میسورو کے ایک ہی خاندان کے چار افرادہارنگی ندی میں ڈوب گئے 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th August 2018, 10:12 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

میسور، 6 اگست (ایس او نیوز؍ یواین آئی) ایک ہی خاندان کے چار افراد ہارنگی ندی میں ڈوب گئے یہ حادثہ پیرکو اس وقت ہوا جب وہ اپنی گاڑی سے پریاپٹنہ ضلع کے تعلقہ ڈوڈاکمہرولی گاؤں سے کہیں جارہے تھے ۔

پولیس نے بتایا کہ متاثرین کی شناخت پالان سوامی، ان کی بیوی سنجو اور بیٹا نکیت اور بیٹی پورنیاما کے طور پرکی گئی ہے۔ اس خاندان کاتعلق داگو ضلع کے نپوکل سے ہے ۔مرنے والوں کی لاشیں باہر نکا ل لی گئیں اور پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دی گئی ہیں۔نہر میں پانی کابہاؤ بہت تیزتھا کیونکہ حکام نے سینچائی کے لئے پانی چھوڑاتھا۔بتداپورہ پولیس جائے حادثہ پرپہنچی اور اس سلسلے میں معاملہ درج کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

کانگریس تشہیری کمیٹی کے نئے صدر ایچ کے پاٹل نے عہدہ کا جائزہ لے لیا ملک کواچھے دن کا وعدہ کرکے اقتدار پرآئی بی جے پی کے لیڈروں نے ملک کوبے روزگاروں کا مرکز بنا دیاہے:وینو گوپال

سابق ریاستی وزیر ایچ کے پاٹل نے آج کرناٹک پردیش کانگریس تشہیری کمیٹی کے صدر کی حیثیت سے عہدہ کاجائزہ لے لیا ۔

بی جے پی کوابھیشک منوسنگھوی نے کہا ، کرناٹک میں کھلواڑہوتاتوقانونی منصوبہ تیارتھا

کرناٹک کے تازہ سیاسی واقعات کے پس منظر میں کانگریس کے سینئر لیڈر ابھیشیک منو سنگھوی نے جمعرات کو کہا کہ اگر بی جے پی ریاست کی مخلوط حکومت کو غیر مستحکم کرنے کے لیے اپنے ’آپریشن لوٹس‘پر آگے بڑھتی تو اس کومنہ توڑجواب دینے کے لیے کانگریس نے منصوبہ تیار کر رکھا تھا۔

شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر ہزاروں عوام  شاہراہ روک کیا  احتجاج : مجموعی استعفیٰ کا انتباہ اور الیکشن بائیکاٹ کا اعلان

تعلقہ کے شرالی میں دن بدن قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر معاملہ گرم ہوتا جارہاہے۔ شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع 45میٹر سے کم کرکے 30میٹر کئے جانےکی مخالفت کرتے ہوئے جمعرات کو ہزاروں لوگو ں نے قومی شاہراہ روک کر سخت احتجاج درج کیا۔ اس دوران عوامی مانگوں کو منظوری نہیں دی گئی تو ...

بھٹکل انجمن بی بی اے کی طالبہ مریم حرا کو  کرناٹکا یونیورسٹی سطح پر دوسرا رینک

انجمن انسٹی ٹیوٹ آف مینجمنٹ بھٹکل کی طالبہ مریم حرابنت ارشاد ائیکری ڈاٹا نے کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کے زیر اہتمام اپریل 2018میں منعقد ہوئی بی بی اے امتحانات میں پوری یونیورسٹی میں دوسرارینک حاصل کرتے ہوئے انجمن اور شہر کا نام روشن کیا ہے۔