نامور ادیب اور عوامی مصنف دودھناتھ سنگھ کا انتقال

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th January 2018, 10:36 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ / الہ آباد،12؍جنوری ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) مشہور کہانی نگار دودھناتھ سنگھ کا جمعرات دیر رات انتقال ہو گیا۔ گزشتہ کئی دنوں سے وہ الہ آباد کے فینکس ہسپتال میں داخل تھے۔ کینسر کے عارضہ میں مبتلا دودھناتھ سنگھ کو بدھ کی رات دل کا دورہ پڑا تھا۔ انہیں وینٹی لیٹر پر شفٹ کر دیا گیا تھا جہاں انہوں نے جمعرات دیر رات 12 بجے آخری سانس لی۔ ان کے اہل خانہ کے مطابق گزشتہ سال اکتوبر ماہ میں تکلیف بڑھنے پر دودھناتھ سنگھ کو نئی دہلی آل انڈیا انسٹیٹیوٹ میں دکھایا گیا۔ طبی معائنہ میں غدودی کینسر کی تصدیق ہونے پر ان کا وہیں علاج چلا ، 26 دسمبر کو انہیں الہ آباد لایا گیا۔ دو تین دن بعد طبیعت بگڑنے پر انہیں فینکس ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا ، اس کے بعد سے ان کا وہیں علاج چل رہا تھا۔دو سال پہلے ان کی بیوی نرملا ٹھاکر کا انتقال ہو گیا تھا۔ دودھناتھ سنگھ اپنے پیچھے دو بیٹے بہو، بیٹی۔داماد اور نواسوں سے بھرا پُرا خاندان چھوڑ گئے ہیں۔ ۔غور طلب ہے کہ بنیادی طور پر بلیا کے رہنے والے دودھناتھ سنگھ نے الہ آباد یونیورسٹی سے ایم اے کیا اور یہیں وہ ہندی کے استاد بھی مقرر ہوئے۔ 1994 میں ریٹائرمنٹ کے بعد سے لکھنے اورادبی تنظیم کے ساتھ وہ فعال رہنے لگے ۔ انہیں کئی ایوارڈ بھی ملے ہیں ، ان کی تخلیقات میں ’’ سپاٹ چہرے والا آدمی ‘‘ جیسی تخلیق کافی مقبول ہوئی ۔ انہیں کئی سرکاری و غیر سرکاری اعزاز و ایوارڈ بھی مل چکا ہے ۔ 

ایک نظر اس پر بھی

آپ کے20ممبران اسمبلی کی رکنیت منسوخ، الیکشن کمیشن نے دیا فیصلہ

الیکشن کمیشن نے منفعت بخش عہدہ معاملے میں دہلی میں حکمران عام آدمی پارٹی کے 20ممبران اسمبلی کو نااہل قرار دیا ہے۔کمیشن اپنی رپورٹ صدر رام ناتھ کووند کو بھیجے گا۔اب سب کی نظریں صدر لگی ہوئی ہیں، جو اس معاملے پر حتمی مہر لگائیں گے۔

پروین توگڑیا کاوشوہندوپریشد سے کوئی تعلق نہیں، سنت سمیلن میں رام مندرپر نہیں آئے گی تجویز: سوامی چنمیانند

وی ایچ پی کے صدر پروین توگڑیا کی طرف سے حکومت پر ان کے خلاف سازش کرنے اور انکاؤنٹر کر نے کی سازش جیسے الزامات کے بعد نہ صرف آر ایس ایس بلکہ وی ایچ پی نے بھی پورے تنازعہ سے خود کو الگ کر لیاہے

مہاتما گاندھی کو’’راشٹریہ پتا‘‘ کہناغلط،شنکرآچاریہ سروپانند کی زبان بے لگام 

اپنے متنازع بیانات کے لئے جانے جانے والے شنکرآچاریہ سوامی سوروپانندنے پھر ایک بار متنازعہ بیان دے کر ایک تنازعہ کو جنم دے دیا ہے۔انہوں نے مہاتما گاندھی کو بابائے قوم کہے جانے پراعتراض کیا ہے۔

حج کا معاملہ مسلمانوں پر چھوڑ دیا جائے،صرف حج سبسڈی روکناامتیازی سلوک،امرناتھ اورکیلاش میں بھی دی جانے والی سبسڈی ختم کی جائے: پاپولر فرنٹ آف انڈیا

مرکزی حکومت کے ذریعہ حج سبسڈی ختم کیے جانے پر، پاپولر فرنٹ آف انڈیا کی سینٹرل سیکریٹریٹ نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو چاہئے کہ وہ مذہبی معاملات کو ان کے ماننے والوں پر چھوڑ دے اور ملک و بیرون ملک مختلف مذہبی اعمال پر دی جانے والی تمام مراعات کو ختم کرے۔