اسٹیو فوربس کی نظر میں نوٹ بندی عوام کی جائیداد پر غیر اخلاقی ڈاکہ ہے

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 24th December 2016, 3:29 AM | ملکی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

نئی دہلی 23/دسمبر (ایس او نیوز/ ایجنسی)نوٹ بندی کو غیر اخلاقی مہم قرار دیتے ہوئے مشہور ومعروف انگریزی میگرئین فوربس کے چیف ایڈیٹر اسٹیو فوربس نے اسے عوامی جائیداد پرڈاکہ قرار دیا ہے۔ ان کے مطابق  نہ انسانی فطرت کبھی بدلی ہے، نہ بدلے گی، اور غلط کام کرنے والے لوگ غلط کام کرنے کے لئے راستہ ڈھونڈ ہی لیتے ہیں، اس لئے بھارت کی حکومت کی طرف سے کرپشن، کالے دھن اور دہشت گردی کے سائے سے نجات حاصل کرنے کے لئے اٹھائے گئے نوٹ بندی کے قدم سے کچھ حاصل نہیں ہو پائے گا.انہوں نے اپنے اداریہ میں لکھا ہے کہ سیارے کے آباد ہونے کے وقت سے ہی انسانی فطرت نہیں بدلی ہے. غلط کام کرنے والے کوئی نہ کوئی راستہ نکال ہی لیتے ہیں. دہشت گرد صرف کرنسی بدل دینے کی وجہ سے اپنی بری حرکتیں بند نہیں کر دیں گے، اور دولت کا ڈیجیٹائیزیشن ہونے میں کافی وقت لگنے والا ہے، وہ بھی اس صورت حال میں، جب مفت مارکیٹ کی اجازت دے دی جائے گی.

اسٹیو فوربس کے مطابق ٹیکس چوری سے بچنے کا سب سے آسان حل یہ ہے کہ عوام پر یکساں ٹیکس شرح، یا کم از کم بالکل سادہ اور کم شرح والی ٹیکس نظام نافذ کی جائے، جس کے نتیجے میں عوام کو ٹیکس چوری کرنا ہی بیکار لگنے لگے. سٹیو کے مطابق قانونی طور پر کاروبار کرنے میں آسانی اور عوام کو سہولت دی جائے تو بیشتر لوگ صحیح کاروبار کریں گے.

اسٹیو فوربس کا کہنا ہے کہ بھارت اس وقت نقدی کے خلاف حکومتوں کے دماغ میں چڑھی خواہشات کی سب سے زیادہ انتہائی مثال ہے. بہت سے ملک بڑی رقم کے نوٹوں کو بند کرنے کی سمت میں آگے بڑھ رہے ہیں، اور وہی دلیل دے رہے ہیں جو ہندوستان کی حکومت نے دیئے ہیں، لیکن یہ سمجھنے میں کوئی چوک نہیں ہونی چاہئے کہ اس کا حقیقی مقصد کیا ہے - آپ کی پرائیویسی پر حملہ کرنا اور آپ کی زندگی پر حکومت کا زیادہ سے زیادہ کنٹرول مسلط کرنا ہے۔

اسٹیو فوربس کے مطابق، ہندوستانی حکومت کی یہ سخت کارروائی غیر اخلاقی بھی ہے، کیونکہ کرنسی وہ چیز ہے جو لوگوں کی طرف سے پیدا ہوتی اشیاء کی نمائندگی کرتی ہے. کرنسی بالکل ویسا ہی وعدہ ہوتی ہے، جیسا کوئی سینما یا پروگرام میں شامل ٹکٹ ہوتی ہے، جو آپ کو سیٹ ملنے کی ضمانت دیتی ہے. اس طرح کے وسائل حکومتیں نہیں، لوگ پیدا کرتے ہیں. جو بھارت نے کیا ہے، وہ لوگوں کی جائیداد کی بہت بڑے پیمانے پر چوری ہے جو جمہوری طریقے سے منتخب حکومت کی طرف سے کئے گئے ہونے کی وجہ سے زیادہ چونکاتی ہے. ایسا کچھ وینیزوئیلا جیسے ملک میں ہوتا تو شاید اتنی حیرانی نہیں ہوتی. اور اس سے بھی کوئی حیرانی نہیں ہوتی کہ حکومت اس حقیقت کو چھپا رہی ہے کہ اس ایک قدم سے ایک ہی جھٹکے میں دسیوں ارب ڈالر کا نقصان ہونے جا رہا ہے.

اب بھارت کو گلوبل پائور ہائوس بننے کے لئے جو کام یقینی طور پر  کرنا ہے وہ   یہ ہے کہ حکومت انکم اور بزنس ٹیکس کی شرح کو کم کرے، اور پورے ٹیکس ڈھانچے کو آسان بنائے، روپے کو سوئس فرینک کی طرح طاقتور کرنسی میں تبدیل کرے اور قوانین کو کم سے کم کرے، تاکہ عوام کو بغیر کسی لاگت کےکچھ ہی منٹوں میں نیا کاروبار شروع کرنے میں آسانی ہو۔

خیال رہے کہ فوربس ایک ہفتہ وار‘ امریکی بزنس میگزین ہے-اس کے مضامین عمو ما صنعت اورتجارت سے متعلق ہو تے ہیں- فوربس اپنی رینکنگز کی وجہ سے خاصا مشہور ہے-اس کا ہیڈ کوارٹر نیو یارک میں ہےاور اس کا موجودہ مدیر اسٹیو فوربس ہے

ایک نظر اس پر بھی

راجستھان میں اس بار 158 کروڑ پتی ممبر اسمبلی

راجستھان کی 15 ویں اسمبلی کے لئے نو منتخب 199 اراکین اسمبلی میں سے 158 کروڑ پتی ہیں۔ سال 2013 کے گزشتہ اسمبلی انتخابات میں یہ تعداد 145 تھی۔ ایسوسی ایشن آف ڈیموکریٹک ریفارمس (اے ڈی آر) کی رپورٹ کے مطابق کانگریس کے 99 میں سے 82 ممبران اسمبلی، بی جے پی کے 73 میں سے 58 ممبران اسمبلی، بی ایس پی ...

رافیل ڈیل پر فیصلے میں مبنی بر حقائق ’ اصلاح ‘کی مانگ کو لے عدلیہ پہنچی مرکزی حکومت

رافیل ڈیل پر سپریم کورٹ کے فیصلہ اور اس پر مچے سیاسی گھمسان کے درمیان مرکزی حکومت ایک بار پھر عدالت عظمی پہنچی ہے۔حکومت نے عرضی داخل کرکے رافیل ڈیل پر دیئے گئے فیصلے میں مبنی بر حقائق اصلاح کا مطالبہ کیا ہے۔ مرکز نے سپریم کورٹ سے فیصلے کے اس پیراگراف میں ترمیم کا مطالبہ کیا ہے، ...

پلوامہ تصادم: آخر ایک فوجی نے جنگجوئیت کیوں اختیار کی ؟ ظہور ٹھوکرفوجی کیمپ سے فرار ہو کرجنگجوئیت اختیار کی تھی

جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع میں ہفتہ کو ایک تصادم میں سکیورٹی فورسز نے تین دہشت گردوں کو مار گرایا۔ اس تصادم میں مارے گئے دہشت گردوں میں ظہور احمد ٹھوکر بھی ہے، جو گزشتہ سال جولائی میں فوج کے کیمپ سے فرار ہو کر دہشت گرد تنظیم میں شامل ہو گیا تھا۔بتایا جا رہا ہے کہ مقامی باشندے ...

چھتیس گڑھ میں کون بنے گا وزیر اعلی؟ راہل گاندھی نے کیا اشارہ

پی اور راجستھان میں سی ایم کا اعلان کرنے کے بعد چھتیس گڑھ کے وزیر اعلی کے عہدے پر کانگریس میں پیچ پھنسا ہوا ہے۔ کانگریس صدر راہل گاندھی نے پی اور راجستھان کی طرح آج بھی ٹویٹر پر چھتیس گڑھ کے تمام سی ایم دعویداروں کے ساتھ تصویر تو پوسٹ کر دی ہے لیکن وزیر اعلی کون ہوگا اس پر پارٹی ...

دبئی: پکڑا گیا چھوٹا شکیل کا بھائی،ہندوستان حراست کی کوشش میں 

انڈر ورلڈ ڈان چھوٹا شکیل کے بھائی انور کو ابو ظہبی کے ایئر پورٹ پر کسٹم پولیس نے جمعہ کو گرفتار کر لیا ہے۔ انور کے پاس پاکستان کا پاسپورٹ ہے۔گرفتاری کے بعد بھارتی سفارت خانہ چھوٹا شکیل کے بھائی انور کو اپنے گرفت میں لینے کی کوششوں میں مصروف ہے جبکہ پاکستانی سفارت خانہ بھی اسے ...

بلند شہر تشدد : ملزم کی تصویر میں عام شہری، یوپی پولیس کی فضیحت 

بلند شہر تشدد ومیں ملزمان کی تصویر جاری کردی گئی ہے ۔18 ملزمان کی تصویر میں عمداً غلطی کے بعد یوپی پولیس کی کرکری ہو رہی ہے۔ دراصل ایک شخص نے یہ دعوی کیا ہے کہ ملزمان کی فہرست میں غلطی سے اس کی تصویر لگا دی گئی ہے۔ ابھی سٹی ایس پی نے کہا ہے کہ وہ معاملے کو دیکھ رہے ہیں اور تصویر غلط ...

بھٹکل میں آدھا تعلیمی سال گزرنے پر بھی ہائی اسکولوں کے طلبا میں نہیں ہوئی شو ز کی تقسیم  : رقم کا کیا ہوا ؟

آخر اس  نظام ،انتظام کو کیا کہیں ،سمجھ سے باہر ہے! تعلیمی سال 2018-2019نصف گزر کر دو تین مہینے میں سالانہ امتحان ہونے ہیں۔ اب تک بھٹکل کے سرکاری ہائی اسکولوں کو سرکاری شو بھاگیہ میسر نہیں ، نہ کوئی پوچھنے والا ہے نہ  سننے والا۔شاید یہی وجہ ہے کہ محکمہ تعلیم شو، ساکس کی تقسیم کا ...

سوشیل میڈیا اور ہماراسماج ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ (از: سید سالک برماور ندوی)

اکیسویں صدی کے ٹکنالوجی انقلاب نے دنیا کو گلوبل ویلیج بنادیا ہے۔ جدید دنیا کی حیرت انگیزترقیات کا کرشمہ ہے کہ مہینوں کا فاصلہ میلوں میں اورمیلوں کا،منٹوں میں جبکہ منٹ کامعاملہ اب سیکنڈ میں طےپاتا ہے۔

جیل میں بندہیرا گروپ کی ڈائریکٹر نوہیرانے فوٹو شاپ جعلسازی سے عوام کو دیا دھوکہ۔ گلف نیوز کا انکشاف

دبئی سے شائع ہونے والے کثیر الاشاعت انگریزی اخبار گلف نیوز نے ہیرا گولڈ کی ڈائرکٹر نوہیرا شیخ کی جعلسازی کا بھانڈہ پھوڑتے ہوئے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ    کس طرح اس نے فوٹو شاپ کا استعمال کرتے ہوئے بڑے بڑے ایوارڈ حاصل کرنے اور مشہور ومعروف شخصیات کے ساتھ اسٹیج پر جلوہ افروز ...

کہ اکبر نام لیتا ہے۔۔۔۔۔۔۔!ایم ودود ساجد

میری ایم جے اکبر سے کبھی ملاقات نہیں ہوئی۔میں جس وقت ویوز ٹائمز کا چیف ایڈیٹر تھا تو ان کے روزنامہ Asian Age کا دفتر جنوبی دہلی میں‘ہمارے دفتر کے قریب تھا۔ مجھے یاد ہے کہ جب وہ 2003/04 میں شاہی مہمان کے طورپرحج بیت اللہ سے واپس آئے تو انہوں نے مکہ کانفرنس کے تعلق سے ایک طویل مضمون تحریر ...