سی وی سی کو سی بی آئی افسر راکیش استھانہ کی صفائی ،جس وقت رشوت لینے کامعاملہ ہے، اس وقت تو میں لندن میں تھا

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 10th November 2018, 11:19 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:10/نومبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)سی بی آئی کے ڈائریکٹر آلوک ورمااور اسپیشل ڈائریکٹر راکیش استھانہ پر لگے بدعنوانی کے الزامات کی مرکزی ویجلنس کمیشن (سی وی سی)تحقیقات کر رہی ہے۔طلب کئے جانے پر دونوں افسران خود کے خلاف لگے الزامات کی صفائی دینے کے لئے کمیشن کے سامنے پیش ہوچکے ہیں۔اس کیس کی تحقیقات سے منسلک ذرائع نے بتایا کہ حیدرآباد کے تاجر ستیش سانا کی جس شکایت پر سی بی آئی نے راکیش استھانہ کے خلاف کیس درج کیا ہے، اس میں سانا کے بیانات پر معاملہ الجھتا دکھ رہاہے۔15اکتوبر کو سی بی آئی نے حیدرآباد کے ایک کاروباری سناستیش بابو سے 3کروڑ روپے رشوت لینے کے الزام میں اکتوبر کوایف آئی آر درج کی تھی۔شکایت کے مطابق یہ رقم دو بچولیوں منوج پرساد اور سومیش پرساد کے ذریعے دی گئی تھی تاکہ گوشت تاجر معین قریشی کے خلاف تحقیقات کو کمزور کیا جا سکے۔ستیش سنا نے کہا تھا کہ اس نے راکیش استھاناجیسے دکھنے والے شخص کو تین کروڑ روپے دیئے تھے۔وہیں گزشتہ 24اگست کو راکیش استھانہ نے کابینہ سکریٹری کو دی گئی اپنی شکایت میں سی بی آئی چیف آلوک ورما پر ہی الزام لگایا تھا کہ انہوں نے کسی معاملے میں پوچھ گچھ سے راحت دلانے کیلئے تاجر ستیش سانا سے رشوت کے طور پر دو کروڑ روپے لیے۔ ذرائع نے بتایا کہ راکیش استھانہ نے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ جس مدت میں رشوت کو لے کر دلالوں سے رابطہ، بات چیت اور لین دین کی بات کہی گئی، اس وقت وہ لندن میں تھے۔ستیش سانا کی طرف سے درج کردہ ایف آر میں کہاگیا ہے کہ رشوت کولے کر 2دسمبر کوبات چیت ہوئی اور13 دسمبر 2017کو رشوت کی رقم دی گئی۔اس پر راکیش استھانہ نے کہا کہ وہ اس وقت مفروروجے مالیا کے مقدمے سے متعلق کیس میں لندن میں تھے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

ای وی ایم تنازعہ: کپل سبل نے کہا 'ذاتی حیثیت سے گیا تھا لندن، کانگریس کا کوئی لینا دینا نہیں'۔

  کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نے بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی)کےلیڈر اوروزیرقانون روی شنکر پرساد کےان الزامات کو منگل کو پوری طرح سے بے بنیاد بتاکہ لندن میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم )سے متعلق پریس کانفرنس کا اہتمام کانگریس نے کیاتھا اورواضح کیاکہ وہ اس میں ذاتی حیثیت ...

مدارس کو اگربند نہیں کیا گیا توآئی ایس آئی ایس حامی ہوجائیں گے مسلم بچے، وسیم رضوی نے وزیراعظم کو خط لکھ کرکیا مطالبہ

اپنے متنازعہ بیانات  کے سبب اکثرسرخیوں میں رہنے والے اترپردیش شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی نے وزیراعظم نریندرمودی کوخط لکھ کربنیادی سطح تک کے سبھی مدارس کوبند کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

اپنے کسی بھی ممبر اسمبلی کو لوک سبھا انتخابات میں نہیں اتارے گی عام آدمی پارٹی

عام آدمی پارٹی آئندہ لوک سبھا انتخابات میں اپنے موجودہ  ممبراسمبلی اور وزرا کو ٹکٹ نہیں دے گی۔ عآپ کے سینئر لیڈر گوپال رائے نے منگل کو یہ جانکاری دی ہے۔ عام آدمی پارٹی کی دہلی یونٹ کے صدر رائے نے ساتھ ہی کہا کہ انتخابات کی اطلاع جاری ہونے سے کافی پہلےہی دہلی م پنجاب اور ہریانہ ...

الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں پر چندرابابوکوشبہات

الکٹرانک ووٹنگ مشینوں (ای وی ایمس)کے استعمال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اے پی کے وزیراعلی و تلگودیشم پارٹی کے قومی صدر این چندرابابونائیڈو نے کہا کہ ان مشینوں میں الٹ پھیر کے کئی ثبوت پائے گئے ہیں