چارہ گھوٹالہ: عدالت نے لالویادو کی ضمانت کی درخواست پر سی بی آئی سے مانگاجواب

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 15th March 2019, 11:25 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:15 /مارچ(ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا) سپریم کورٹ نے کروڑوں روپے کے چارہ گھوٹالے سے متعلق تین مقدمات میں آر جے ڈی سربراہ لالو پرساد یادو کی ضمانت کی درخواست پر جمعہ کو مرکزی تفتیشی بیورو سے جواب مانگا۔چیف جسٹس رنجن گوگوئی، جسٹس دیپک گپتا اور جسٹس سنجیو کھنہ کی بنچ نے سی بی آئی کو لالو یادو کی درخواست پر دو ہفتے کے اندر اندر جواب دینے کی ہدایت دی ہے۔لالو یادو نے ان معاملات میں انہیں ضمانت دینے سے انکار کرنے کے جھارکھنڈ ہائی کورٹ کے فیصلے کو چیلنج کیا ہے۔چارہ گھوٹالہ غیر منقسم بہار کے گلہ محکمہ میں خزانے سے 1990 کے شروع میں فرضی طریقے سے نو سو کروڑ روپے کی رقم نکالنے سے متعلق ہے۔لالو پرساد یادو اس دور میں بہار کے وزیر اعلی تھے۔آر جے ڈی سربراہ ان تین معاملوں میں دسمبر، 2017 سے رانچی کی برسا مڈا مرکزی جیل میں بند ہیں۔لالو یادو نے اس کی بڑھتی ہوئی عمر اور گرتی صحت کا حوالہ دیتے ہوئے جھارکھنڈ ہائی کورٹ سے ضمانت کی درخواست کی تھی۔آر جے ڈی سربراہ ذیابیطس، بلڈ پریشر اور بہت سے دیگر بیماریوں کا شکار ہیں اور انہیں ان میں سے ایک معاملے میں پہلے ضمانت مل گئی تھی۔لالو یادو دیوگھر، دمکا اور چائی باسا کے دو خزانہ سے فرضی طریقے سے فنڈز نکالنے کے جرم میں مجرم ٹھہرائے گئے ہیں۔چائی باسا خزانے سے متعلق دو میں سے ایک معاملے میں انہیں ضمانت مل گئی تھی۔اس وقت ان پر دورادا خزانے سے متعلق کیس میں مقدمہ چل رہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی