عرب ملکوں میں اختلافات اسرائیل کے لئے تاریخی موقع؛ فلسطینیوں کو الگ تھلگ کرنے اسرائیلی اپوزیشن لیڈر کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 19th June 2017, 5:24 PM | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

مقبوضہ بیت المقدس،19؍جون(آئی این ایس انڈیا؍ایس او نیوز)  اسرائیل کے اپوزیشن لیڈر نے خطے کی موجود صورت حال کو اسرائیل کے لیے تاریخی موقع قرار دیتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اسرائیل کو فلسطینیوں سے الگ تھلگ کردے۔اسرائیلی اپوزیشن رہنما یتزحاق ہرٹزوگ نے ایک کلچر سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خطے کی موجودہ صورت حال اور عرب ملکوں میں اختلافات اسرائیل کے لیے فلسطینیوں سے الگ تھلگ ہونے کا نادرموقع ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت موجودہ حالات سے  فائدہ اٹھاتے ہوئے خود کو دہشت گردی اور انتہا پسندی سے نمٹنے کے لیے فلسطینیوں سے الگ تھلگ کردے۔صہیونی اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا ہے کہ اسرائیل کو درپیش خطرات کم ہوئے اور نہ ہی اسرائیل پر حملے بند ہوئے ہیں۔ فلسطینیوں کی طرف سے اسرائیل پرحملوں میں کمی کا یہ مطلب نہیں کہ صہیونی ریاست محفوظ ہوگئی ہے۔

ادھر اسرائیلی پارلیمنٹ کے ایک سینئر رکن اور اپوزیشن جماعت صہیونی کیمپ کے رہنما عمیر بالیو نے وزیرعظم نیتن یاھو کی پالیسیوں کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ نیتن یاھو کی پالیسیوں کے نتیجے میں اسرائیل کے خلاف ہونے والی سازشیں بند نہیں کی جاسکی ہیں۔ حکومت فلسطینی مزاحمت کاروں کے حملوں کی روک تھام کے حوالے سے موثر اقدامات نہیں کررہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

پریش میستا کے پوسٹ مارٹم کی فائنل رپورٹ ابھی نہیں ملی ۔ دیشپانڈے

ہوناور میں فرقہ وارانہ فسادات کا سلسلہ شروع ہونے کے بعد پریش میستا نامی نوجوان کی جو لاش دستیاب ہوئی تھی اور اس سے پورے ضلع میں نفرت کی آگ بھڑکائی گئی تھی، اس تعلق سے ضلع انچارج وزیر دیشپانڈے نے کہا ہے کہ پریش کے پوسٹ مارٹم کی قطعی رپورٹ ابھی نہیں آئی ہے۔

امن کے باغ میں تشدد کا کھیل کس لئے؟ خصوصی اداریہ

ضلع شمالی کینر اکو شاعرانہ زبان میں امن کا باغ کہا گیا ہے۔یہاں تشدد کے لئے کبھی پناہ نہیں ملی ہے۔تمام انسانیت ،مذاہب اور ذات کامائیکہ کہلانے والی اس سرزمین پر یہ کیسا تشددہے۔ ایک شخص کی موت اور اس کے پیچھے افواہوں کا جال۔پولیس کی لاٹھی۔ آمد ورفت میں رکاوٹیں۔ روزانہ کی کمائی سے ...

سرسی فساد کے9 ملزمین کی ضمانت پر رہائی؛ 62کو بھیجا گیا عدالتی حراست میں

سرسی فساد کے پس منظر میں جن ملزمین کو حراست میں لیا گیا تھا ان میں ایم ایل اے وشویشور ہیگڈے کاگیری سمیت  9 ملزمین کو ضمانت پر رہا کردیا گیا جبکہ 62 ملزمین کو عدالتی حراست میں دھارواڑ جیل بھیج دیا گیا ہے۔

ہوناور میں پریش کی موت کا معاملہ: انصاف نہیں ملا تو ہم خود کشی کرلیں گے ؛ پریش کے والد کا بیان؛ دیشپانڈے کی رقم واپس لوٹانے کا انتباہ

ہوناور تشد د میں ہلاک ہوئے پریش میستا کے والد کملا کر میستا نے اپنے خاندان والوں کے ساتھ ہوناور کے ساگر ریسڈینسی میں پریس کانفرنس کرتےہوئے کہاکہ ہمیں ریاستی سرکار اور پولس پر اعتماد نہیں ہے،ہلاکت کی جانچ سی بی آئی یا این آئی اے کی طرف سے جانچ کرانے کا مطالبہ کیا۔