بھٹکل تعلقہ میں ڈینگو بخار کے معاملات میں اضافہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th July 2017, 12:50 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل ،17؍جولائی (ایس او نیوز) ان دنوں بھٹکل تعلقہ وبائی مرض ڈینگو بخارکے معاملات میں اضافہ ہوتا نظر آرہا ہے۔ اور اس بار دیگر مریضوں کے ساتھ ہیلتھ ایجوکیشن افیسر ہی اس بخار کی لپیٹ میں آنے اور منی پال اسپتال میں علاج کے لئے داخل ہونے کی بات پتہ چلی ہے۔

سال 2017میں بھٹکل تعلقہ میں اب تک ڈینگو کے 5معاملات سامنے آئے ہیں۔جن میں ہڈین علاقے کے منجو ناتھ رنگپّا نائک(۲۴سال)، مرڈیشور شیرانی کی سپریتا پرمیشور بھٹ(۲۰سال)،ماوین کوروے کریکال کے منجو ناتھ انّپا موگیر،اورسینئر ہیلتھ ایجوکیشن افیسر ایریّا نارائن دیواڈیگا(۵۷سال) شامل ہیں۔

محکمہ صحت عامہ کی طرف سے ہدایت جاری کی گئی ہے کہ اگرکسی کو بخار اور سردی زکام ہوتاہے تو اس صورت میں اسے معمولی سمجھ کربے پروائی نہ کرتے ہوئے فوراً ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہیے اور مناسب علاج کروانا چاہیے۔اس کے علاوہ اپنے اطراف کے ماحول کو صاف ستھرا رکھنے کی خصوصی توجہ دینی چاہیے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کا معاملہ؛ بی جے پی لیڈرس گوند نائک اور کرشنا نائک سمیت چارگرفتار

 بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو ، توڑپھوڑ اور پولس عملہ پر حملہ کے تعلق سے پولس نے ایک بڑی کاروائی کرتے ہوئے بی جے پی لیڈر گوند نائک کو آج  گرفتار کرلیا ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق پولس  ہبلی کے ایک مکان سے تین لوگوں کو گرفتار کرنے میں کامیاب ہوئی ہے، جبکہ ایک سنگھ کا ...

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھراؤ اور توڑپھوڑ کے معاملے میں مزید 2گرفتار : گرفتاریوں کی تعداد بڑھ کر اب 9

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر ہوئے پتھراؤ اور توڑپھوڑ کے معاملے میں پولس نے مزید دو لوگوں کو گرفتارکرلیا ہے، جس کے ساتھ ہی اس معاملہ میں گرفتارشدگان کی تعداد اب 9ہوگئی ہے۔

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کا معاملہ؛ایم پی شوبھا کرندلاجے نے پولس سے کہا؛ بی جے پی کارکنان کی گرفتاری بند کی جائے؛ لیڈران کو گرفتار کرنے کی صورت میں دی دھمکی

بی جے پی لیڈر شوبھا کرندلاجے نے آج منگل کو بھٹکل ٹائون پولس تھانہ پہنچ کر بھٹکل ڈی وائی ایس پی سے نہایت ترش لہجہ میں کہا کہ وہ بی جے پی کارکنان کی گرفتاری کا سلسلہ فوری طور پر بند کرے۔ شوبھا نے کہا کہ پولس نے اب تک 9 لوگوں کو گرفتار کیا ہے، اگر پولس مزید لوگوں کو گرفتار کرتی ہے تو ...