بھٹکل میں پھرچار لوگوں پر پاگل کتے کا حملہ؛ ایک بچہ سمیت چار زخمی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 13th September 2018, 9:14 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 13/ستمبر (ایس او نیوز)  ایک پاگل کتے کے حملے میں بھٹکل میں چار مزید لوگ زخمی ہونے کی واردات آج جمعرات شام ریلوے اسٹیشن روڈ پر پیش آئی ہے جس میں ایک دس سالہ بچہ بھی شامل ہے۔

سمجھا جارہا ہے کہ چاروں لوگوں کو ایک ہی پاگل کتے نے حملہ کرکے کاٹا ہے،  چاروں لوگوں کو بھٹکل سرکاری اسپتال میں ضروری انجکشن اور دوائیوں کے بعد گھر جانے کی اجازت دی گئی ہے۔

زخمیوں کی شناخت اُم سلمیٰ  (31)، شبانہ (27)، شبیر (49) اور دس سالہ ریاّن کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ دو روز قبل ہی ایک پاگل کتے کے کاٹنے سے قریبی علاقہ مُٹھلی  کے چار لوگ زخمی ہوئے تھے، اب پھر ایک بار چار لوگ کتے کے حملے میں زخمی ہوئے ہیں۔

بھٹکل کے ہر علاقہ میں پچاسوں کتے ایک جگہ سے دوسری  جگہ بھاگتے نظر آتے ہیں، جس کے نتیجے میں کئی لوگ اپنی بائک سے گر کر بھی زخمی ہوئے ہیں، مگر ان کتوں پر کوئی لگام نہیں کسی جارہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شرالی قومی شاہراہ توسیع کا دھرنا تیسرے دن بھی جاری :  ضلع انتظامیہ کو  شاہراہ  تعمیر کا اختیار   نہیں : ایڈیشنل ڈی سی

شرالی میں گرام پنچایت کی قیادت میں 45میٹر کی توسیع والی شاہراہ تعمیر  کو لے کر  جاری دھرنے کے تیسرے دن کی دوپہر اترکنڑا ضلع ایڈیشنل ڈی سی ڈاکٹر سریش ہٹنال احتجاجیوں سے ملاقات کرتے  نیشنل ہائی وے اتھارٹی آف انڈیا کے حکم کے بنا ضلع انتظامیہ کچھ کرنا ممکن نہیں ہونے کی وضاحت کی۔ ...

بھٹکل انجمن ڈگری کالج کے زیر اہتمام 19فروری سے سہ روزہ یونیورسٹی سطح کا بیڈمنٹن ٹورنامنٹ انعقاد

کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑسے ملحق   کالجوں کے درمیان  مردوں اور خواتین کا زونل لیول سہ روزہ بیڈمنٹن ٹورنامنٹ 19فروری سے انجمن ڈگری کالج اینڈ پی جی سنٹر بھٹکل کے زیر سرپرستی انعقاد کئے جانےکی اطلاع کالج پرنسپال مشتاق شیخ نے دی۔

پلوامہ میں فوجیوں پر حملہ کے بعد اترکنڑا ضلع آٹویونین نے کیا ایک ہفتہ تک آٹو پر سیاہ پٹی باندھ کرشہید فوجیوں کوشردھانجلی دینے کا فیصلہ

جموں کشمیر کےپلوامہ میں سکیورٹی فورس پر ہوئے دہشت گرد حملے کی کڑی مذمت کرتے ہوئے ضلع کے آٹورکشاپر  اگلے ایک ہفتہ تک سیاہ پٹی باندھ کر شہید فوجیوں کو شردھانجلی دینے کا اترکنڑا ضلع آٹو رکشا یونین کے نائب صدر کرشنا نائک آسارکیری نے جانکاری دی۔