گاندھی کے قاتلوں کو پھانسی دی اور بابری مسجد سانحہ کے ملزمان کو وزیر بنایا:اویسی 

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 21st April 2017, 3:14 AM | ملکی خبریں |

حیدرآباد:20/اپریل (اہس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)اے آئی ایم آئی ایم کے صدراور ممبر پارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے بابری مسجد کی شہادت کے معاملے کو مہاتما گاندھی کے قتل سے زیادہ سنگین بتاتے ہوئے سماعت مکمل ہونے میں تاخیر کی مذمت کی۔انہوں نے کہا کہ 1992میں قومی شرم کے لیے ذمہ دار لوگ آج ملک چلا رہے ہیں۔اویسی نے ٹوئٹ کیا کہ مہاتما گاندھی کے قتل کی سماعت دو سال میں مکمل ہوئی اور بابری مسجد کی شہادت کا واقعہ جو مہاتماگاندھی کے قتل سے زیادہ سنگین ہے، اس میں اب تک فیصلہ نہیں آیا ہے۔گاندھی جی کے قاتلوں کو مجرم ٹھہرا کر پھانسی پر لٹکایا گیا اور بابری مسجد کی شہادت کے ملزمان کو مرکزی وزیر بنایا گیا، پدم وبھوشن سے نوازا گیا، انصاف کا نظام آہستہ چلتا ہے۔انہوں نے یہ تبصرہ ایسے وقت کیا ہے، جب سپریم کورٹ نے بابری مسجد شہادت معاملے میں بی جے پی کے سینئر لیڈر لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی اور اوما بھارتی کے خلاف مجرمانہ سازش کے الزام کو بحال کرنے کے سی بی آئی کی درخواست کو قبول کرلیا ہے۔حالانکہ عدالت عظمی نے کہا کہ راجستھان کے گورنر کلیان سنگھ کو آئینی رعایت ملی ہوئی ہے اور ان کے خلاف عہدے سے ہٹنے کے بعد سماعت ہو سکتی ہے۔قابل غورہے کہ کلیان سنگھ 1992میں اتر پردیش کے وزیر اعلی تھے۔ اویسی نے کہا کہ اس میں 24سال کی تاخیر ہوئی ہے، 24-25سال گزر چکے ہیں، لیکن آخر کار سپریم کورٹ نے فیصلہ کیا کہ سازش کا الزام ہونا چاہیے، لیکن مجھے امید ہے کہ سپریم کورٹ (1992سے زیر التوا)توہین عدالت کی درخواست پر بھی فیصلہ کرے گا۔انہوں نے اپنے کئی ٹوئٹ میں کہا کہ کیا کلیان سنگھ استعفی دے کر سماعت کا سامنا کریں گے یا گورنر کے پردے کے پیچھے چھپیں گے؟ کیا مودی حکومت انصاف کے مفاد میں انہیں ہٹائے گی؟ مجھے شک ہے۔اویسی نے کہا کہ ان کے خیال میں اگر سپریم کورٹ نے کارسیوا کی اجازت نہیں دی ہوتی، تو بابری مسجد کی شہادت نہیں ہوتی اور سپریم کورٹ کو اب بھی توہین عدالت کی عرضی پر سماعت کرنا باقی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

سی بی ایس ای نے سال میں ایک بار نیٹ امتحان کے انعقاد کی تجویز پیش کی 

مرکزی ثانوی تعلیمی بورڈ (سی بی ایس ای)نے کالجوں اور یونیورسٹیوں کے لیے اساتذہ کی تقرری سے متعلق اہلیتی امتحان، قومی اہلیتی ٹیسٹ (نیٹ)سال میں ایک ہی بار منعقد کرنے کی تجویز دی ہے۔ذرائع کے مطابق،تجویز ابھی ابتدائی سطح پر ہے۔غور طلب ہے کہ سی بی ایس ای نے گزشتہ سال امتحان کے انعقاد ...

معروف فلم اسٹار ونود کھنہ چل بسے؛ صدر ہند سمیت مرکزی وزراء کا اظہار افسوس

بالی ووڈ اداکار اور سابق مرکزی وزیر ونود کھنہ کے انتقال پر صدر پرنب مکھرجی سمیت تمام مرکزی وزراء اور سیاسی لیڈروں نے افسوس کا اظہار کیا ہے۔70سالہ ونود کھنہ کا جمعرات کو طویل علالت کے بعد ممبئی میں انتقال ہو گیا۔صدر پرنب مکھرجی نے ٹوئٹر پر جاری اپنے تعزیتی پیغام میں کہاکہ ایک ...

ایودھیا میں شناختی کارڈ ضروری 

دہشت گرد انہ خطرات کی آہٹ سے ایودھیا کی تشویش میں اضافہ ہو گیا ہے۔ہندو سادھو سنتوں کے لباس میں ملبوس دہشت گرد مذہبی مقامات کو نشانہ بنا سکتے ہیں۔اس خفیہ ان پٹ نے اجودیا کی سیکورٹی کو لے کر پولیس کی نیند اڑا دی ہے۔ ایودھیا میں گلی گلی رام دھن گانے والے سادھوؤں کا بسیرا ہے،بڑی ...

علیحدگی پسند لیڈر آسیہ اندرابی کو گرفتارکرلیا گیا 

جموں و کشمیر پولیس نے آج علیحدگی پسند لیڈر آسیہ اندرابی کو پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گرفتار کر لیاہے۔ذرائع کے مطابق، ان کو آج صبح ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا گیا۔ علیحدگی پسند تنظیم حریت کانفرنس کی خاتون شاخ دختران ملت کی چیف آسیہ کو وادی کی خواتین کو سیکورٹی فورسز پر پتھراؤ ...

میں چاہتا ہوں ہوائی چپل والے بھی ہوائی سفر کریں:مودی

وزیر اعظم نریندر مودی نے ’اڑان‘ منصوبہ کے تحت جمعرات کو شملہ-دہلی روٹ پر ملک کی سب سے سستی گھریلو ہوائی خدمات کا آغاز کیا۔اڑان کا افتتاح اکتوبر 2016میں علاقائی رابطہ اسکیم کے تحت کیا گیا تھا۔اس اسکیم کا مقصد ہوائی خدمات کو ملک چھوٹے شہروں تک پہنچانا اور اسے کفایتی بنانا ہے۔اس ...

راجستھان اسمبلی میں ہنگامہ کرنے پر کانگریس کے 12سمیت 14ممبران اسمبلی معطل

راجستھان اسمبلی میں ہنگامہ کرنا کانگریس کے ممبران اسمبلی کو مہنگا پڑا۔اسمبلی صدر نے ڈسپلن شکنی کے الزام میں کانگریس کے12ممبران اسمبلی کو معطل کر دیا ہے،جبکہ ان کا ساتھ دینے والے ایک بی ایس پی ممبر اسمبلی اور ایک آزاد ممبر اسمبلی کو بھی معطل کردیا گیاہے، اسمبلی اسپیکر نے تمام ...