کانگریس امیدوارکے انتخاب میں وفاداروں کو نظرانداز کرنے کا الزام

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th April 2018, 11:30 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،16؍اپریل (ایس او نیوز) ریاست کرناٹک میں آئندہ ماہ ہونے والے اسمبلی انتخابات کیلئے ریاست میں حکمران کانگریس پارٹی نے کل 218 امیدواروں کی پہلی فہرست جاری کرنے کے ساتھ ہی پارٹی میں ناراضی کی لہر دوڑ گئی ہے ۔ امیدواروں کے انتخاب سے غیرمطمئن چند سینئر لیڈروں کے رد عمل سے ایسا لگتا ہے کہ ٹکٹوں کی تقسیم میں وزیراعلیٰ سدارامیا نے پارٹی کے وفادار لیڈروں اور ورکرس کی جگہ دیگر پارٹیوں سے کانگریس میں شامل ہوئے لوگوں کو ترجیح دی ہے ۔یہ بھی کہا جارہا ہے کہ امیدواروں کے انتخاب میں پارٹی کے وفادار اورقدیم لیڈروں کو اعتماد میں نہیں لیا گیا ۔ اس مرتبہ چند امیدواروں کے انتخاب پر سینئر کانگریس لیڈران ملیکارجن کھرگے اور ڈاکٹر کے رحمن خان نے بھی ناراضی ظاہر کرتے ہوئے آج کہا کہ امیدواروں کے انتخاب میں پارٹی کے وفادار وقدیم لیڈروں کو یکسر نظر انداز کردیا گیا ۔سیاسی حلقوں میں کہاجارہا ہے کہ کانگریس کے وفاداروں کو نظرانداز کرنے کی قیمت ان انتخابات میں کہیں پارٹی کو چکانی نہ پڑے ؟

ایک نظر اس پر بھی

رندیپ سنگھ سرجے والا نے مودی حکومت پر کیا تیکھا وار، کہا ، مرکزی حکومت بلاری کے لٹیروں کو بچانے میں سرگرم

مرکز کی مودی حکومت نے کرناٹک میں دن دھاڑے خام لوہے کی لوٹ مچانے والے بلاری مافیا کو بچانے کے لئے سی بی آئی کا غلط استعمال کیا ہے، یہ الزام آج اے آئی سی سی کے ترجمان رندیپ سنگھ سرجے والا نے لگایا۔