آپریشن کمل کے جواب میں آپریشن ہاتھ بھی ہوسکتا : بیلور گوپال کرشنا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th December 2018, 10:35 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،6؍دسمبر(ایس او نیوز) ریاستی حکومت کو غیر مستحکم کرنے کے لئے آپریشن کمل کرنے بی جے پی کی کوئی بھی کوشش کامیاب ہونے نہیں دی جائے گی، اگر بی جے پی ان حماقتوں سے باز نہیں آئی تو کانگریس کی طرف سے بھی بی جے پی اراکین اسمبلی کو ورغلاکر اپنی طرف کرنے کے لئے آپریشن ہاتھ شروع کردیا جائے گا۔ یہ بات بی جے پی سے کانگریس میں شامل ہونے والے سابق رکن اسمبلی بیلور گوپال کرشنا نے کہی۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ مرکزی وزیر پرکاش جاؤڈیکر کی طرف سے گزشتہ دنوں آپریشن کمل کے متعلق جو بیان دیاگیا تھا وہ اپنی جگہ درست ہوسکتا ہے۔ اگر بی جے پی نے آپریشن کمل آگے بڑھایا تو اسے خود بھی اپنے اراکین اسمبلی سے ہاتھ دھونا پڑ سکتا ہے۔ بیلور گوپال کرشنا نے کہاکہ حالیہ لوک سبھا اور اسمبلی کے ضمنی انتخابات میں ریاستی عوام نے بی جے پی کا جو حال کیا ہے اسے دیکھتے ہوئے کسی رکن اسمبلی کو یہ جرأت نہیں ہورہی ہے کہ وہ اپنی سیٹ گنواکر ضمنی انتخابات کا سامنا کرے۔ سب کو یہی خوف لاحق ہے کہ ضمنی انتخاب مسلط کرنے پر ان کی سیٹ جابھی سکتی ہے۔اسی لئے بارہا آپریشن کمل کا ہوا کھڑا کرکے بی جے پی حکومت کے استحکام میں رکاوٹ کھڑی کرنے کی کوشش نہ کرے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ریاست کی کانگریس جے ڈی ایس مخلوط حکومت اپنی پانچ سالہ مدت پوری کرے گی اور کسی بھی طرح کا آپریشن کمل حکومت کو کمزور نہیں کرسکے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کی بھاری اکثریت کے ساتھ جیت

مسلمانوں کے خلاف ہمیشہ اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کو اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اترکنڑا لوک سبھا حلقے کے بی جے پی اُمیدوار اننت کمار ہیگڈے جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک اسلام رہے گا دہشت گردی رہے گی،اسی طرح انہوں نے  دستور کی ...

سدانندگوڈا، پربلاد جوشی، سریش انگڑی، شیوکمار اداسی مرکزی وزارت کی دوڑ میں ایڈی یورپا، شوبھا کے حق میں، نرملا سیتارامن کونیااہم قلمدان ملنے کی توقع

مرکزی وزیر برائے اسٹاٹسٹکس اور پروگرام اپلی منٹیشن، ڈی وی سدانندگوڈا،ہبلی- دھارواڈ لوک سبھا رکن پربلاد جوشی،بلگام سے رکن پارلیمان سریش انگڑی اور ہاویری رکن پارلیمان شیوکمار اداسی اب کرناٹک سے مرکزی وزارت کے لئے دوڑ میں سب سے آگے ہیں -

ایچ کے پاٹل نے راہل گاندھی کو بھیجا استعفیٰ

ریاست میں کانگریس کے تشہیری مہم کمیٹی کے صدر ایچ کے پاٹل نے لوک سبھا انتخابات میں ریاست میں پارٹی کی شکست کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفی دینے کی پیشکش کی ہے۔

کرناٹک میں جے ڈی ایس مخلوط حکومت کو مستحکم رکھنے کانگریس خواہاں؛ تمام وزراء نے کیا کمارسوامی کی قیادت پر اظہار اعتماد

لوک سبھا انتخابات میں کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کی بدترین ناکامی کا آج وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی کی طرف سے طلب کی گئی غیر رسمی کابینہ میٹنگ میں جائزہ لیاگیا، اور طے کیاگیا کہ اس شکست سے مایوس ہوکر بیٹھنے کی بجائے آنے والے دنوں میں مخلوط حکومت کو اور متحرک اور مستحکم کرنے کے ...