کھرگے نے لوک پال سلیکشن کمیٹی کی میٹنگ کا پھر کیا بائیکاٹ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th March 2019, 8:57 PM | ملکی خبریں | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 15 مارچ(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) کانگریس کے سینئر لیڈر ملکا ارجن کھرگے نے لوک پال کے انتخاب کے لئے کمیٹی کے اجلاس میں حصہ لینے کے لئے خصوصی دعوت رکن کے طور پر بلائے جانے کی پھر مخالفت کی ہے۔انہوں نے جمعہ کو مجوزہ لوک پال سلیکشن کمیٹی کے اجلاس کا بائیکاٹ کیا ہے۔خصوصی مدعو رکن کے طور پر اجلاس میں بلائے جانے کی مخالفت کرتے ہوئے کھڑگے پہلے بھی کئی بار اس اجلاس کا بائیکاٹ کر چکے ہیں۔لوک سبھا میں کانگریس کے لیڈر نے وزیر اعظم نریندر مودی کو لکھے گئے خط میں کہا کہ لوک پال ایکٹ 2013 کی دفعہ چار میں خصوصی مدعو رکن کے لوک پال سلیکشن کمیٹی کی حصہ ہونے یا اس میٹنگ میں شامل ہونے کا کوئی قانون نہیں ہے۔انہوں نے الزام لگایا کہ 2014 میں حکمراں ہونے کے بعد سے اس حکومت نے لوک پال قانون میں ایسی ترمیم کرنے کی کوئی کوشش نہیں کی جس سے اپوزیشن کی سب سے بڑی پارٹی کا لیڈر منتخب کمیٹی کے رکن کے طور پر میٹنگ میں شامل ہو سکے۔اس سے پہلے گزشتہ سال ستمبر میں کھڑگے نے لوک پال کے انتخاب کے لئے کمیٹی کے اجلاس میں حصہ لینے سے انکار کردیا تھا۔ان کا کہنا تھا وہ اس وقت تک اجلاس میں شامل نہیں ہوں گے، جب تک انہیں خصوصی مدعو رکن کے بجائے مکمل رکن کا درجہ نہیں دیا جاتا۔کھڑگے نے وزیر اعظم نریندر مودی کو دو ستمبر 2018 کو لکھے اپنے پانچویں خط میں کہا ہے، حکومت مسلسل مجھے سلیکشن کمیٹی کے لئے بطور خصوصی مدعو رکن بلا رہی ہے جبکہ وہ اس حقیقت سے آگاہ ہے کہ لوک پال ایکٹ، 2013 کی دفعہ چار کے تحت ایسا کوئی قانون نہیں ہے۔

کھرگے اس سلسلے میں گزشتہ سال 28 فروری، 10 اپریل، 18 جولائی اور 18 اگست کو بھی وزیر اعظم کو خط لکھا تھا۔کانگریس لیڈر وزیر اعظم کو لکھے خطوط میں کہہ چکے ہیں کہ عمل میں شرکت، رائے درج کرانے اور ووٹنگ کے حقوق بغیر خصوصی مدعو رکن کے طور پر موجود ہونے کی اس دعوت کو قبول کرنا لوک پال ایکٹ کی خلاف ورزی ہوگی۔انہوں نے کہاکہ اس وجہ سے مجھے سلیکشن کمیٹی کے اجلاس میں موجود ہونے کی دعوت کو باعزت مسترد کرنے پر مجبور ہونا پڑا ہے،میں اس اجلاس میں اس وقت تک حصہ نہیں لوں گا، جب تک لوک پال ایکٹ 2013 میں سب سے بڑے اپوزیشن پارٹی کے لیڈر کو مکمل رکن کا درجہ نہیں دیا جاتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہندو لیڈر سورج نائک سونی نے اننت کمار ہیگڈے کو کہا،مودی حکومت کا داغدار وزیر؛ اُس کی مخالفت میں کام کرنے کے لئے نوجوانوں کی ٹیم تیار

ضلع شمالی کینرا میں ایک نوجوان ہندو لیڈر کے طور پر اپنی پہچان رکھنے والے کمٹہ کے سورج نائک سونی نے اخباری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ’’ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں چل رہی مرکزی حکومت میں اننت کمار ہیگڈے کی حیثیت ایک داغداروزیر کی ہے۔ اور ایسا لگتا ہے کہ انہیں ...

کرناٹک میں نوٹیفکیشن کے پہلے دن 6؍امیداروں کی نامزدگیاں داخل 

ریاست میں لوک سبھا الیکشن کے پہلے مرحلہ میں 14؍سیٹوں پر 18؍اپریل کو ہونے والے الیکشن کے لئے پرچہ نامزدگی کرنے کا آغاز ہوگیا ۔ پہلے دن چار حلقوں میں6؍ امیدواروں کی جانب سے 11؍ مزدگیاں داخل کئیں۔ یہ اطلاع ریاستی الیکشن افسر سنجیو کمار نے دی۔

بنگلورو کے تینوں پارلیمانی حلقوں میں ڈی سی پیز کی زیرنگرانی سخت بندوست لائسنس یافتہ 7؍ہزار ہتھیارات تحویل میں :پولیس کمشنر ٹی۔ سنیل کمار

پولیس کمشنر ٹی۔ سنیل کمار نے بتایا کہ بنگلور سنٹرل ،بنگلور نارتھ اور بنگلور ساؤتھ لوک سبھا حلقوں میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے لئے ڈپٹی کمشنر آف پولیس (ڈی سی پی) سطح کے پولیس افسروں کی نگرانی میں پولیس کا سخت بندوبست کیاگیا ہے۔