حکومت کی کارکردگی کچھ بھی نہیں لیکن قرضہ بہت بڑا : کمار سوامی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th June 2017, 11:17 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،16؍جون(ایس او نیوز) سابق وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے ریاست میں سدرامیا حکومت کے چار سال کو ریاست کیلئے تباہ کن قرار دیتے ہوئے کہاکہ ریاست کے کسی بھی محکمہ نے متوقع پیش رفت حاصل نہیں کی، فنڈز کا مکمل استعمال نہیں کیاگیا ، لیکن اس کے باوجود بھی پچھلے چار سال کے دوران حکومت نے 1.36لاکھ کروڑ روپیوں کا قرضہ کیوں کیا ہے۔ آج اسمبلی میں مختلف محکموں کی مانگوں پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ محکمۂ باغبانی کو منظورشدہ بجٹ میں سے آٹھ ہزار کروڑ روپے ،محکمۂ مالیات کے 19؍ہزار کروڑ روپے ، محکمۂ آبپاشی کے 12؍ ہزار کروڑ روپے، محکمۂ تعلیمات کے 10ہزار کروڑ روپے، محکمۂ صحت کے 5700کروڑ روپے، محکمۂ ہاؤزنگ کے 2285 کروڑ روپے، محکمۂ شہری ترقیات کے دس ہزار کروڑ روپے گزشتہ سال استعمال ہی نہیں ہوئے ہیں۔ ریاستی حکومت نے تمام محکموں میں اسی طرح رقم صرف نہیں کی ہے ، اس کے باوجو د بھی 1.36لاکھ کروڑ روپیوں کا قرضہ ہوچکا ہے، یہ رقم کہاں گئی؟۔ انہوں نے کہاکہ ریاستی حکومت نے سرکاری مالیاتی اداروں سے 71 فیصد چھوٹی بچت کے اداروں سے پندرہ فیصد اور مرکزی حکومت سے دس فیصد قرضہ حاصل کیا ہے۔ وہ سمجھ رہے تھے کہ سدرامیا بحیثیت وزیر اعلیٰ بہت اچھا کام کررہے ہیں، کیونکہ بحیثیت اپوزیشن لیڈر سدرامیا مالیاتی نظم وضبط کے متعلق پچھلی حکومت کو بہت اچھی نصیحتیں کرتے رہے ، لیکن اب جو کچھ ہورہا ہے اسے دیکھ کر معلوم ہوتا ہے کہ سدرامیا کے قول وفعل میں تضاد ہے۔ محکمۂ ہاؤزنگ دعویٰ کرتا ہے کہ مختلف اسکیموں کیلئے اسے مرکزی حکومت نے کئی اعزازات دئے ہیں، لیکن اس محکمہ کی کارکردگی سب سے خراب ہے۔ محکمۂ آبپاشی بھی مختلف نہیں ہے۔ 2011 میں کے پی ایس سی کے ذریعہ 362گزیٹڈ پروبیشنر کے تقرر کے تنازعہ کا تذکرہ کرتے ہوئے کمار سوامی نے کہاکہ سدرامیا حکومت نے ان پروبیشنرس کو فٹ بال بنادیا ہے۔ اس کے علاوہ کمار سوامی نے ریاست کے مختلف محکموں کی خامیوں کی طرف نشاندہی کرتے ہوئے حکومت کو نشانہ بنایا۔

ایک نظر اس پر بھی

109؍ کروڑ کا دھوکہ، کلرک اور آڈٹ افسر ملزم

بروہت بنگلور مہانگر پالیکے(بی بی یم پی) کو جعلی بل ا ور دستاویزات منسلک کرکے 109؍ کروڑ روپیوں کا دھوکہ دینے پر انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ محکمہ کے فرسٹ ڈویژن کلرک ماینا اور محکمہ آڈٹ کے افسر ناگراج کارنت کے خلاف السور گیٹ پولیس تھانہ میں ایف آئی آر درج کی گئی ۔

کرناٹک کا دیرینہ خواب شرمندۂ تعبیر بنگلور شہر اسمارٹ سٹی کی فہرست میں شامل

بشمول راجدھانی بنگلور ملک کے 30؍شہروں کو مرکزی حکومت نے اسمارٹ سٹی کے طورپر ترقی دینے کے لئے منتخب کرلیاہے۔ مرکزی وزیر برائے شہری ترقیات وینکیا نائیڈونے آج اس کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ مرکزی اسمارٹ سٹی اسکیم کے تحت ان 30؍شہروں کو ترقی دی جائے گی۔

اب ڈیزل کی بھی ہوگی ہوم ڈیلیوری، بنگلور بنا پہلا شہر

بنگلور  ملک کا ایسا پہلا شہر بن گیا ہے جہاں پر لوگ اپنے گھر کے دروازے پر ڈیزل منگوا سکتے ہیں۔ٹھیک ویسے ہی جیسے آپ گھر بیٹھے اپنا پیزا، فوڈ، دودھ جیسی چیزیں آرڈر کرتے ہیں۔15جون کو مائی یٹرول پمپ نامی ایک اسٹارٹ اپ نے اس کی شروعات کی ہے۔یہ اسٹارٹ اپ ایک سال پرانی ہے