فرانس کی خلیجی بحران کے حل کے لیے کویتی مساعی کی تائید

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th July 2017, 12:28 PM | خلیجی خبریں | عالمی خبریں |

پیرس،16جولائی(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)فرانس نے خلیجی ملکوں کے درمیان پائے جانے والے سفارتی تنازع کے حل کے لیے کویت کی ثالثی کی مساعی کی مکمل تائید اورحمایت کرتے ہوئے فریقین پر بات چیت کے ذریعے تنازعات کے حل پر زور دیا ہے۔العربیہ کے مطابق فرانسیسی وزیرخارجہ جو ایف لوڈریان نے ہفتے کو اپنے دورہ سعودی عرب کے دوران سعودی ہم منصب عادل الجبیر سے ملاقات کے بعد ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔ انہوں نے دہشت گردی کے خلاف سعودی عرب کی خدمات کی تعریف کی۔ جون ایف لوڈریان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ اور انتہا پسندانہ نظریات کے خاتمے کے لیے سعودی عرب کی خدمات کو ہمیشہ قدر کی نگاہ سے دیکھا جائے گا۔جدہ میں نیوز کانفرنس سے خطاب میں فرانسیسی وزیرخارجہ نے کہا کہ ہم کویت کی ثالثی کی بھرپور تائید اور حمایت کرتے ہیں۔ ہم ایک معاون کا کردار ادا کرنا چاہتے ہیں۔ توقع ہے کہ کویت کی ثالثی کی مساعی خلیجی ملکوں کیدرمیان جاری سفارتی تنازع کے حل کا موثر ذریعہ ثابت ہوں گی۔انہوں نے خلیجی ملکوں پر مسائل کے حل کے لیے بات چیت پر زور دیا۔ لوڈریان کا کہنا تھا کہ فرانس تنازع میں شامل تمام ممالک سے بات چیت اور حالات کو پرسکون رکھنے کا خواہاں ہے۔ پیرس خلیجی ملکوں کے مابین بات چیت کی بحالی کے لیے ایک سہولت کارکاکردار ادا کرتے ہوئے کویتی مساعی کی تائید اور حمایت کرتا ہے۔فرانسیسی وزیرخارجہ نے کہا کہ ان کا ملک خلیجی ریاستوں کے درمیان بامقصد بات چیت کی بحالی کے لیے کشیدگی کم کرنے اور بات چیت کا ماحول پیدا کرنے کاخواہاں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

مسجد الحرام میں غیر ملکی شخص کی خودکشی

سعودی عرب کے شہر مکہ میں اسلام کے مقدس ترین مقام مسجد الحرام میں ایک شخص نے خود کشی کر لی ہے۔سعودی عرب کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ایس پی اے نے مکہ پولیس کے ترجمان کے حوالے سے بتایا ہے کہ غیر ملکی شہری نے جمعہ کی رات نو بج کر 20 منٹ پر مسجد الحرام کی چھت سے نیچے طواف کرنے کی جگہ پر ...

مسجد نبوی میں سکیورٹی اہلکاروں کی خدمات پر ایک نظر

مسجد نبوی میں آنے والے زائرین کی نظروں میں سعودی سکیورٹی اہل کار نمایاں ترین حیثیت کے حامل نظر آتے ہیں۔ یہ اہل کار مسجد کے تمام حصوں اور راستوں میں خدمات انجام دیتے ہوئے عبادت کے لئے پْرسکون ماحول یقینی بنانے میں مصروف عمل ہوتے ہیں۔

مکہ المکرمہ :ماہ رمضان کے آخری عشرہ میں سکیورٹی انتظامات 70؍لاکھ فرزندان توحید نے عمرہ اداکیا

سعودی حکومت نے رمضان المبارک کے تیسرے عشرہ کے آغاز پر مکہ المکرمہ کے داخلی اور خارجی راستوں پر سخت حفاظتی اقدامات کیے ہیں، مسجد الحرام اور اطراف کے علاقوں میں فضائی سکیورٹی اور نگرانی بڑھا دی گئی ہے۔

انجلینا جولی کی عید پرعراق کے شہر موصل کے پناہ گزینوں سے ملاقات

اقوام متحدہ کی پناہ گزین کی خصوصی ایلچی انجلینا جولی نے عراق میں دہشت گردی سے سب سے متاثرہ علاقے موصل کا دورہ کیا اور عالمی برادری سے تباہ حال شہر کے بے گھر رہائشیوں کی دوبارہ اپنے گھروں میں آبادکاری کے لیے مدد کی اپیل کی ہے۔

ننگر ہار: طالبان پر خودکش حملے میں ہلاکتوں کی تعداد 36 ہو گئی

صوبہ ننگرہار میں کے محکمہ صحت کے ڈائریکٹر نجیب اللہ کماوال کے حوالے سے کہا ہے کہ ہفتہ کو ہونے والے اس حملے میں 65 افراد زخمی بھی ہوئے۔افغان حکام نے کہا ہے کہ جنگ بندی کے دوران مشرقی صوبہ ننگرہار میں افغان جنگجوؤں کے ایک اجتماع پر خودکش حملے میں ہلاکتوں کی تعداد 36 ہو گئی ہے۔

جاپان میں.1 6 شدت کا زلزلہ، تین افراد ہلاک

اوساکا اور اس کے گرد و نواح کا شمار جاپان کے اہم ترین صنعتی مراکز میں ہوتا ہے اور زلزلے کے بعد علاقے میں واقع بیشتر کارخانوں میں کام بند کردیا گیا ہے۔جاپان کے دوسرے بڑے شہر اوساکا میں آنے والے 6.1شدت کے زلزلے سے اب تک تین افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے۔

نیو جرسی: آرٹ فیسٹول میں فائرنگ، حملہ آور ہلاک

امریکہ کی ریاست نیو جرسی میں ایک آرٹ فیسٹول کے دوران فائرنگ سے 22 افراد زخمی ہوگئے ہیں جب کہ ایک مبینہ حملہ آور مارا گیا ہے۔حکام کے مطابق واقعہ اتوار کو نیوجرسی کے شہر ٹرینٹن میں پیش آیا جہاں رات بھر جاری رہنے والے آرٹ فیسٹول کے دوران دو متحارب گروہ آپس میں لڑ پڑے۔

افغان طالبان کا جنگ بندی میں توسیع سے انکار

افغان طالبان نے کہا ہے کہ افغان سکیورٹی فورسز سے تین روزہ جنگ بندی کے خاتمے کے بعد اس میں مزید توسیع نہیں کی جائے گی۔فرانسیسی خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ نے طالبان کے ترجمان ذبیع اللہ مجاہد کے حوالے سے کہا ہے کہ جنگ بندی 17 جون کی رات ختم ہو رہی ہے جس کے بعد طالبان کی کارروائیاں ...

ترک فوج کی عراق میں بمباری، 35 کرد جنگجو ہلاک

ترکی کی مسلح فوج نے ایک بیان میں دعویٰ کیا ہے کہ عراق کے شمالی علاقے جبل قندیل میں کرد علاحدگی پسند گروپ کردستان ورکرز پارٹی "PKK" کے ٹھکانوں پر بمباری کے نتیجے میں کم سے کم 35 کرد باغی ہلاک ہو گئے ہیں۔