انکولہ انجمن ِاسلام کے انتظامیہ افسر کی حیثیت سے ڈی سی نے چارج سنبھالا

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 14th February 2018, 7:09 PM | ساحلی خبریں |

انکولہ:14/ فروری (ایس اؤنیوز)انجمن ِ اسلام انکولہ کے انتظامیہ افسرکی حیثیت سے اترکنڑا ضلع کے ڈپٹی کمشنر ایس ایس نکول نے پیر کو اپنا عہدہ سنبھالا۔ ہائی کورٹ حکم کے مطابق ڈی سی نے انتظامیہ افسر اختر جے سید سے چارج لیا۔

انجمن ِ اسلام انکولہ میں چل رہے انتخابی مسائل کے پیش نظر ریاستی وقف بورڈ نے 2015سے انجمن کی نگرانی کے لئے انتظامیہ افسر نامزد کرتا رہاہے۔ اس سے قبل جتنےمیں انتظامیہ افسران رہے ہیں وہ سب انتخابات منعقد کرانےمیں ناکام رہنے کی شکایت لے کر انجمن کے ممبران میں سے 4ممبران نے ہائی کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا۔ جن کی شکایت پر سماعت کرتے ہوئے ہائی کورٹ نے 2018-2-7کو فیصلہ صادر کرتے ہوئے اترکنڑا ضلع ڈی سی کو حکم دیا تھا کہ انجمن اسلام انکولہ کے لئے انتخابات منعقد کریں۔ جس کی بنیاد پر ڈی سی نے انتظامیہ افسر کا عہدہ سنبھالا ہے۔ اس موقع پر ضلع وقف افسر سونور، تحصیلدار وویک شنئی، سی پی آئی پرمود کمار، پی ایس آئی شری دھر، ضلع وقف ممبر نواز شیخ اور ڈاکٹر عرفان پیرزادے سمیت کئی لوگ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کیخلاف کانگریس کا جاری کردہ ٹیپ جعلی، کرناٹک کانگریس رکن اسمبلی کابیان، کانگریس پریشان 

بی جے پی کے خلاف کانگریس کے ایک جاری کردہ ٹیپ سے کانگریس کی ٹکٹ پر جیت درج کرنے والے یلاپور کے رکن اسمبلی شیورام ہیبار نے پارٹی کی جانب سے جاری کردہ ٹیپ کو جعلی قرار دیاہے۔ اور اس بات کو غلط قرار دیا ہے کہ بی جے پی کی طرف سے انہیں رقم کی پیشکش کی گئی تھی اور وزارتی عہدہ دینے کا بھی ...

فتح کے جشن میں پاکستان نواز نعرے بازی کا جھوٹا ویڈیو۔ مینگلور پولس اسٹیشن میں کانگریس کی طرف سے شکایت درج

بی جے پی کے وزیراعلیٰ ایڈی یورپا کے استعفیٰ دینے اور کانگریس جے ڈی ایس محاذ کے لئے حکومت سازی کی راہ ہموار ہونے کی خوشی میں منگلور و کے کانگریس دفتر میں جشن فتح منایاگیاتھا۔ لیکن اس تعلق سے ایک ویڈیو کلپ سوشیل میڈیا پر عام ہواتھا جس میں جشن کے دوران پاکستان نواز نعرے بازی ...

بھٹکل میں گائیوں سے بھری دو لاریوں پر حملے کے الزام میں گیارہ افراد گرفتار؛ کیاجانوروں کو بی جے پی لیڈر کے ڈیری فارم لےجایا جارہا تھا ؟

  تعلقہ کے مرڈیشور نیشنل ہائی وے پر کل رات ہوئی ہندو شدت پسند تنظیموں کے کارکنوں کی غنڈہ گردی کے واقعے کے بعد پولس متحرک ہوکر اب تک گیارہ لوگوں کو گرفتار کرنے میں کامیاب ہوگئی ہے، جبکہ دیگر حملہ آوروں کی تلاش جاری ہے۔