گاندھی کے قاتلوں کو پھانسی دی اور بابری مسجد سانحہ کے ملزمان کو وزیر بنایا:اویسی 

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 21st April 2017, 3:14 AM | ملکی خبریں |

حیدرآباد:20/اپریل (اہس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)اے آئی ایم آئی ایم کے صدراور ممبر پارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے بابری مسجد کی شہادت کے معاملے کو مہاتما گاندھی کے قتل سے زیادہ سنگین بتاتے ہوئے سماعت مکمل ہونے میں تاخیر کی مذمت کی۔انہوں نے کہا کہ 1992میں قومی شرم کے لیے ذمہ دار لوگ آج ملک چلا رہے ہیں۔اویسی نے ٹوئٹ کیا کہ مہاتما گاندھی کے قتل کی سماعت دو سال میں مکمل ہوئی اور بابری مسجد کی شہادت کا واقعہ جو مہاتماگاندھی کے قتل سے زیادہ سنگین ہے، اس میں اب تک فیصلہ نہیں آیا ہے۔گاندھی جی کے قاتلوں کو مجرم ٹھہرا کر پھانسی پر لٹکایا گیا اور بابری مسجد کی شہادت کے ملزمان کو مرکزی وزیر بنایا گیا، پدم وبھوشن سے نوازا گیا، انصاف کا نظام آہستہ چلتا ہے۔انہوں نے یہ تبصرہ ایسے وقت کیا ہے، جب سپریم کورٹ نے بابری مسجد شہادت معاملے میں بی جے پی کے سینئر لیڈر لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی اور اوما بھارتی کے خلاف مجرمانہ سازش کے الزام کو بحال کرنے کے سی بی آئی کی درخواست کو قبول کرلیا ہے۔حالانکہ عدالت عظمی نے کہا کہ راجستھان کے گورنر کلیان سنگھ کو آئینی رعایت ملی ہوئی ہے اور ان کے خلاف عہدے سے ہٹنے کے بعد سماعت ہو سکتی ہے۔قابل غورہے کہ کلیان سنگھ 1992میں اتر پردیش کے وزیر اعلی تھے۔ اویسی نے کہا کہ اس میں 24سال کی تاخیر ہوئی ہے، 24-25سال گزر چکے ہیں، لیکن آخر کار سپریم کورٹ نے فیصلہ کیا کہ سازش کا الزام ہونا چاہیے، لیکن مجھے امید ہے کہ سپریم کورٹ (1992سے زیر التوا)توہین عدالت کی درخواست پر بھی فیصلہ کرے گا۔انہوں نے اپنے کئی ٹوئٹ میں کہا کہ کیا کلیان سنگھ استعفی دے کر سماعت کا سامنا کریں گے یا گورنر کے پردے کے پیچھے چھپیں گے؟ کیا مودی حکومت انصاف کے مفاد میں انہیں ہٹائے گی؟ مجھے شک ہے۔اویسی نے کہا کہ ان کے خیال میں اگر سپریم کورٹ نے کارسیوا کی اجازت نہیں دی ہوتی، تو بابری مسجد کی شہادت نہیں ہوتی اور سپریم کورٹ کو اب بھی توہین عدالت کی عرضی پر سماعت کرنا باقی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کیا ذبیحہ کے لئے جانور فروخت کرنے پرمرکزی سرکار کی پابندی کارگر ہوگی؟!

ذبیحہ کے لئے جانوروں کی فراہمی جانوروں کی مارکیٹ اور میلوں سے ہوا کرتی ہے۔ مختلف شہروں میں کسان ایسی مارکیٹوں اور جانوروں کے میلے میں اپنے جانورفروخت کرتے ہیں اور یہاں سے قصائی خانوں کی ضرورت پوری ہوتی ہے۔ 

کالیکٹ کیرالہ میں ویناڈ دارلفلاح کیمپس کی نئی بلڈنگ کا شاندار افتتاح؛ دینی وعصری علوم کا حصول بیحد ضروری :ڈاکٹر ازہری

جامعہ مرکز الثقافۃ السنیہ کے شعبہ ریلیف اینڈ چاری ٹیبل فاؤنڈیشن آف انڈیا کے اشتراکی تعاون سے ویناڈ کال پٹہ دارالفلاح کیمپس کی نئی بلڈنگ برائے فلاح گرین ویلی اسکول ، زھرۃ القرآن ، قرآن اسٹڈی سینٹر کا آج یہاں شاندار افتتاح متحدہ عرب امارت کے ویلفیئر ڈیپارٹمنٹ کے سلطان حمد سھیل ...

مویشی بازاروں میں گائے اور بھینس کو ذبیحہ کیلئے فروخت کرنے پر پابندی؛ گائے کا تحفظ یا مسلمانوں اور دلتوں کے خلاف بالواسطہ جنگ ؟

حکومت نے ملک بھر میں مویشیوں کے بازاروں میں گائے اور بھینسوں کو ذبیحہ کیلئے فروخت پر امتناع کردیا ہے۔ اس اقدام سے کروڑوں غریب کسان مالی مصائب کا شکار ہوں گے اور ملک میں گوشت کی صنعت کو پہنچنے والی رسدات بری طرح متاثر ہوں گی۔

دہلی میں تعینات ہوں گی کمانڈو والی پی سی آر وین

دارالحکومت میں دہشت گردانہ حملوں کے خدشہ سے منسلک اطلاعات کے درمیان، دہلی پولیس نے حساس مقامات پر 10پی سی آر وین تعینات کرنے کا فیصلہ لیا ہے جن میں این ایس جی کی طرف سے تربیت یافتہ ڈرائیور اور کمانڈو ہوں گے۔

کالا دھن نکال کر رہیں گے ،میں اس وعدے سے کبھی مکرنے والا نہیں ہوں:گوہاٹی میں بولے پی ایم نریندر مودی

وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی حکومت کے تین سال پورے ہونے کے موقع پر جمعہ کو گوہاٹی میں ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تین سال پہلے اسی وقت 26مئی کو دہلی میں صدارتی محل کے احاطے میں صدر نے مجھے وزیر اعظم کے عہدہ کا حلف دلوایاتھا،