ڈانڈیلی میں ایڈوکیٹ اجیت نائک قتل معاملہ؛ ایک اورملزم گرفتار

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 5th August 2018, 2:15 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ڈانڈیلی5؍اگست (ایس او نیوز) ڈانڈیلی کے سینئر ایڈوکیٹ اجیت نائک کے قتل میں کلیدی ملزمین میں سے ایک اور شخص کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے جس کی شناخت ونائیک کیمپنا کرننگ کے طور پر کی گئی ہے۔

ملزم کرننگ کو گرفتاری کے بعد پولیس نے عدالت کے روبرو پیش کرتے ہوئے مزید تحقیقات کے ملزم کو پولیس کسٹڈی میں دینے کی درخواست کی جسے عدالت نے قبول کیا اور 8اگست تک کے لئے پولیس کسٹڈی میں دیا گیا۔ونائیک کرننگ ضلع میں مختلف مقامات پر خدمات انجام دے کر ریٹائر ہونے والے ایک پی ایس آئی کا بیٹا ہے۔ونائیک کی شادی گزشتہ دو تین سال قبل ہوئی تھی اور اس نے ڈانڈیلی ٹاؤن شپ میں رہائش کررکھی تھی۔ونائیک اپنے آپ کو امبیڈکر سینا کا ضلعی نائب صدراوربھیم آرمی کا ریاستی نائب صدر کہتا تھا۔پتہ چلا ہے کہ اس نے اجیت نائک قتل کے کلید ی ملزم پانڈورنگا عرف دیپک عرف چپاتے کو کئی معاملات میں تعاون کیا کرتاتھا اور اجیت نائک کے قتل پر اکسانے میں بھی اس کا ہاتھ ہے۔ماؤلنگی زمین کے معاملات میں بھی غیر ضروری طورپر مداخلت کرتے ہوئے کرننگ نے پانڈو رنگا کامبلے کی مدد کرنے کی بات بھی کہی تھی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ پانڈورنگاکامبلے نے اجیت نائک کے قتل کے بعد فرار ہوکر سیدھے ونائیک کرننگ کے گھر پہنچا ۔ وہاں پر اس نے اپنے خون آلود کپڑے اتارے اور دوسرے کپڑے پہن کر وہاں سے فرار ہوگیا۔اس لئے مزید تفصیلات جاننے اور کچھ چیزیں برآمد کرنے کے لئے پولیس ونائیک کرننگ سے سختی کے ساتھ پوچھ تاچھ کررہی ہے ۔پولیس کے بیان کے مطابق ونائیک کرننگ ایک ہسٹری شیٹر غنڈہ ہے۔ ڈانڈیلی کے علاوہ ضلع شمالی کینرااور ریاست کے دوسرے شہروں میں بھی اس کے خلاف مجرمانہ سرگرمیوں کے کئی کیس درج ہیں۔اس سے پہلے بھی ماولنگی میں ہوئے ایک معاملے میں اسے ہلاکت خیز ہتھیار کے ساتھ پولیس نے گرفتار کیا تھا۔

اس کے علاوہ میسورو سے تعلق رکھنے والے ایک اور ملزم کے شامل ہونے کی بات بھی پولیس کو پتہ چلی ہے اور ڈانڈیلی پولیس کی ایک ٹیم نے میسورو پہنچ کر وہاں کی پولیس کی مدد سے اس ملزم کو گرفتار کرنے کے لئے جال بچھایا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میونسپل پارک کی تجدیدکاری میں بدعنوانی کا الزام۔ ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم

بھٹکل بلدیہ کے حدود میں بندر روڈ پر واقع سردار ولبھ بھائی پٹیل پارک کی تجدید کاری میں بدعنوانی کا الزام لگاتے ہوئے  آسارکیری کے عوام  نے بلدیہ انجینئر کو پارک میں طلب کرکے ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم دیا جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ یہاں ہورہی بدعنوانی کی تحقیقات کروائی جائے۔

کاروار کے ہوم گارڈس دفتر اورکیگا شہری تحفظ مرکز میں یوم ِآزادی کی خصوصی تقریب

شہر میں ہوم گارڈس دفتر میں 72واں یوم ِ آزادی کا جشن پرچم کشائی کے ساتھ منایاگیا ۔ ضلعی آفیسر دیپک گوکرن  نے جھنڈا لہرانے کے بعد خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہمیں یہ آزادی کئی ایک مہان ہستیوں کی قربانی کے بعد ملی ہے۔ یہ ملک تکثریت میں وحدت پیش کرنے والا ایک انوکھا ملک ہے۔انہوں نے کہاکہ ...

کاروار : ضلع پنچایت اورمیڈیکل کالج میں یوم ِ آزادی کا جشن :ایمانداری سے اپنے فرائض کو انجام دینا  سچی دیش بھگتی  

اترکنڑا ضلع کے مرکزی مقام کاروار میں اترکنڑا ضلع پنچایت اور میڈیکل سائنس سنٹر میں  جوش و خروش کے ساتھ یوم آزادی کا جشن منایا ۔ جس کی مختصر تفصیل ذیل میں دی جارہی ہے۔ ...

بھٹکل میں یوم آزادی کا جشن پورے جوش وخروش کے ساتھ منایا گیا؛ تعلقہ انتظامیہ کی جانب سے اسسٹنٹ کمشنر نے لہرایا جھنڈا

ہر سال کی طرح امسال بھی بھٹکل میں پورے جوش و خروش کے ساتھ  یوم آزادی کی تقریب منائی گئی اور تعلقہ انتظامیہ سمیت مختلف سرکاری اور غیر سرکاری اداروں سمیت تعلیمی اداروں میں بھی  ترنگا جھنڈا لہرایا گیا۔

کورگ میں بارش کی بھاری تباہی ، تین اموات،زمین کھسکنے کے متعدد واقعات 

جنوبی ہند کا کشمیر کہلانے والے ریاست کے کورگ ضلع میں بارش نے زبردست تباہی مچادی ہے۔ ایک طرف بارش کا سلسلہ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے تو دوسری طرف پڑوسی ریاست کیرلا میں طوفانی بارش کے سبب وہاں کی ندیوں کا پانی بھی کرناٹک کی طرف بہادیا گیا ہے،

مہادائی ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کرنے ریاستی حکومت تیار

ریاستی وزیر برائے آبی وسائل ڈی کے شیوکمار نے کہاکہ شمالی کرناٹک کے بعض اضلاع کو پینے کے پانی کی فراہمی کا واحد ذریعہ مہادائی کے پانی کی تقسیم کے سلسلے میں حال ہی میں ٹریبونل نے جو فیصلہ صادر کیا ہے ریاستی حکومت اس کا سپریم کورٹ میں چیلنج کرے گی۔

بھٹکل میونسپل پارک کی تجدیدکاری میں بدعنوانی کا الزام۔ ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم

بھٹکل بلدیہ کے حدود میں بندر روڈ پر واقع سردار ولبھ بھائی پٹیل پارک کی تجدید کاری میں بدعنوانی کا الزام لگاتے ہوئے  آسارکیری کے عوام  نے بلدیہ انجینئر کو پارک میں طلب کرکے ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم دیا جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ یہاں ہورہی بدعنوانی کی تحقیقات کروائی جائے۔