ایردوآن کا نیٹو سے شام میں عسکری مداخلت کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th March 2018, 8:08 PM | عالمی خبریں |

استنبول11مارچ(ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا ) ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے شام میں کْرد جنگجوؤں کے خلاف انقرہ کے فوجی آپریشن کو سپورٹ نہ کرنے پر نیٹو اتحاد کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ہفتے کے روز اپنے حامیوں کے ایک اجتماع میں گفتگو کرتے ہوئے ایردوآن نے نیٹو پر دْہرے معیار کا الزام عائد کیا۔ترکی کے صدر نے کہا کہ اْن کے ملک سے مطالبہ کیا جاتا ہے تو وہ تنازع کے علاقوں میں اپنے فوجیوں کو بھیج دیتا ہے مگر اس کے مقابل ترکی کو کوئی سپورٹ نہیں ملتی۔ترکی نے شام کے شمال مغربی علاقے عفرین کو کرد جنگجوؤں سے پاک کرنے کے لیے کْرد پیپلز پروٹیکشن یونٹس کے خلاف 20 جنوری سے ایک فوجی آپریشن شروع کر رکھا ہے۔انقرہ کرد پروٹیکشن یونٹس کو ایک دہشت گرد تنظیم شمار کرتا ہے جب کہ نیٹو اتحاد اور امریکا داعش تنظیم کے خلاف لڑائی میں کرد پروٹیکش یونٹس کی سپورٹ کر رہے ہیں۔رجب طیب ایردوآن نے نیٹو پر زور دیا کہ وہ ترکی کی مدد کرے کیوں کہ اْن کے ملک کی سرحد کو "اس وقت خطرہ لاحق ہے"۔

ایک نظر اس پر بھی

شاہ سلمان ریلیف مرکز کے زیراہتمام جنگ سے متاثر80 یمنی بچوں کی بحالی

یمن میں حوثی شدت پسندوں کی جانب سے جنگ میں جھونکے بچوں کی بحالی کے لیے شاہ سلمان ریلیف سینٹر بحالی پروگرام کے پانچویں اور چھٹے مرحلے کا آغاز کردیا ہے۔ اس مرحلے میں جنگ سے متاثرہ 80 بچوں کو بحالی پروگرام سے گذارنے کے بعد ان کے گھروں کو بھیجا جائے گا۔

کانگریس ایران کو عالمی مالیاتی نظام سے الگ کرنے کے لیے کوشاں

امریکا کے باوثوق ذرائع کا کہنا ہے کہ کانگریس ایران کو عالمی مالیاتی نظام سے الگ کرنے کے لیے کوشاں ہے۔ذرائع کے مطابق امریکی کانگریس نے ایران کی منی لانڈرنگ اور دہشت گرد تنظیموں کو فنڈنگ پر گہری نظر رکھی ہوئی ہے۔