الہ آباد سے دہلی تک آبی راستے کے لیے مجوزہ منصوبہ رپورٹ تیار: نتن گڈکری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 9th February 2019, 1:45 PM | ملکی خبریں |

الہ آباد،9؍فروری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)مرکزی وزیر نتن گڈکری نے جمعہ کو یہاں کہا کہ دہلی سے الہ آباد تک آبی راستے سے آنے کے لئے حکومت نے وسیع پروجیکٹ رپورٹ تیار کر لی ہے اور جلد ہی اس پر کام شروع ہو جائے گا۔

یہاں گنگا اور جمنا میں چار ریورپورٹ، فرکا سے پٹنہ تک دریا معلوماتی نظام اور گنگا دریا میں ہلسا مچھلی کے ٹریفک کے لئے فرکا میں نیوگیشن لاک کے نئے نظام کا افتتاح کرنے کے بعد وزیر نے ایک پروگرام میں یہ معلومات دی۔ سڑک سے نقل وحمل، ہائی وے، پانی کے وسائل، شپنگ، دریا ترقی اور گنگا تحفظ وزیر نے کہا کہ دہلی سے الہ آباد تک آبی راستے کے لئے ڈی پی آر ہم نے تیار کر لی ہے، جلد ہی اگر الہ آباد سے دہلی جائیں گے، یہاں کے لوگ کشتی پر بیٹھ کر دہلی جائیں گے۔

الہ آباد میں لکڑی سے بنی پرانی کشتیوں کے چلن پر گڈکری نے کہا کہ میں نے یہاں جو کشتیاں دیکھی، وہ پرانی ہو چکی ہیں۔ شپنگ تعمیر کے لئے وزارت سبسڈی دیتی ہے۔ بین الاقوامی سطح کے فائبر گلاس سے کشتی بنانے کا یہاں امکان ہے۔ آپ (ریاستی حکومت) کی جگہ یقینی بنائیں اور پیشکش بھیجیں جس سے شپنگ تعمیر فیکٹری لگائی جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے ہماری ماہی گیر کمیونٹی کے لئے اور ہمارے لوگوں کے سیاحت کے لئے بھی ایک نیا موقع دستیاب ہوگا۔ فائبر گلاس سے بنی کشتیوں کو چلانے کے لئے ایتھنال سے چلنے والے انجن بھی ہم لا رہے ہیں۔

گنگا کی صفائی پر گڈکری نے کہا کہ میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ اگلے سال مارچ تک گنگا صاف بھی ہوگی اور نرمل بھی ۔ وزیر نے کہا کہ وارانسی سے الہ آباد تک ایک میٹر کی گہرائی کو یقینی بنانے کا کام کر رہے ہیں، ہم خاص ٹیکنالوجی لے کر آ رہے ہیں جس سے کروز جہاز کا آپریشنل آسان ہو جائے گا، جس کے انجن ٹویوٹا کمپنی کے ہوں گے، پنکھے ہوائی جہاز کے ہوں گے اور ائر بوٹ روس سے لائی ہے۔ یہ 28 فروری تک ہندوستان میں پہنچ جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

کورٹ نے راجیو سکسینہ کو بیرون ملک جانے کی اجازت دینے والے عدالت کے فیصلے پر روک لگائی

سپریم کورٹ نے آگسٹا ویسٹ لینڈ ہیلی کاپٹر سودے سے منسلک منی لانڈرنگ معاملے میں سرکاری گواہ راجیو سکسینہ کو دیگر بیماریوں کا علاج کرانے کے لئے بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کے دہلی ہائی کورٹ کے حکم پر بدھ کو روک لگا دی