تجارتی گھرانوں کے قرضہ جات معاف کرنے میں فراخدلی،کسانوں کے قرضہ جات معاف کرنے سے ملک ڈوب جائے گا: رمیش کمار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th June 2017, 11:28 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،16؍جون(ایس او نیوز) ریاستی وزیر صحت رمیش کمار نے مرکزی حکومت کی طرف سے بڑے بڑے کارپوریٹ گھرانوں کے قرضہ جات معاف کئے جانے کا معاملہ اٹھایا اور اسمبلی میں کہاکہ مرکزی حکومت نے انتہائی فراخدلی سے بڑے بڑے کارپوریٹ گھرانوں کے قرضہ جات معاف کردئے ، لیکن غریب کسانوں کے قرضہ جات معاف کرنے کا سوال اٹھایا گیا تو ایسا تاثر دینے کی کوشش کررہی ہے کہ ان کسانوں کے قرضہ جات معاف کردئے گئے تو ملک ڈوب جائے گا۔ آج اسمبلی میں مختلف محکموں کی مانگوں پر بحث کے دوران کمار سوامی کی تقریر میں مداخلت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کسانوں کے قرضہ جات کی معافی کا مسئلہ ریاست میں موضوع بحث بنا ہوا ہے، ہر کوئی اس پر بول رہا ہے، ریاست کے کوآپریٹیو اداروں سے صرف 20 فیصد کسانوں نے قرضہ حاصل کیا ہے،80 فیصد قرضے قومی بینکوں سے حاصل کئے گئے ہیں۔ کوآپریٹیو بینکوں کے قرضوں کو اگر معاف کیا گیا تو کسانوں کو کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ مرکزی حکومت اگر ان کسانوں کے قرضہ جات معاف کردے تو کافی لوگوں کو فائدہ ہوگا۔ کارپوریٹ طبقے پر اپنی شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے رمیش کمار نے کہاکہ ایک دور تھاکہ جب اس ملک پر انگریزوں کی ایسٹ انڈیا کمپنی راج کررہی تھی، آج یہ دور ہے کہ مختلف کمپنیاں ملک پر راج کررہی ہیں۔ملک کا وزیر اعظم بھی وہی بنتا ہے، جسے یہ کمپنیاں چاہتی ہیں۔ اخبارات اور ٹی وی چینلس یہی کمپنیاں چلارہی ہیں۔پھر سچائی لوگوں تک کیوں کر پہنچے گی۔ ملک کے ہر ایک معاملے میں انہی کمپنیوں کی پالیسی مرتب ہورہی ہے۔ یہ لوگ چاہے جتنا بھی بڑا قرضہ کرلیں آسانی سے بچ نکلتے ہیں، کسان اگر قرضہ حاصل کرکے ادا نہ کرے تو اس کیلئے ایسے حالات پیدا کئے جاتے ہیں کہ وہ مجبوراً پھونسی لے لیتا ہے۔ خود کشی کرنے کے بعد بھی اس کسان کے ورثاء کو راحت نہیں ملتی ، ان کے اثاثے ضبط کرلئے جاتے ہیں ، جبکہ ہزاروں کروڑ روپے لوٹ کر ملک سے فرار لوگ عیش وآرام کی زندگی بسر کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت اگر واقعی کسانوں کی ہمدرد ہے تو فوراً تجارتی بینکوں سے کسانوں کے قرضہ جات معاف کرے۔

ایک نظر اس پر بھی

زوردار بارش کے نتیجے میں مینگلور سے بنٹوال کو جوڑنے والا مُلار پٹنہ بریج ٹوٹ گیا؛ عوام نے ریت کی غیر قانونی کان کنی کو بتایا ذمہ دار

گذشتہ کئی دنوں سے جاری زوردار بارش کے نتیجے میں  مینگلور تعلقہ کو بنٹوال سے جوڑنے والا ایک بریج آج پیر کو بالاخر ٹوٹ گیا جس کے ساتھ ہی  دونوں علاقوں کا رابطہ منقطع ہوگیا ہے۔ یہ پل مُلار پٹنہ میں  فالگونی ندی پر سے گذرتا تھا۔

نریگا منصوبہ کے تحت مرکز سے 1050 کروڑ روپئے باقی بقایاجات کی ادائیگی کیلئے مرکزی حکومت سے اپیل کی گئی ہے : کرشنا بائرے گوڈا

روزگار ضمانت اسکیم کے تحت نریگامزدوروں کو مرکزی حکومت سے 1050 کروڑ روپئے ادا ہونے باقی ہیں ۔ جلد از جلد رقم جاری کرنے کیلئے مرکز سے مطالبہ کیا گیا ہے ۔ ریاستی وزیر دیہی ترقیات و پنچایت راج کرشنا بائرے گوڈا نے یہ بات بتائی ۔

بیرونی ریاستوں کے ادویات پر نگاہ رکھی جائے ڈرگس کنٹرول آفس کے دورہ کے دوران شیوا نند ایس پاٹل کی افسروں کو ہدایت

ریاستی وزیر صحت شیوانند ایس پاٹل نے جمعہ کے دن اچانک شہر کے ڈرگس کنٹرول کے دفتر کا دورہ کرکے وہاں موجود ایچ پی ایس سی لیابریٹری، اینٹی بائیوٹک، اسٹیریلٹی ٹسٹنگ سنٹر کا جائزہ لیا ۔ اس موقع پر انہوں نے بیرونی ریاستوں سے درآمد ہونے والی دوائیوں پر کڑی نظررکھنے اور میعاد ختم ...

حج بھون کو نام رکھنے کے سلسلہ میں ابھی فیصلہ نہیں ہوا:پرمیشور

حج بھون کو ٹیپو سلطان سے منسوب کرنے کے سلسلہ میں ابھی کوئی حتمی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے ، یہ بات ریاستی نائب وزیر اعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشورنے کہی ۔ شہر میں اخباری نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ٹیپوسلطان کے سلسلہ میں بی جے پی کے قائدین پہلے بھی تنازعہ کھڑا کرچکے ہیں ،

ناراض سابق وزیر اعلیٰ کا اپنے قریبی ساتھیوں کے ساتھ اجلاس سدارامیا کو کابینہ درجہ کا عہدہ دینے مخلوط حکومت کافیصلہ

ریاستی اسمبلی انتخابات کے بعد کانگریس پارٹی اکثریت سے جیت درج نہیں کرپائی تو ریاست میں مخلوط حکومت تشکیل پائی ۔ سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا پانسالہ انتہائی مشغول ترین ایام سے فراغت حاصل کرکے میسور،باگل کوٹ اور بادامی کا دورہ کرتے ہوئے تازہ دم ہونے کے لئے قدرتی جڑی بوٹیوں کا ...