کرشنا طاس میں سیلاب کی صورتحال تشویشناک،کئی ذخائر سے پانی چھوڑا گیا، 60 افراد جزائر میں پھنس گئے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 22nd September 2017, 11:00 PM | ریاستی خبریں |

گلبرگی، 22ستمبر (ایس او نیوز؍عبدالحلیم منصور) کرناٹک کے کرشنا طاس میں سیلاب کی صورتحال تشویشناک ہوگئی ہے، کیونکہ باگل کوٹ ضلع کے المائٹی ریزروائر میں پانی کاشدید بہاؤ دیکھا جا رہا ہے ۔ ریزروائر کے نچلے علاقوں میں شدید پانی کے چھوڑنے کے سبب دریا کنارے واقع مواضعات میں سیلاب کا خطرہ بنا ہوا ہے ۔کرشنا بھاگیہ جل نگم لمیٹیڈ (کے بی جے این ایل) کے ذرائع نے بتایا کہ ریزروائر میں پانی کا بہاؤ 99,822 کیوزک رہا ہے ۔ حکام کی جانب سے 519.570 میٹر تک پانی کے ذخیرہ کو برقرار رکھا اور ریزروائر سے 167,00 کیوزک پانی چھوڑا گیا۔ اسی طرح المائٹی ریزروائر میں نچلے حصہ کے نارائن پور ڈیم میں بھی پانی کا شدید بہاؤ دیکھا گیا۔ حکام نے اس کے تمام 15 دروازے کھولتے ہوئے 117,914 کیوزک پانی چھوڑا۔ اس میں 127 ہزار کیوزک پانی کا بہاؤ دیکھا گیا۔ رائچور سے موصولہ اطلاع کے مطابق 15 خاندانوں کے 60 افراد کل شب سے لنگا سگور تعلقہ کے کادادل ہلی' ماگراہلی اور اومکار ہلی جزائر پھنسے ہوئے ہیں۔ ضلع انتظامیہ ان سے مسلسل ربط میں ہے اور بچاؤ کارروائیاں شروع کی گئی ہیں۔ محصور افراد آوارہ کتوں اور دیگر جانوروں سے اپنے بکروں کو خطرہ کے پیش نظر اپنے متعلقہ علاقوں کو واپس ہونا نہیں چاہتے ۔ محکمہ ریونیو کے حکام نے چوکسی کا انتباہ دیا اور دریا کی صورتحال پر انتظامیہ نظر بنائے ہوئے ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

مخلوط حکومت کوکوئی خطرہ نہیں ۔ صورتحال میڈیا کی پیداوار کوئی پارٹی نہیں چھوڑے گا ۔ جارکی ہولی برادران کے مسائل پر مشورہ کرنے سدارامیا دہلی جائیں گے

ریاستی مخلوط حکومت کی بقا کو لے کر پچھلے ایک ہفتہ سے چل رہا ڈرامہ ہنوز جاری ہے ۔ حالانکہ آج وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی اور ان کے بھائی ریاستی وزیر برائے تعمیرات عامہ ایچ ڈی ریونا نے مخلوط حکومت کے مستقبل کیلئے خطرہ پیدا کرنے والے جارکی ہولی برادران سے یہاں شہر کے ایک ہوٹل میں ...

حجاج کرام کے آٹھویں اور نویں قافلوں کی بنگلورو واپسی؛ حج کمیٹی چیرمین آر روشن بیگ ائرپورٹ پر حاجیوں کے استقبال کے لئے رہےموجود

حجاج کرام کے آٹھویں اور نویں قافلوں کی آج مدینہ منورہ سے بنگلور واپسی ہوئی۔ تقریباً ہر فلائی میں 300حجاج کرام پر مشتمل قافلے 42 دن قبل بنگلور سے سفر مقدسہ پر رخصت ہوئے تھے، فریضۂ حج کی تکمیل ،مکہ مکرمہ میں عبادات اور مدینے میں روضۂ رسول ؐ پر حاضری کی سعادتوں سے سرفراز ہوکر یہ ...

مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کی آج بنگلور آمد؛ آپریشن کمل کے جواب میں بی جے پی اراکین کے استعفوں کے خدشے؛ کیا اُلٹی پڑگئیں تدبیریں ؟

مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ منگل کو  بنگلور دورہ پر آرہے ہیں۔ حالانکہ بنگلور میں ان کا کوئی سرکاری پروگرام نہیں ہے، لیکن کہا جارہاہے کہ مخلوط حکومت کو گرانے کے لئے بی جے پی کی کوششوں کی مسلسل ناکامی کے بعد اس سلسلے میں ریاستی قائدین کو چند ہدایات دینے کے لئے وزیر داخلہ کا یہ ...

کرناٹکا کی مخلوط حکومت گرانے کے بی جے پی کے منصوبے پر پھر گیا پانی؛ کرناٹک کے بی جے پی قائدین پر امت شاہ گرم؛ پوچھا ،آپریشن کمل کی صلاحت نہیں تھی تو اس میں الجھے کیوں تھے

ریاستی حکومت کو ایک دن ایک ہفتہ اور ایک ماہ میں گرانے کے لئے بی جے پی قیادت بالخصوص ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا کے تمام دعوؤں کی کانگریس اور جے ڈی ایس اتحاد نے ہوا نکال دی ہے۔جن اراکین اسمبلی کو آپریشن کمل کا شکار قرار دیاجارہاتھا انہوں نے عوام کے سامنے آکر واضح کردیا ہے ...