لینا دینا نہیں ہے، غیر ضروری طور پر اسے پھنسایا جارہا ہے۔ انسپکٹر جنرل آف پولیس( خفیہ محکمہ) بی کے سنگھ کی قیادت میں قائم خصوصی تحقیقاتی ٹیم نے نوین کمار کی جس طرح سے گرفتاری کی اور دیگر ملزمین کو تلاش کرنے کیلئے جو کام کررہی ہے اس کیلئے اس کی کافی ستائش کی جارہی ہے، مسٹر بی کے سنگھ نے اعلان کیا کہ گوری لنکیش کے قاتل کے متعلق مصدقہ اطلاع دینے والے کو دس لاکھ روپے دئے جائیں گے۔ 

ایک نظر اس پر بھی