ہمت ہے تو مجھے پارٹی سے برطرف کرکے دکھائیں،یڈیورپاکو ایشورپا کا کھلا چیلنج

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th January 2017, 11:13 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو۔11؍جنوری(ایس او نیوز ) سینئر بی جے پی لیڈر اور ریاستی لیجسلیٹیو کونسل کے اپوزیشن لیڈر کے ایس ایشورپانے سنگولی راینا برگیڈ کے جلسہ میں شرکت کی پاداش میں شہر کے سابق میئر ڈی وینکٹیش مورتی کو بی جے پی سے معطل کئے جانے پر شدید برہمی کا اظہار کیا ہے اور ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا کو چیلنج کیا ہے کہ ہمت ہے تو انہیں بی جے پی سے نکال کر دکھائیں۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے یڈیورپا پر رکیک حملے کرتے ہوئے کہاکہ چاہے جو بھی ہوجائے سنگولی راینا برگیڈ کی سرگرمیاں اب رکنے والی نہیں ہیں۔ انہوں نے کہاکہ وینکٹیش مورتی کو بی جے پی سے معطل کرکے یڈیورپا نے سنگولی راینا برگیڈ پر بہت بڑا احسان کیا ہے ، جس کیلئے وہ ان کے ممنون رہیں گے۔ انہوں نے کہاکہ 26 جنوری کو کوڈلا سنگم میں سنگولی راینا برگیڈ کے بہت بڑے جلسے کی تیاریاں کافی تیزی کے ساتھ جاری ہیں۔ ایشورپا نے سوال کیا کہ سنگولی راینا برگیڈ کے ساتھ اپنی شناخت وابستہ رکھنے میں غلطی کیا ہے؟۔ یہ پارٹی مخالف سرگرمی قطعاً نہیں ہے، اگر اسے پارٹی مخالف سرگرمیوں سے تعبیر کرکے بی جے پی قیادت انہیں معطل کرنا چاہتی ہے تو اس کی جرأت دکھائے۔ برگیڈکی سرگرمیاں اس کے بعد بھی رکنے والی نہیں ہیں۔ انہوں نے کہاکہ جیسے ہی یڈیورپا کو ریاستی بی جے پی کا صدر منتخب کیاگیا انہیں دوبارہ وزیر اعلیٰ بنانے کے مقصد سے دلتوں اور پسماندہ طبقات کو متحد کرنے سنگولی راینا برگیڈ کی تشکیل عمل میں آئی، لیکن اب یڈیورپا نے خود سنگولی راینا برگیڈ کی کسی بھی سرگرمی کی شدت سے مخالفت کررہے ہیں۔ ایسے میں یڈیورپا کو وزیراعلیٰ بنانے کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ 26جنوری کے کنونشن میں لاکھوں کی تعداد میں لوگ شریک رہیں گے اور اس میں سنگولی راینا برگیڈ اپنی طاقت کا مظاہرہ بڑے پیمانے پر کرے گی۔ یہ برگیڈ ریاست کے غریب طبقات کی فلاح وبہبود کیلئے قائم کی گئی ہے۔ اسے سمجھے بغیر یڈیورپا اگر انہیں نشانہ بنانا چاہتے ہیں تو اس سے کوئی ڈرنے والا نہیں ہے۔ سابق میئر وینکٹیش مورتی نے کہا کہ معطلی سے وہ خوفزدہ ہونے والے نہیں ہیں۔ اب اگر یڈیورپا بھی ان کی منت سماجت کریں تو وہ پارٹی میں لوٹنے والے نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کیلئے ایشورپا کی قربانیاں ناقابل فراموش ہیں ۔ متعدد الزامات کے باوجود دوبارہ یڈیورپا کو ہی وزیراعلیٰ کے عہدہ کا دعویدار بنانا درست نہیں ۔اس بار بی جے پی کو اگر اقتدار حاصل کرنا ہے تو ایشورپا کو وزیراعلیٰ کے عہدہ کا دعویدار بناکر پیش کرنا چاہئے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں راہول گاندھی کا وزیراعظم مودی پر راست حملہ؛ سی بی آئی کا بتایا نیا مفہوم؛ کہا سینٹرل بیورو آف اللیگل مائننگ

وزیراعظم نریندر مودی پر راست نشانہ لگاتے ہوئے کانگریس صدر راہول گاندھی نے بھٹکل میں اپنے انتخابی جلسہ میں کہا کہ   مودی بسونا کی مورتی پر پھول کا ہار پہناتے ہیں  اوربڑی بڑی باتیں بھی کرتے ہیں ، لیکن بسونا نے جو کہا تھا اُس پر عمل نہیں کرتے۔راہول کے مطابق   بسونا نے کہا تھا کہ ...

جے ڈی ایس ،بی جے پی کی مدد کر رہی ہے ، مودی نہیں بلکہ سدرامیا کھیل کو حقیقی طورپر تبدیل کرنے والے ہیں: کے سی وینوگوپال

اے آئی سی سی کے جنرل سکریٹری و انچارج کرناٹک کے سی وینوگوپال نے کہا ہے کہ جے ڈی ایس کی 12مئی کو ہونے والے انتخابات میں موجودگی صرف کانگریس کے ووٹوں کی تقسیم ہے اور ایچ ڈی دیوے گوڑا کی زیرقیادت پارٹی کا واحد نکاتی ایجنڈہ سدرامیا کو شکست دینا اور بی جے پی کی مدد کرنا ہے ۔