جے این یومعاملے میں تفصیلی تفتیش کی وجہ سے چارج شیٹ داخل کرنے میں وقت لگا:مرکزی حکومت

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 6th February 2019, 11:26 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:6 /فروری (ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا)مرکزی حکومت نے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو)کے کچھ طالب علموں کے خلاف غداری کے معاملے میں دہلی پولیس کی طرف سے چارج شیٹ دائر کرنے میں تین سال کا وقت لگنے کے پیچھے معاملے کی تفصیلی تحقیقات بنیادی وجہ بتایا ہے۔وزیر داخلہ ہنس راج گگنارام اہیر نے بدھ کو راجیہ سبھا میں ایک سوال کے تحریری جواب میں بتایا کہ جے این یو کے کچھ طالب علموں اور رہنماؤں کے خلاف درج غداری کے معاملے میں دہلی پولیس نے گزشتہ 14جنوری کو میٹروپولیٹن مجسٹریٹ کی عدالت میں چارج شیٹ دائر کیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ پولیس نے ان کے خلاف 11فروری 2016کو وسنت کنج پولیس تھانے میں تعزیرات ہند کی دفعہ 124ا (غداری)سمیت دیگر دفعات میں مقدمہ درج کیا تھا۔چارج شیٹ دائر کرنے میں تین سال کا وقت لگنے کے بارے میں اہیر نے بتایا کہ دہلی پولیس کی طرف سے دی گئی معلومات کے مطابق، یہ تحقیقات وسیع تھی،اس میں کئی ملزم، مشتبہ اور گواہ شامل تھے، اس لئے وقت لگا۔

ایک نظر اس پر بھی

کورٹ نے راجیو سکسینہ کو بیرون ملک جانے کی اجازت دینے والے عدالت کے فیصلے پر روک لگائی

سپریم کورٹ نے آگسٹا ویسٹ لینڈ ہیلی کاپٹر سودے سے منسلک منی لانڈرنگ معاملے میں سرکاری گواہ راجیو سکسینہ کو دیگر بیماریوں کا علاج کرانے کے لئے بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کے دہلی ہائی کورٹ کے حکم پر بدھ کو روک لگا دی