دہلی میں پانچ منزلہ عمارت منہدم ، سات ہلاک، متعدد زخمی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 27th September 2018, 12:29 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،27؍ ستمبر (ایس او نیوز) شمال مغربی دہلی کے اشوک ویہار میں آج ایک پانچ منزلہ عمارت منہدم ہوگئی جس کے نتیجہ میں سات افراد بشمول دو خواتین اور چار بچے ہلاک اور دیگر سات زخمی ہوگئے۔ زخمیوں کو دین چند بندھو ہاسپٹل میں شریک کیا گیا ہے، جہاں ایک خاتون کی حالت تشویشناک بتائی گئی ہے۔ اس عمارت کے گراؤنڈ فلور پر واقع ایک دوکان انہدام کے وقت بند تھی۔ پہلی منزل مخلوعہ تھی۔ دوسری منزل پر ایک خاندان مقیم تھا۔ مہلوک بچوں میں 10 سال کی عمر کے دو بھائی بھی شامل ہیں۔ تیسری منزل پر دو خاندان مقیم تھے اور مہلوکین میں اس منزل کے ایک گھر میں رہنے والی ایک خاتون شامل ہے۔ دوسرے گھر کے خاندان کے دو بچے فوت ہوئے ہیں۔ چوتھی منزل پر ایک جوڑا نانتھورام اور نیشا رہتے تھے۔ نیشا کی حالت تشویشناک ہے۔ دواخانہ میں زیرعلاج ایک زخمی ویملیش نے کہا کہ جیسے ہی میں گھر پہنچا، چند میٹر آگے ہی بڑھا تھا کہ ایک زوردار آواز سنائی دی اور میں فوراً پلٹ گیا۔ میں نے دیکھا کہ یہ عمارت تاش کے پتوں کی طرح بیٹھ گئی۔ میں اپنے ارکان خاندان کی حالت کے بارے میں واقفیت کا منتظر ہوں۔ مقامی افراد نے کہا کہ اس عمارت کے قریب شیشم کا درخت تھا جو عمارت کے ساتھ گر پڑا۔

ایک نظر اس پر بھی

جے پی سی سے جانچ کرانے کا راستہ ا بھی کھلا ہے، عام آدمی پارٹی نے کہا،عوام کی عدالت اورپارلیمنٹ میں جواب دیناہوگا،بدعنوانی کے الزام پرقائم

آپ کے راجیہ سبھا رکن سنجے سنگھ نے کہا ہے کہ رافیل معاملے میں جمعہ کو آئے سپریم کورٹ کے فیصلے کے باوجود متحدہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) سے اس معاملے کی جانچ پڑتال کرنے کا اراستہ اب بھی کھلا ہے۔

رافیل پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ، راہل گاندھی معافی مانگیں: بی جے پی

فرانس سے 36 لڑاکا طیارے کی خریداری کے معاملے میں بدعنوانی کے الزامات پر سپریم کورٹ کی کلین چٹ ملنے کے بعد کانگریس پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے جمعہ کو کہا کہ کانگریس پارٹی اور اس کے چیئرمین راہل گاندھی ملک کو گمراہ کرنے کیلئے معافی مانگیں۔

بھٹکل کے مرڈیشور میں دو لوگوں پر حملے کی پولس تھانہ میں دو الگ الگ شکایتیں

تعلقہ کے مرڈیشور میں کل جمعرات کو  دو لوگوں پر حملہ اور پھر جوابی حملہ کے تعلق سے آج مرڈیشور تھانہ میں دو الگ الگ شکایتیں درج کی گئی ہیں اور پولس نے دونوں پارٹیوں کی شکایت درج کرتے ہوئے چھان بین شروع کردی ہے۔