ہندوستان نے پہلی دفعہ کیااقرار، اجیت ڈوبھال اور پاکستانی این ایس اے کے درمیان بینکاک میں ہوئی تھی خفیہ بات چیت

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th January 2018, 12:26 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 12؍جنوری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)پاکستان کے تئیں ہندوستان کے رخ میں بڑی تبدیلیاں محسوس کی گئی ہیں۔ تقریبا دو سال کی تلخی کے بعد ہندوستان اور پاکستان نے نہ صرف یہ کہ مذاکرات پر اتفاق کیا ہے بلکہ ان کے درمیان قومی سلامتی مشیر (این ایس اے)کی سطح پربات چیت بھی شروع ہوگئی ہے۔یہ خفیہ بات چیت گزشتہ سال کے آخری ہفتے (26دسمبر)میں بینکاک میں منعقد ہوئی تھی۔ابتدائی خاموشی کے بعد وزارت خارجہ نے آخر کار اسے جمعہ( 11جنوری)کو قبول کرلیا ہے۔ہندوستان نے پہلی بار اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ ہندوستان اور پاکستان کی بینکاک میں این ایس اے کے ساتھ بات چیت ہوئی ہے۔ہندوستان نے جمعرات کو پہلی بار اس بات کی تصدیق کی کہ گزشتہ ماہ قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوبھال اور ان کے پاکستانی ہم منصب ناصر خان جنجوا نے بینکاک میں ملاقات کی تھی۔اجلاس میں دہشت گردی سے لڑنے اور سرحد پار دہشت گردی کو ختم کرنے پرزوردیاگیاتھا۔وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے کہا کہ جی ہاں، میں مانتا ہوں کہ بات چیت ہوئی تھی،میں اس بات کوبھی مانتاہوں کہ مسئلہ دہشت گردی کا تھا،علاقے میں دہشت گردی سے چھٹکارا حاصل کرنے کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا، اس بات کوکیسے یقینی بنایاجائے کہ دہشت گردی اس خطے کو متاثر نہ کرے،میرے خیال میں ہم نے اس مذاکرات میں سرحد پار دہشت گردی کے مسئلے کو اٹھایا۔

ایک نظر اس پر بھی

جے پی سی سے جانچ کرانے کا راستہ ا بھی کھلا ہے، عام آدمی پارٹی نے کہا،عوام کی عدالت اورپارلیمنٹ میں جواب دیناہوگا،بدعنوانی کے الزام پرقائم

آپ کے راجیہ سبھا رکن سنجے سنگھ نے کہا ہے کہ رافیل معاملے میں جمعہ کو آئے سپریم کورٹ کے فیصلے کے باوجود متحدہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) سے اس معاملے کی جانچ پڑتال کرنے کا اراستہ اب بھی کھلا ہے۔

رافیل پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ، راہل گاندھی معافی مانگیں: بی جے پی

فرانس سے 36 لڑاکا طیارے کی خریداری کے معاملے میں بدعنوانی کے الزامات پر سپریم کورٹ کی کلین چٹ ملنے کے بعد کانگریس پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے جمعہ کو کہا کہ کانگریس پارٹی اور اس کے چیئرمین راہل گاندھی ملک کو گمراہ کرنے کیلئے معافی مانگیں۔