اسرائیلی دہشت گردی، مصر کا غزہ کے زخمیوں کے علاج کا اعلان

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2018, 12:36 PM | عالمی خبریں |

قاہرہ،15 مئی ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)مصر کی حکومت نے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر غزہ کی پٹی میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے زخمی ہونے والے فلسطینیوں کا مفت علاج کرانے کا اعلان کیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق مصری وزیر صحت ڈاکٹر احمد عماد الدین نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ان کی حکومت نے اسپتالوں کو احکامات دیے ہیں کہ وہ غزہ کی پٹی سے آنے والے زخمیوں کو علاج کی ہر ممکن سہولت مہیا کریں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ شمالی سیناء کے اسپتالوں میں ہنگامی حالت نافذ کردی گئی ہے تاکہ غزہ کی پٹی میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ اور آنسوگیس کی شیلنگ سے زخمی ہونے والے فلسطینی بھائیوں کو فوری طبی امداد فراہم کی جاسکے۔انہوں نے کہا کہ غزہ کے مریضوں کی مصرمنتقلی کے لیے کرائسز سیل اور وزارت صحت کے زیرانتظام ہنگامی رابطہ مرکز قائم کیا گیا ہے تاکہ غزہ کی پٹی سے آنے والے مریضوں کو اسپتالوں میں پہنچانے اور انہیں طبی امداد مہیا کرنے میں کسی قسم کی دشواری کا سامنا نہ کرنا پڑے۔احمد عمادالدین نے کہا کہ غزہ کی پٹی سے لائے جانے والے زخمیوں کو العریش، بئر العبد، الشیخ زوید اور رفح کے اسپتالوں میں منتقل کیا جا رہا ہے جب کہ مریضوں کو اسپتالوں میں پہنچانے کے لیے سات ایمبولینسیں بھی مہیا کی گئی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ غزہ کے زخمیوں کے لیے 58 اقسام کی ادویات مہیاکی گئی ہیں۔ اس کے علاوہ اسپتالوں کے عملے کو حاضر رہنے اور تمام طبی ضروریات فراہم کرنے کے احکامات دیے گئے ہیں۔خیال رہے کہ کل چودہ مئی کو فلسطین میں اسرائیلی ریاست کے قیام کے 70 سال پورے ہونیاور امریکی سفارت خانے کی القدس منتقلی کے خلاف غزہ میں پرتشدد مظاہرے ہوئے۔ اسرائیلی فوج نے پرامن فلسطینی مظاہرین پر طاقت کا اندھا دھند استعمال کرکے کم سے کم 55 فلسطینیوں کو شہید اور 2700 کو زخمی کر دیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

افغانی اور بنگلہ دیشی پناہ گزینوں کو پاکستان کی شہریت دیں گےعمران خان

پاکستان میں جو بچے پیدا ہوئے ہیں، ان کو شہریت دی جائے گی۔پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے اعلان کیا ہے کہ ان کی حکومت پاکستان میں پیدا ہوئے تمام افغانی اوربنگلہ دیشی پناہ گزینوں کو شہریت فراہم کرے گی۔ ایکسپریس ٹریبیونل کی خبر کے مطابق حکومت بنانے کے بعد اتوار کو اپنے پہلے دورے ...

امریکا 2019 میں 30 ہزار پناہ گزین قبول کرے گا

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے پیر کے روز ایک اعلان میں بتایا ہے کہ آئندہ برس کے لیے پناہ گزین پروگرام کے سلسلے میں پناہ گزینوں کی حد 30 ہزار مقرر کی گئی ہے۔