ایم بی پاٹل کی راہل گاندھی سے ملاقات بے نتیجہ ، کانگریس لیڈر وں میں عدم اطمینان برقرار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th June 2018, 11:28 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،10؍جون(ایس او نیوز؍ایجنسی)  کرناٹک میں کانگریس ۔جنتادل (سیکولر) اتحادی حکومت میں وزیر کے عہدہ سے محروم غیرمطمئن کانگریسی لیڈر ایم بی پاٹل کی دہلی میں پارٹی کے قومی صدر راہل گاندھی سے ملاقات بے نتیجہ رہی اور وہ اتوار کو یہاں واپس آگئے۔ مسٹر پاٹل نے نامہ نگاروں سے کہاکہ مسٹر گاندھی کے ساتھ میٹنگ اطمینان بخش نہیں رہی ، حالانکہ انہیں کسی عہدہ کی چاہت نہیں ہے اور پارٹی میں انہیں کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ میری مسٹر گاندھی کے ساتھ بات چیت ہوئی۔ میں نے انہیں اپنے جذبات سے واقف کرایا ہے۔ میرا کانگریس چھوڑنے کا کوئی منصوبہ نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ رکن اسمبلی کے طورپر وہ اپنے حلقہ انتخاب کے عوام کی خدمت کرکے خوش رہیں گے اور اس بات کا کوئی سوال ہی نہیں اٹھتا کہ کوئی منتخب کانگریسی لیڈر ریاست میں پارٹی کو توڑنے کی کوشش کررہا ہے۔ انہوں نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کسی لیڈرکے ذریعہ بی جے پی میں شامل ہونے کے لئے رابطہ کئے جانے سے متعلق سوال کو مسترد کردیا۔

 

غیرمطمئن کانگریس لیڈر پاٹل نے کہاکہ میں نے کابینہ کے قیام کے تعلق سے مسٹر گاندھی سے بات چیت کی تھی اور انہیں یقین دلایا تھا کہ ریاست میں پارٹی کے کوساتھ کوئی مسئلہ نہیں ہے اور وہ ایک وفادار پارٹی کارکن بنے رہیں گے، لیکن میں ’سیکنڈ کلاس سٹی زن ‘ نہیں ہوں۔

اس درمیان سینئر کانگریس لیڈر اور سابق وزیراعلی سدا رمیا نے دعوی کیا کہ پارٹی میں کوئی عدم اطمینان نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ دو سال کے اندر وزرا کی مدت کار کم کی جاسکتی ہے اور جواچھا کام نہیں کریں گے ان کی جگہ پر اہل اراکین کو موقع ملے گا۔ انہوں نے کہاکہ میں نے وزیر کے لئے کسی کی سفارش نہیں کی ہے ۔ یہ پارٹی ہائی کمان کا فیصلہ ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کی بھاری اکثریت کے ساتھ جیت

مسلمانوں کے خلاف ہمیشہ اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کو اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اترکنڑا لوک سبھا حلقے کے بی جے پی اُمیدوار اننت کمار ہیگڈے جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک اسلام رہے گا دہشت گردی رہے گی،اسی طرح انہوں نے  دستور کی ...

سدانندگوڈا، پربلاد جوشی، سریش انگڑی، شیوکمار اداسی مرکزی وزارت کی دوڑ میں ایڈی یورپا، شوبھا کے حق میں، نرملا سیتارامن کونیااہم قلمدان ملنے کی توقع

مرکزی وزیر برائے اسٹاٹسٹکس اور پروگرام اپلی منٹیشن، ڈی وی سدانندگوڈا،ہبلی- دھارواڈ لوک سبھا رکن پربلاد جوشی،بلگام سے رکن پارلیمان سریش انگڑی اور ہاویری رکن پارلیمان شیوکمار اداسی اب کرناٹک سے مرکزی وزارت کے لئے دوڑ میں سب سے آگے ہیں -

ایچ کے پاٹل نے راہل گاندھی کو بھیجا استعفیٰ

ریاست میں کانگریس کے تشہیری مہم کمیٹی کے صدر ایچ کے پاٹل نے لوک سبھا انتخابات میں ریاست میں پارٹی کی شکست کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفی دینے کی پیشکش کی ہے۔

کرناٹک میں جے ڈی ایس مخلوط حکومت کو مستحکم رکھنے کانگریس خواہاں؛ تمام وزراء نے کیا کمارسوامی کی قیادت پر اظہار اعتماد

لوک سبھا انتخابات میں کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کی بدترین ناکامی کا آج وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی کی طرف سے طلب کی گئی غیر رسمی کابینہ میٹنگ میں جائزہ لیاگیا، اور طے کیاگیا کہ اس شکست سے مایوس ہوکر بیٹھنے کی بجائے آنے والے دنوں میں مخلوط حکومت کو اور متحرک اور مستحکم کرنے کے ...