حکومت چھٹے پے کمیشن کے دوسرے مرحلے کی سفارش کے نفاذ کیلئے تیار: ڈی کے شیوکمار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 25th August 2018, 10:52 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،25؍اگست(ایس او نیوز) ریاست کی مخلوط حکومت سرکاری ملازمین کے لئے چھٹے پے کمیشن کے دوسرے مرحلے کی سفارشوں کے نفاذ کے لئے پابند عہد ہے۔ ریاستی وزیر برائے میڈیکل تعلیم ڈی کے شیوکمار نے بتایا کہ اس سلسلے میں وزیراعلیٰ کمار سوامی سے بات چیت کی گئی ہے۔

سرکاری ملازمین کی انجمن کی طرف سے پیش کی گئی تہنیت قبول کرنے کے بعد انہوں نے بتایاکہ محکمہ فائنانس کے افسروں سے تبادلہ خیال کے بعد بہت جلد اس بارے میں فیصلہ لیاجائے گا۔ پنشن اسکیم کے بارے میں انہوں نے بتایا کہ ملک کی دوسری ریاستوں میں جاری نئی پنشن اسکیموں کا بھی جائزہ لیاجارہاہے اور وزیراعلیٰ عنقریب اس سلسلے میں محکمہ فائنانس کے اعلیٰ افسروں سے بات چیت کرکے ریاستی سرکاری ملازمین کے پنشن کا معاملہ حل کرنے میں کامیاب ہوں گے۔

انہوں نے بتایا کہ سرکاری ملازمین حکومت کے مختلف پروگرام ومنصوبے عوام تک پہنچانے کا کام کرتے ہیں اور حکومت سرکاری ملازمین کے مسائل کے حل کے لئے تیاررہتی ہے۔ ماضی میں بھی ریاستی حکومتوں نے ملازمین کے مسائل حل کرنے اور انہیں راحت پہنچانے میں کوئی کمی نہیں چھوڑی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ سرکاری ملازمین کی انجمن کے قیام کو سو سال مکمل ہونے جارہے ہیں اس سلسلے میں انجمن کا صد سالہ بھون تعمیر کرنے کے لئے حکومت نے ہوسکیرے ہلی میں پی ای ایس کالج کے قریب زمین منظور کی ہے۔

اس موقع پر بات کرتے ہوئے وزیر کوآپریشن بنڈپا کاشنپور نے بتایاکہ نیشنل پنشن اسکیم (این پی ایس) منسوخ کرنے کے بارے میں پارٹی کے انتخابی منشور میں وعدہ کیاتھا۔حکومت این پی ایس ردکرنے کے لئے پابند عہد ہے۔ بات چیت کے بعد اس بارے میں اقدامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ اس معاملے میں تجربہ کار افسران حکومت کو مشورہ دیں۔

ایک نظر اس پر بھی

یڈیورپا میرے صبر کا امتحان نہ لیں؛ حکومت کو گرانے کی بارہا کوشش بی جے پی کو زیب نہیں دیتی: کمار سوامی کا بیان

وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے ریاستی بی جے پی صدر یڈیورپا کو متنبہ کیا ہے کہ بارہا ریاستی حکومت کو گرانے کی کوشش کرکے وہ ان کے صبر کا امتحان نہ لیں۔اگر یہ کوشش جاری رہی تو یڈیورپا کو اس کی بھاری قیمت ادا کرنی پڑے گی۔

ارکان اسمبلی کو خریدنے کی کوشش پرسدرامیا نے کہا؛ اپوزیشن کار ول ادا کرنے کی بجائے بی جے پی بے شرمی پر اتر آئی ہے

سابق وزیر اعلیٰ اور ریاستی  حکمران اتحاد کی رابطہ کمیٹی کے چیرمین سدرامیا نے کہا ہے کہ ریاست میں بی جے پی کو ایک تعمیری اپوزیشن پارٹی کا رول ادا کرنا چاہئے، لیکن ایسا کرنے کے  بجائے انتہائی بے شرمی سے یہ پارٹی ریاستی حکومت کو گرانے کی کوششوں کو اپنا معمول بناچکی ہے۔