کرناٹکا کانگریس صدر دنیش گنڈو راؤ نے بی جے پی کوقرار دیا دہشت گرد؛ کہا؛ بی جے پی ملک کی اقلیتوں اور کمزور طبقات کو دہشت زدہ کرنے میں ہے مصروف

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 20th August 2018, 11:00 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،20؍اگست(ایس او نیوز)کرناٹکا پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر دنیش گنڈو راؤ نے بی جے پی کو دہشت گرد قوت قرار دیا ہے۔

آج کے پی سی سی دفتر میں سابق وزیراعظم آنجہانی راجیو گاندھی اور سابق وزیراعلیٰ آنجہانی دیوراج ارس کے جنم دن کی تقریبات میں حصہ لیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سناتھن دھرم کے نام پر بی جے پی اپنے کارندوں کے ذریعے ملک کی اقلیتوں اور کمزور طبقات کو دہشت زدہ کرنے میں لگی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس قائدین ملک کے لئے ترقیاتی نظریہ رکھنے سے کوسوں دور ہیں۔ سناتھن دھرم کا نظریہ رکھنے والے کارکنوں نے ہی صحافی گوری لنکیش ، نریندر دھابولکر ، گووند پنسارے اور ایم ایم کلبرگی کا قتل کیاہے۔ ان قاتلوں کو کیفرکردار تک پہنچانے کے لئے ایک طرف قانونی ایجنسیاں جدوجہد میں مصروف ہیں تو دوسری طرف بی جے پی اور آر ایس ایس ان دہشت گردوں کی تائید میں کھڑی ہوئی ہیں۔ اس سے ظاہر ہوتاہے کہ یہ دونوں قوتیں دہشت گرد ہیں۔

انہوں نے کہاکہ گوری لنکیش کے قاتلوں کا پتہ لگانے میں ریاستی پولیس نے غیر معمولی سرعت سے کام لیا ، لیکن مہاراشٹرا کی بی جے پی حکومت نے اب تک پنسارے اور دابولکر کے قاتلوں کا پتہ لگانے سے وہاں کی پولیس کو روک رکھا ہے۔ یہ محض اس لئے کہ بی جے پی اور آر ایس ایس سے وابستہ کارکن نے یہ حرکت کی ہے،اگر کوئی مسلمان ایسی حرکت کرتاتو اس کے سارے خاندان کو نشانہ بنالیا جاتا ۔ سابق وزیراعظم آنجہانی اٹل بہاری واجپائی کی آخری رسومات کے دوران سوامی اگنی ویش پر حملے کو انہوں نے بی جے پی کی سوچ کا عکاس قرار دیا۔ اس موقع پر سابق وزیراعلیٰ سدرامیا، کے پی سی سی کارگزار صدر ایشور کھنڈرے اور دیگر کانگریس لیڈر موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

کْولنگ ٹیکنالوجی میں اہم اختراعات کے تین ملین امریکی ڈالر انعام کا اعلان 

آج نئی دہلی میں دو روزہ گلوبل کْولنگ انوویشن سمٹ کے افتتاحی اجلاس کے دوران معیاری روم ایئر کنڈیشننگ(آر اے سی)کے مقابلے میں پانچ گنا کم ماحولیاتی اثرات کی حامل رہائشی کولنگ ٹیکنالوجی میں اختراع اور ترقی کو ترغیبات فراہم کرنے کے لیے ایک بین الاقوامی مسابقہ گلوبل کولنگ پرائز کا ...

شادی میں شرکت مہنگی پڑی : 9خاندانوں کا سماجی بائیکاٹ ؛آج بھی انسانیت سوز روایت زندہ ؟

گاؤں کے ذمہ دار کی اجازت کے بغیر شادی میں شریک ہونے پر 9خاندانوں کابائیکاٹ کرتے ہوئے انہیں گاؤں سے ہی باہر کئے جانے کا غیرانسانی واقعہ پیش آیاہے۔ سماجی مقاطعہ ، عدم تعاون جیسے ناسور آج بھی زندہ رہنے کی تازہ مثال ہے۔

مدھیہ پردیش : اقتدار میں آئے تو سرکاری دفاتر میں نہیں ہوگی آر ایس ایس کی نشست ، ملازمین پر بھی پابندی

مدھیہ پردیش میں انتخابی ماحول گرم ہے۔ سیاسی پارٹی ووٹروں کو لبھانے کے لئے زور شور سے تشہیر میں مصروف ہیں۔ تمام طرح کے وعدے کئے جا رہے ہیں۔ اس دوران کانگریس نے اپنا منشور جاری کر دیا ہے۔