گجرات کے سابق آئی پی ایس افسر سنجیو بھٹ 22 سال قدیم کیس میں گرفتار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th September 2018, 12:47 PM | ملکی خبریں |

احمدآباد 6 ستمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) سابق آئی پی ایس افسر سنجیو بھٹ کو 22 سال قبل ایک شخص کو مبینہ طور پر منشیات رکھنے سے کے الزام میں گرفتار کرنے سے متعلق ایک کیس کے ضمن میں گجرات سی آئی ڈی نے آج گرفتار کرلیا۔ کرائم انوسٹیگیشن ڈپارٹمنٹ (سی آئی ڈی) کے ڈائرکٹر جنرل پولیس اشیش بھاٹیہ نے کہا کہ سنجیو بھٹ اور دیگر سات افراد کو اور کیس میں پوچھ گچھ کے لئے حراست میں لیا گیا ہے جن میں چند سابق پولیس ملازمین بھی شامل ہیں جو ماضی میں بناس کانٹھا پولیس اسٹیشن سے منسلک تھے۔ سنجیو بھٹ 1996ء میں بناس کانٹھا ڈسٹرکٹ سپرنٹنڈنٹ پولیس تھے۔ تفصیلات کے مطابق بھٹ کی قیادت میں بناس کانٹھا پولیس نے 1996ء میں ایک وکیل سومر سنگھ راج پروہت کو تقریباً ایک کیلو منشیات قبضہ میں رکھنے کے الزام کے تحت گرفتار کیا تھا۔ بناس کانٹھا پولیس نے اس وقت دعویٰ کیا تھا کہ اس ضلع کے پالن پور ٹاؤن کی ایک ہوٹل کے ایک کمرہ سے جو راج پروہت کے زیرقبضہ تھا، یہ منشیات دستیاب ہوئے تھے۔ تاہم راجستھان پولیس کی تحقیقات سے انکشاف ہوا تھا کہ راج پروہت کو بناس کانٹھا پولیس نے جھوٹے مقدمہ میں پھنسایا ہے۔ یہ بھی پتہ چلا تھا کہ بناس کانٹھا پولیس نے راج پروہت کا راجستھان کے پالی ٹاؤن میں واقع ان کی رہائش گاہ سے اغوا کیا تھا۔ گجرات ہائیکورٹ نے اس سال جون میں اس مقدمہ کی تحقیقات سی آئی ڈی کے تفویض کیا تھا۔ چنانچہ سی آئی ڈی نے بھٹ کے خلاف عائد الزامات میں مواد پاتے ہوئے انہیں گرفتار کیا۔ مرکزی وزارت امور داخلہ نے بھٹ کو 2015ء میں خدمات سے ’’غیرمجاز غیاب‘‘ کی بنیاد پر برطرف کردیا تھا۔ سنجیو بھٹ بالخصوص وزیراعظم نریندر مودی کے کٹر مخالف ہیں۔ سوشیل میڈیا پلیٹ فارمس پر وزیراعظم اور ان کی پارٹی بی جے پی کو اکثر تنقید کا نشانہ بنایا کرتے ہیں۔ بھٹ نے 25 اگست سے غیرمعینہ مدت کا برت شروع کرنے والے پاٹیدار لیڈر ہاردک ڈٹیل سے گذشتہ ہفتہ ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی تھی۔ بی جے پی کی زیرحکمرانی احمدآباد میونسپل کارپوریشن نے حال ہی میں سنجیو بھٹ کی رہائش گاہ بھی منہدم کردیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

ہندوؤں کو اقلیتی درجہ دینے کا مطالبہ کرنے والی عرضی سپریم کورٹ سے خارج

سپریم کورٹ نے لفظ اقلیت کی تعریف کرنے اور ملک کی 9 ریاستوں میں اقلیتوں کی شناخت کےلئے ہدایت جاری کرنے سے متعلق عرضی جمعرات کو خارج کر دی۔ عرضی میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ جن ریاستوں میں ہندوؤں کی تعداد کم ہے وہاں انہیں اقلیتی درجہ فراہم کیا جائے۔

اپہار آتشزدگی سانحہ: متاثرین کی ’كيوریٹو عرضی‘ خارج، انسل برادران نہیں جائیں گے جیل

سپریم کورٹ نے اپہار سینما آتشزدگی سانحہ میں لاپروائی کے مجرم اورملک کے جانےمانے بلڈر انسل برادران کو بڑی راحت دیتے ہوئے آتشزدگی شکار کی ایسوسی ایشن کی كيوریٹو عرضی خارج کردی ہے۔ اب سشیل انسل اور گوپال انسل کو جیل نہیں جانا پڑے گا۔

دہلی: ڈاکٹر کفیل کی رہائی کے لئے یوپی بھون پر مظاہرہ، جامعہ کے متعدد طلبا پولیس حراست میں

اتر پردیش میں سیاسی اور سماجی کارکنان کے خلاف استعمال کیے جانے والے سخت قوانین کے خلاف جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طلبہ نے جمعرات کو یہاں اتر پردیش بھون کا گھیراؤ کرنے کی کوشش کی لیکن پولیس نے انھیں حراست میں لے لیا۔

کیرالہ: وزیر اعلیٰ وجین کا سڑک حادثے میں 20 افراد کی موت پر تعزیت کا اظہار

 کیرالہ کے وزیراعلی پنارائی وجین نے جمعرات کو تمل ناڈو کے تروپور ضلع کے اویناشی کے نزدیک قومی شاہراہ پرایک لاری کے کیرالہ ریاستی ٹرانسپورٹ کارپوریشن (کے ایس آرٹی سی) کی بس سے ٹکرانے کی وجہ سے ہوئے حادثے میں 20 افراد کی موت پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔