نئے تعلقہ جات کے قیام کو عملی شکل دینے اسمبلی میں مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th July 2018, 10:48 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو10؍جولائی(ایس او نیوز) ریاست میں 50نئے تعلقہ جات کے قیام کا اعلان صرف اعلان بن کر رہ گیا ہے ،کسی بھی نئے تعلقہ کے قیام کے لئے عملی طور پر کوئی قدم اٹھایا نہیں گیا۔ یہ موضوع آج ریاستی اسمبلی میں کچھ دیر موضوع بحث بنارہا۔ وقفۂ سوالات میں بی جے پی کے سنیل کمار نے یہ سوال اٹھایا کہ ان نئے تعلقہ جات میں انتظامیہ کب وجود میں آئے گا اور یہاں پر منی ودھان سودھا کی تعمیر کب ہوگی۔ اس مرحلے میں وزیر مالگذاری آر وی دیش پانڈے نے جواب دیا کہ متعدد تعلقہ جات میں منی ودھان سودھا کی تعمیر کے لئے جگہ کی نشاندہی کی گئی ہے اور اس کا تخمینہ تیار کرکے ریاستی حکومت کو روانہ کرنے کی ہدایت بھی دی گئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ منی ودھان سودھا کی تعمیر کو انتظامی منظوری کے فوراً بعد اس کی تعمیر شروع کردی جائے گی۔ تعلقہ جات میں انتظامیہ کی شروعات کے لئے ہر تعلق کو دس لاکھ روپیوں کا گرانٹ متعلقہ ضلع کے ڈپٹی کمشنر کے ذریعے جاری کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ جو نئے تعلقہ جات وجود میں آئے ہیں وہاں کے اراکین اسمبلی کو چاہئے کہ انتظامیہ کے قیام میں جو دشواریاں حائل ہیں ان سے حکومت کو باخبر کرائیں اس مرحلے میں اسپیکر رمیش کمار نے بھی اراکین اسمبلی کو ہدایت دی کہ نئے تعلقہ جات کے قیام میں اگر کسی طرح کی پریشانی ہے تو انہیں آگاہ کرائیں وہ حکومت تک اس پریشانی کو پہنچائیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

شرورمٹھ کے سوامی کی موت کثرت شراب نوشی اور ناجائز تعلقات کا نتیجہ ؟معاملہ کی تحقیقات اور جانچ کیلئے 7ٹیمیں تشکیل 

اڈپی شرورمٹھ کے سوامی لکشمی ورتیرتھ سوامی جی کی مشتبہ حالات میں ہوئی موت پر انہیں قتل کیے جانے کاشبہ ظاہر کیاگیاتھا جس کے نتیجہ میں اڈپی ضلع ایس پی نے اس معاملہ کی ہر زاویہ سے جانچ کے لیے پولیس کی 7ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں ۔ شرور علاقہ میں یہ افواہیں بھی اڑائی جارہی ہیں کہ سوامی ...

کورگ میں ویڈیو بناکر مرکز توجہ بننے والے،عبدالفتح سے کمار سوامی کی ملاقات

کورگ میں موسلادھار بارش اور سیلاب کی صورتحال کے دوران وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی کو متوجہ کرانے کے لئے سوشیل میڈیا پر آنے والے ویڈیو میں جو بچہ وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی کو صورتحال پر متوجہ کروارہاتھا، آج کورگ میں وزیراعلیٰ کمار سوامی نے اس بچے عبدالفتح سے ملاقات کی۔