بھٹکل تعلقہ میں ڈینگو بخار کے معاملات میں اضافہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th July 2017, 12:50 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل ،17؍جولائی (ایس او نیوز) ان دنوں بھٹکل تعلقہ وبائی مرض ڈینگو بخارکے معاملات میں اضافہ ہوتا نظر آرہا ہے۔ اور اس بار دیگر مریضوں کے ساتھ ہیلتھ ایجوکیشن افیسر ہی اس بخار کی لپیٹ میں آنے اور منی پال اسپتال میں علاج کے لئے داخل ہونے کی بات پتہ چلی ہے۔

سال 2017میں بھٹکل تعلقہ میں اب تک ڈینگو کے 5معاملات سامنے آئے ہیں۔جن میں ہڈین علاقے کے منجو ناتھ رنگپّا نائک(۲۴سال)، مرڈیشور شیرانی کی سپریتا پرمیشور بھٹ(۲۰سال)،ماوین کوروے کریکال کے منجو ناتھ انّپا موگیر،اورسینئر ہیلتھ ایجوکیشن افیسر ایریّا نارائن دیواڈیگا(۵۷سال) شامل ہیں۔

محکمہ صحت عامہ کی طرف سے ہدایت جاری کی گئی ہے کہ اگرکسی کو بخار اور سردی زکام ہوتاہے تو اس صورت میں اسے معمولی سمجھ کربے پروائی نہ کرتے ہوئے فوراً ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہیے اور مناسب علاج کروانا چاہیے۔اس کے علاوہ اپنے اطراف کے ماحول کو صاف ستھرا رکھنے کی خصوصی توجہ دینی چاہیے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کیخلاف کانگریس کا جاری کردہ ٹیپ جعلی، کرناٹک کانگریس رکن اسمبلی کابیان، کانگریس پریشان 

بی جے پی کے خلاف کانگریس کے ایک جاری کردہ ٹیپ سے کانگریس کی ٹکٹ پر جیت درج کرنے والے یلاپور کے رکن اسمبلی شیورام ہیبار نے پارٹی کی جانب سے جاری کردہ ٹیپ کو جعلی قرار دیاہے۔ اور اس بات کو غلط قرار دیا ہے کہ بی جے پی کی طرف سے انہیں رقم کی پیشکش کی گئی تھی اور وزارتی عہدہ دینے کا بھی ...

فتح کے جشن میں پاکستان نواز نعرے بازی کا جھوٹا ویڈیو۔ مینگلور پولس اسٹیشن میں کانگریس کی طرف سے شکایت درج

بی جے پی کے وزیراعلیٰ ایڈی یورپا کے استعفیٰ دینے اور کانگریس جے ڈی ایس محاذ کے لئے حکومت سازی کی راہ ہموار ہونے کی خوشی میں منگلور و کے کانگریس دفتر میں جشن فتح منایاگیاتھا۔ لیکن اس تعلق سے ایک ویڈیو کلپ سوشیل میڈیا پر عام ہواتھا جس میں جشن کے دوران پاکستان نواز نعرے بازی ...

بھٹکل میں گائیوں سے بھری دو لاریوں پر حملے کے الزام میں گیارہ افراد گرفتار؛ کیاجانوروں کو بی جے پی لیڈر کے ڈیری فارم لےجایا جارہا تھا ؟

  تعلقہ کے مرڈیشور نیشنل ہائی وے پر کل رات ہوئی ہندو شدت پسند تنظیموں کے کارکنوں کی غنڈہ گردی کے واقعے کے بعد پولس متحرک ہوکر اب تک گیارہ لوگوں کو گرفتار کرنے میں کامیاب ہوگئی ہے، جبکہ دیگر حملہ آوروں کی تلاش جاری ہے۔