بارش کے متاثرین کی بھرپور مدد کرنے شیوکمار کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 18th August 2018, 10:05 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،18؍اگست(ایس او نیوز) ریاستی وزیر برائے آبی وسائل ومیڈیکل ایجوکیشن ڈی کے شیوکمار نے کہا ہے کہ ریاست کے کورگ ، ملناڈ اور پڑوسی ریاست کیرلا میں مسلسل بارش کے سبب سیلاب کی جو صورتحال پیدا ہوئی ہے اس سے متاثرہ خاندانوں کی مدد کے لئے ریاستی عوام کو فراخدلی سے قدم بڑھانا چاہئے۔

اپنی رہائش گاہ پر ایک اخباری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ کورگ اور منگلور کے علاوہ کئی علاقوں میں لوگوں نے اپنے تمام اسباب گنوا لئے ہیں ، ان لوگوں کے پاس کھانے پینے کی قلت پیدا ہوگئی ہے، فوری طور پر ان لوگوں کو بنیادی سہولت فراہم کرنے کے لئے ضروری قدم اٹھانے ہوں گے۔ وزیر موصوف نے کہاکہ بنگلور رورل اور رام نگرم ضلع کے علاوہ ہباگوڈی، پینیا ،نلمنگلا ، بڑدی اور ہاروہلی کے انڈسٹریل ایریا میں کام کرنے والے صنعت کاروں سے زیادہ مدد طلب کی جائے گی۔

انہوں نے کہاکہ ریڈی میڈ کارخانوں میں بغیر فروخت رہ چکے کپڑے بطور عطیہ دینے کی گزارش صنعت کاروں سے کی گئی ہے۔ ان سے کہاگیا ہے کہ امداد ی اشیاء رام نگرم کے ڈپٹی کمشنر تک پہنچا دی جائیں۔ انہوں نے کہاکہ محکمۂ آب پاشی کے انجینئروں سے کہا گیا ہے کہ حکم کے سبھی کنٹراکٹروں سے گز ارش کی جائے کہ متاثرہ لوگوں کی مدد کے لئے بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔ اس موقع پر ڈی کے شیوکمار نے بتایاکہ بارش کی زیادتی اور پڑوسی ریاست کیرلا سے بارش کا پانی بہا دئے جانے کی وجہ سے ریاست کے بعض آبی ذخائر میں درڑایں پڑ گئی ہیں۔

انہوں نے بتایاکہ کاویری طاس میں آنے والے کرشنا راجہ ساگر، کبنی اور ہیماوتی آبی ذخائر میں واضح دراڑ دیکھی گئی ہے۔اس کے علاوہ تنگا بھدرا ڈیم میں بھی دراڈ کی اطلاع ملی ہے۔ بارش کا پانی کم ہوتے ہی ان کی مرمت کا کام جنگی پیمانے پر شروع کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ جن آبی ذخائر زیادہ پانی جمع ہے وہاں باہر بہاؤ بڑھا کر آبی ذخائر کو بچانے افسروں کو ہدایت دی گئی ہے۔

انہوں نے کہاکہ اس بار ریاست کے آبی ذخائر میں جتنا پانی جمع ہوا ہے وہ اپنے آپ میں ایک ریکارڈ ہے، ماضی میں اس قدر زیادہ مقدار میں پانی جمع ہونے کا کوئی ریکارڈ محکمے کے پاس موجود نہیں ہے۔ مہادائی آبی تنازعے کے متعلق ٹریبونل کے قطعی فیصلے کے بارے میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے ڈی کے شیوکمار نے بتایا کہ ریاستی حکومت نے اس سلسلے میں ٹریبونل کی طرف سے جاری کئے گئے فیصلے کا جائزہ لیا ہے اور ماہرین قانون سے بھی گزارش کی ہے کہ اس فیصلے کا تفصیلی جائزہ لے کر حکومت کے سامنے اپنی رائے پیش کریں۔

بیشتر ماہرین نے فیصلے کا جائزہ لینے کے بعد یہی رائے دی ہے کہ ٹریبونل کے فیصلے کا عدالت میں چیلنج کیا جائے ۔ وزیر موصوف نے کہاکہ اس سلسلے میں آنے والے دنوں میں بھی ریاستی حکومت کی طرف سے جلد بازی میں کام نہیں لیا جائے گا بلکہ تمام سے مشوروں کے بعد مہادائی مسئلے سے متاثرہ کسانوں کو راحت پہنچائی جاسکے ایسا قدم اٹھایا جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

مرکزی وزیر اننت کمار کے انتقال پر ریاستی حکومت نے کیا 3دن سوگ کا اعلان۔ سرکاری دفاتر اور تعلیمی اداروں کو ایک دن کی تعطیل

بنگلورو سے کسی بھی انتخاب میں شکست نہ کھانے اور 6مرتبہ رکن پارلیمان منتخب ہونے والے بی جے پی کے ایک معروف لیڈر اور مرکزی وزیربرائے پارلیمانی امور اننت کمار(59سال) کے انتقال پرریاستی حکومت نے 3دن کے لئے سرکاری سوگ اورایک دن کے لئے تمام سرکاری دفاتر اور تعلیمی اداروں میں تعطیل کا ...

بنگلورو: امبیڈنٹ کمپنی دھوکہ دہی معاملہ : سابق وزیر جناردھن ریڈی گرفتار ،14دن عدالتی تحویل میں

امبیڈنٹ کمپنی دھوکہ دہی معاملہ سامنے آتے ہی زیر زمین چلے گئے  سابق وزیر جناردھن ریڈی  سنیچراپنے وکیلوں کے ساتھ سی سی بی دفتر پہنچے ریڈی کی سی سی بی پولس نے20گھنٹوں سے زائد  پوچھ تاچھ کی۔ سی سی بی پولس کی جانچ ٹیم معاملے کو لے کر ثبوت اکھٹا کرنے کے بعد  اتوار کو  گرفتار کیااور ...

ہندوستان کی جنگ آزادی کے اولین مجاہد حضرت ٹیپو سلطان شہیدؒ ہیں،حضرت ٹیپوؒ پر الزامات لگانے والے ملک و ملت کے دشمن اور غدار ہیں: شاہ ملت مولانا سید انظر شاہ قاسمی

  ہندوستان کی جنگ آزادی کیلئے مسلمانوں نے جتنا خون بہایا ہے اتنا کسی اور قوم نے پسینہ تک نہیں بہایا۔پھر بھی آج اغیار مسلمانوں سے انکی شہریت ہونے کا ثبوت مانگتے ہیں۔پہلے تو یہ صرف ہمیں نشانہ بنایا کرتے تھے لیکن اب یہ لوگ اسلام کی معزز شخصیات اور ہندوستان کی جنگ آزادی کے اولین ...

شادی میں شرکت مہنگی پڑی : 9خاندانوں کا سماجی بائیکاٹ ؛آج بھی انسانیت سوز روایت زندہ ؟

گاؤں کے ذمہ دار کی اجازت کے بغیر شادی میں شریک ہونے پر 9خاندانوں کابائیکاٹ کرتے ہوئے انہیں گاؤں سے ہی باہر کئے جانے کا غیرانسانی واقعہ پیش آیاہے۔ سماجی مقاطعہ ، عدم تعاون جیسے ناسور آج بھی زندہ رہنے کی تازہ مثال ہے۔

مدھیہ پردیش : اقتدار میں آئے تو سرکاری دفاتر میں نہیں ہوگی آر ایس ایس کی نشست ، ملازمین پر بھی پابندی

مدھیہ پردیش میں انتخابی ماحول گرم ہے۔ سیاسی پارٹی ووٹروں کو لبھانے کے لئے زور شور سے تشہیر میں مصروف ہیں۔ تمام طرح کے وعدے کئے جا رہے ہیں۔ اس دوران کانگریس نے اپنا منشور جاری کر دیا ہے۔

بنگلورو: امبیڈنٹ کمپنی دھوکہ دہی معاملہ : سابق وزیر جناردھن ریڈی گرفتار ،14دن عدالتی تحویل میں

امبیڈنٹ کمپنی دھوکہ دہی معاملہ سامنے آتے ہی زیر زمین چلے گئے  سابق وزیر جناردھن ریڈی  سنیچراپنے وکیلوں کے ساتھ سی سی بی دفتر پہنچے ریڈی کی سی سی بی پولس نے20گھنٹوں سے زائد  پوچھ تاچھ کی۔ سی سی بی پولس کی جانچ ٹیم معاملے کو لے کر ثبوت اکھٹا کرنے کے بعد  اتوار کو  گرفتار کیااور ...

جامعہ اسلامیہ بھٹکل میں ہوا شاندار قراءت مظاھرہ قاری ڈاکٹر عبدالناصر حرک مصری کی خوش الحان قراءت نے سامعین کو کیا مسحور

قاری ڈاکٹر عبدالناصر حرک حفظہ اللہ کا شمار مصر کے مشہور و معروف قراء میں ہوتا ہے، آپ کو قراءت سبعہ وعشرہ میں درک حاصل ہے، آپ نے تقریباً 150 ملکوں کا دورہ کیا جہاں اپنی مسحور کن قراءت سے عوام کے دلوں کو جیتا۔