کرشنا طاس میں سیلاب کی صورتحال تشویشناک،کئی ذخائر سے پانی چھوڑا گیا، 60 افراد جزائر میں پھنس گئے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 22nd September 2017, 11:00 PM | ریاستی خبریں |

گلبرگی، 22ستمبر (ایس او نیوز؍عبدالحلیم منصور) کرناٹک کے کرشنا طاس میں سیلاب کی صورتحال تشویشناک ہوگئی ہے، کیونکہ باگل کوٹ ضلع کے المائٹی ریزروائر میں پانی کاشدید بہاؤ دیکھا جا رہا ہے ۔ ریزروائر کے نچلے علاقوں میں شدید پانی کے چھوڑنے کے سبب دریا کنارے واقع مواضعات میں سیلاب کا خطرہ بنا ہوا ہے ۔کرشنا بھاگیہ جل نگم لمیٹیڈ (کے بی جے این ایل) کے ذرائع نے بتایا کہ ریزروائر میں پانی کا بہاؤ 99,822 کیوزک رہا ہے ۔ حکام کی جانب سے 519.570 میٹر تک پانی کے ذخیرہ کو برقرار رکھا اور ریزروائر سے 167,00 کیوزک پانی چھوڑا گیا۔ اسی طرح المائٹی ریزروائر میں نچلے حصہ کے نارائن پور ڈیم میں بھی پانی کا شدید بہاؤ دیکھا گیا۔ حکام نے اس کے تمام 15 دروازے کھولتے ہوئے 117,914 کیوزک پانی چھوڑا۔ اس میں 127 ہزار کیوزک پانی کا بہاؤ دیکھا گیا۔ رائچور سے موصولہ اطلاع کے مطابق 15 خاندانوں کے 60 افراد کل شب سے لنگا سگور تعلقہ کے کادادل ہلی' ماگراہلی اور اومکار ہلی جزائر پھنسے ہوئے ہیں۔ ضلع انتظامیہ ان سے مسلسل ربط میں ہے اور بچاؤ کارروائیاں شروع کی گئی ہیں۔ محصور افراد آوارہ کتوں اور دیگر جانوروں سے اپنے بکروں کو خطرہ کے پیش نظر اپنے متعلقہ علاقوں کو واپس ہونا نہیں چاہتے ۔ محکمہ ریونیو کے حکام نے چوکسی کا انتباہ دیا اور دریا کی صورتحال پر انتظامیہ نظر بنائے ہوئے ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

پریش میستا قتل معاملہ کی این آئی اے سے تحقیقات کا مطالبہ، منصفانہ جانچ نہیں ہوئی تو ساحلی علاقہ جل اٹھے گا: شو بھا کرند لاجے کا انتباہ

بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی ) کی ریاستی جنرل سکریٹری ورکن پارلیمان شو بھا کرند لاجے نے خبردار کیا ہے کہ اگر ہوناور کے پریش میستا قتل کی تحقیقات ریاستی حکومت مناسب طریقہ سے نہیں کرے گی تو ساحلی علاقہ جل اٹھے گا۔

ہوناور فرقہ وارانہ فسادات اورپریش میستا کی موت کا معاملہ ؛ فورنسک رپورٹ سے بی جے پی اور سنگھ پریوار کو زبردست جھٹکا

ہوناور میں معمولی سڑک حادثے سے شروع ہونے والا جھگڑا باقاعدہ فرقہ وارانہ فساد میں بدلنے اور اطراف کے علاقوں تک تشدد پھیل جانے کے پس منظر میں پریش میستا نامی نوجوان کی ہلاکت کو مسلم دہشت گردی سے جوڑنے کی جو سازش اور کوشش بی جے پی اور سنگھ پریوار کے لیڈروں کی طرف سے کی گئی تھی، اسے ...

خواتین کو اقتصادی اور سیاسی شعبوں میں آگے لانا ضروری۔ نوہیرا مہیلا امپاورمنٹ پارٹی کی کرناٹک یونٹ کے افتتاح کے موقع پر پارٹی صدر کا خطاب

آل انڈیا مہیلا امپاورمنٹ پارٹی (ایم ای پی) کی صدر وہیرا گروپ کی چیف ایکزی کیٹیو افسر ڈاکٹر نوہیرا شیخ نے کہاکہ خواتین میں خود اعتمادی پیدا کرتے ہوئے انہیں سیاسی،معاشی اور اقتصادی شعبوں میں مضبوط اور مستحکم بنانے کی اشد ضرورت ہے۔