ایردوآن کا نیٹو سے شام میں عسکری مداخلت کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th March 2018, 8:08 PM | عالمی خبریں |

استنبول11مارچ(ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا ) ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے شام میں کْرد جنگجوؤں کے خلاف انقرہ کے فوجی آپریشن کو سپورٹ نہ کرنے پر نیٹو اتحاد کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ہفتے کے روز اپنے حامیوں کے ایک اجتماع میں گفتگو کرتے ہوئے ایردوآن نے نیٹو پر دْہرے معیار کا الزام عائد کیا۔ترکی کے صدر نے کہا کہ اْن کے ملک سے مطالبہ کیا جاتا ہے تو وہ تنازع کے علاقوں میں اپنے فوجیوں کو بھیج دیتا ہے مگر اس کے مقابل ترکی کو کوئی سپورٹ نہیں ملتی۔ترکی نے شام کے شمال مغربی علاقے عفرین کو کرد جنگجوؤں سے پاک کرنے کے لیے کْرد پیپلز پروٹیکشن یونٹس کے خلاف 20 جنوری سے ایک فوجی آپریشن شروع کر رکھا ہے۔انقرہ کرد پروٹیکشن یونٹس کو ایک دہشت گرد تنظیم شمار کرتا ہے جب کہ نیٹو اتحاد اور امریکا داعش تنظیم کے خلاف لڑائی میں کرد پروٹیکش یونٹس کی سپورٹ کر رہے ہیں۔رجب طیب ایردوآن نے نیٹو پر زور دیا کہ وہ ترکی کی مدد کرے کیوں کہ اْن کے ملک کی سرحد کو "اس وقت خطرہ لاحق ہے"۔

ایک نظر اس پر بھی

عمران خان کے خط کے بعد اب ہند۔ پاک کے وزراء خارجہ کی نیویارک میں ہوگی میٹنگ

 ہندوستان اور پاکستان کے وزراء خارجہ کے درمیان نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے دوران الگ سے ملاقات ہوگی۔ وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے آج یہاں پریس کانفرنس میں یہ اطلاع دیتے ہوئے بتایا کہ میٹنگ کی تاریخ اور وقت دونوں فریقوں کے درمیان باہمی رضامندي سے بعد میں طے ...

مذہبی تہوار کی آڑ میں ہزاروں یہودیوں کی قبلہ اول میں آمد ورفت جاری

شر پسندیہودی آباد کاروں کی جانب سے قبلہ اول کی بے حرمتی کا سلسلہ جاری ہے۔ مذہبی تہوار ’عید کپور‘ کی مناسبت سے ہزاروں یہودی صبح وشام قبلہ اول میں داخل ہو کر اشتعال انگیز حرکات اورتلمودی تعلیمات کے مطابق مذہبی رسومات ادا کررہے ہیں۔

اسرائیلی ریاستی دہشت گردی، 24 گھنٹے میں 6 فلسطینی شہید

قابض صہیونی فوج نے فلسطین میں ریاستی دہشت گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران چھ فلسطینیوں کو بے رحمی کے ساتھ شہید کر دیا۔ شہداء کا تعلق غزہ، غرب اردن اور بیت المقدس سے ہے۔اطلاعات کے مطابق دو فلسطینی کو غزہ کی پٹی میں جنگی طیاروں کے ذریعے بم باری کرکے شہید کیا ...

میانمار کی رہنما آنگ سان سوچی کے خلاف ’فیس بُک پوسٹ ‘ کرنا پڑ گیا کالم نگار کو مہنگا؛ سات سال کی سزا؛ اظہار رائے کی آزادی پر اُٹھ گئے سوال

ایک وقت تھا جب آنگ سانگ سوچی میانمار میں جمہوریت اور آزدای ٔ اظہار کیلئے مہم چلا کر وہاں کے فوجی آمروں کے خلاف عوام کو کھڑا کیا تھا اور اب حال یہ ہے کہ میانمار میں ہر طرح سے ان لوگوں کے خلاف کارروائی کی جا رہی ہے جو انصاف اور جمہوریت پسند ہیں۔ روہنگیائیوں کے خلاف ہونے والی ...