اگر گھر پر رہ گیا ہے آپ کا ڈرائیونگ لائسنس ، تو بھی اب نہیں کٹے گا چالان

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th August 2018, 9:05 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی ،10؍اگست(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)اگر آپ جلدی جلدی میں ڈرائیونگ لائسنس اور گاڑی کی آر سی گھر پر بھول آئے ہیں تو بھی آپ کو پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے ، کیونکہ پولیس اب آپ کا چالان نہیں کاٹ سکتی ہے ۔ دراصل حکومت نے لائسنس کی ہارڈ کاپی رکھنے کی لازمیت کو ختم کردیا ہے ، اس کیلئے بس آپ کو اپنے دستاویز کی کاپی ڈیجیٹل لاکر میں رکھنی ہوگی ۔ ٹریفک پولیس یا دیگر ایجنسیاں ان دستاویزات کی ضرورت پڑنے پر ڈجی لاکر ایپ کے ذریعہ تصدیق کرسکیں گی ۔

مرکزی حکومت نے ریاستوں کے ٹرانسپورٹ ڈیپارٹمنٹ اور ٹریفک پولیس کو ہدایت دی ہے کہ وہ تصدیق کیلئے دستاویز کی اصلی کاپی نہ لیں ۔ آئی ٹی ایکٹ کی شقوں کا حوالہ دیتے ہوئے وزارت ٹرانسپورٹ نے ٹریفک پولیس اور ریاستوں کے ٹرانسپورٹ محکموں سے کہا ہے کہ ڈرائیونگ لائسنس ، رجسٹریشن سرٹیفکیٹ اور انشورینس پیپر جیسے دستاویزات کی اوریجنل کاپی تصدیق کیلئے نہ لی جائے ۔

وزارت کی طرف سے کہا گیا ہے کہ ڈجی لاکر یا ایم پریوہن ایپ پر موجود دستاویز کی الیکٹرانک کاپی اس کیلئے قابل قبول ہوگی ۔ اس کا مطلب یہ ہوا کہ ٹریفک پولیس اب اپنے پاس موجود موبائل سے ڈرائیور یا گاڑی کی معلومات ڈیٹابیس سے نکال کر استعمال کرسکتی ہے ، اسے اوریجنل دستاویز لینے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

کیا ہے ڈیجیٹل لاکر

ڈیجیٹل لاکر میں دستاویز رکھنے اور انہیں جاری کرنے کی سہولت مرکزی حکومت مہیا کرا رہی ہے ۔ اس سہولت کا استعمال کرکے لوگ مختلف سرکاری اداروں کے ذریعہ جاری دستاویز کا ضرورت پڑنے پر استعمال کرسکتے ہیں ۔ ان کو اپ لوڈ کرسکتے ہیں ، ای سائننگ کے ذریعہ خود سے تصدیق کرسکتے ہیں اور شیئر بھی کرسکتے ہیں ۔موجودہ وقت میں ڈجی لاکر سے دستاویز جاری کرنے والے 31 تنظیمیں اور 9 رکیویسٹر تنظیمیں جڑی ہوئی ہیں ۔ ڈجی لاکر پر 76 لاکھ افراد رجسٹرڈ ہوچکے ہیں ۔

ڈیجیٹل لاکر یا ڈجی لاکر کا استعمال کرنے کیلئے آپ کو

https://digitallocker.gov.in,digilocker.gov.in

پر اپنا اکانٹ بنانا ہوگا ۔ اس کیلئے آپ کو اپنے آدھار کارڈ کے نمبر کی ضرورت پڑے گی ۔

ایک نظر اس پر بھی

کانگریس کی چھٹی فہرست جاری، مہاراشٹر کے 7 اور کیرالہ کے 2 امیدواروں کے ہیں نام

کانگریس پارٹی نے لوک سبھا انتخابات کے لئے امیدواروں کی چھٹی فہرست جاری کر دی ہے، چھٹی فہرست میں 9 امیدواروں کے نام شامل ہیں، ان میں مہاراشٹر کے 7 اور کیرالہ کے دو امیدواروں کے نام شامل ہیں، کانگریس پارٹی اب تک 146 امیدواروں کے ناموں کا اعلان کر چکی ہے۔

مودی پھر جیتے تو ملک میں شاید انتخابات نہ ہوں: اشوک گہلوت

کانگریس کے سینئر لیڈر اور راجستھان کے وزیر اعلی اشوک گہلوت نے منگل کو نریندر مودی حکومت کے دور میں ’جمہوریت اور آئین‘ کو خطرہ ہونے کا الزام لگاتے ہوئے دعوی کیا کہ اگر عوام نے مودی کو پھر سے اقتدار سونپا، تو ہو سکتا ہے

انڈونیشیا میں سیلاب اور تودے سے مرنے والوں کی تعداد 89 ہوئی

  انڈونیشیا کے مشرقی علاقے پاپوا میں سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 89 ہو گئی ہے اور لاپتہ 74 لوگوں کی تلاش کے لئے ریسکیو آپریشن چلایا جا رہا ہے۔ راحت رسانی مہم میں مصروف حکام نے منگل کو یہاں یہ اطلاع دی۔

کرناٹک میں نوٹیفکیشن کے پہلے دن 6؍امیداروں کی نامزدگیاں داخل 

ریاست میں لوک سبھا الیکشن کے پہلے مرحلہ میں 14؍سیٹوں پر 18؍اپریل کو ہونے والے الیکشن کے لئے پرچہ نامزدگی کرنے کا آغاز ہوگیا ۔ پہلے دن چار حلقوں میں6؍ امیدواروں کی جانب سے 11؍ مزدگیاں داخل کئیں۔ یہ اطلاع ریاستی الیکشن افسر سنجیو کمار نے دی۔

بھٹکل کے ایک اُردو اسکول کے کمپائونڈ میں خون کے دھبے اور کھڑکی کے ٹوٹے گلاس پائے جانے کے بعد زبردست ہاتھاپائی ہونے کا شبہ

یہاں مدینہ کالونی ، محی الدین اسٹریٹ  میں واقع  اُردو ہائیر پرائمری اسکول  کی دیوار اور صحن پرجابجا  خون کے دھبے سمیت ایک کھڑکی کا شیشہ ٹوٹا ہوا پائے جانے  کے بعد شبہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ یہاں رات کو زبردست ہاتھاپائی یا ماردھاڑ کی واردات رونما ہوئی ہے۔ واقعے کے بعد  اسکول کے ...

اسد الدین اویسی نے حیدرآباد پارلیمانی سیٹ سے پرچہ نامزدگی کیا داخل

لنگانہ میں لوک سبھا انتخابات کے اعلامیہ کی اجرائی کے بعد سب سے پہلے صدر مجلس و رکن پارلیمنٹ حیدرآباد بیرسٹر اسدالدین اویسی نے آج حیدرآباد لوک سبھا  سیٹ سے مجلس کے امیدوار کی حیثیت سے اپنا پرچہ نامزدگی داخل کیا ہے۔

انڈونیشیا میں سیلاب سے 77 لوگوں کی موت، 4000 سے زیادہ لوگوں کو بچانے کی کوشش

انڈونیشیا کے مشرقی علاقہ کے پاپوا صوبے میں سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے کے واقعات میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 77 ہو گئی ہے۔ ان حادثوں میں 116 زخمی بھی ہوئے ہیں۔  وہیں تقریبا 4000 لوگوں کو بچانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔