لوک سبھا انتخابات میں جے ڈی ایس سے مفاہمت نہ کرنے کانگریس لیڈروں کا دباؤ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th July 2018, 11:35 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11؍جولائی(ایس او نیوز) ریاست کے سینئر کانگریس قائدین بشمول اراکین پارلیمان نے کانگریس قیادت پر دباؤ ڈالنا شروع کردیا ہے کہ آنے والے لوک سبھا انتخابات میں کانگریس جنتادل (ایس) کے ساتھ ہرگز مفاہمت نہ کرے اس سے ریاست میں کانگریس کے امکانات متاثر ہوسکتے ہیں۔

ان لیڈروں نے اے آئی سی سی جنرل سکریٹری وینو گوپال اور دیگر لیڈروں پر دباؤ ڈال رہے ہیں کہ کانگریس جنتادل (ایس) اتحاد کو مخلوط حکومت تک ہی محدود رکھا جائے۔ لوک سبھا انتخابات میں اس مفاہمت کو آگے نہ بڑھایا جائے۔ سابق وزراء ایچ کے پاٹل ، کاگوڈ تمپا، رکن پارلیمان چندرپا ، کے ایچ منی اپا اور دیگر نے یہ رائے ظاہر کی ہے کہ جنتادل (ایس) کے ساتھ اگر لوک سبھا انتخابات میں مفاہمت کی گئی تو کانگریس کو وہ روایتی سیٹیں قربان کرنی پڑ سکتی ہیں جہاں کافی عرصے سے اس کے امیدوار جیت رہے ہیں۔حلقوں کی نشاندہی کرتے ہوئے لیڈروں نے کہاکہ کولار ، چکبالاپور اور چامراج نگر سمیت سات ایسے پالیمانی حلقے ہیں جن کا تقاضہ جنتادل (ایس) نے کیا ہے اور کانگریس ان سے دستبردار نہیں ہوسکتی۔

حالانکہ کانگریس قیادت نے طے کیا ہے کہ لوک سبھا انتخابات وہ جنتادل (ایس) کے ساتھ مل کر لڑے گی۔لیکن ابھی سیٹوں کی تعداد اور حلقوں کے متعلق مفاہمت نہیں ہوئی ہے۔ جنتادل (ایس) نے ہاسن میں اپنے پوتے پرجول ریونا کو میدان میں اتارنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تو سابق وزیراعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا نے بنگلور رورل حلقے سے انتخاب لڑنے کی خواہش ظاہر کی ہے۔ کانگریس نے کسی بھی حال میں بنگلور رورل حلقے کو دیوے گوڈا کے حق میں خالی کرنے سے صاف انکار کا موقف اپنایا ہے۔اس کے علاوہ جنتادل (ایس) نے سابق مرکزی وزراء ویرپا موئیلی کے حلقے چکبالاپور اور کے ایچ منی اپا کے حلقے کولار ،چندراپا کے حلقے چترادرگہ اور دروا نارائے کے حلقے چامراج نگر کی مانگ رکھی ہے۔کانگریس اپنے موجودہ اراکین کے حلقوں کو کسی بھی حال میں قربان کرنے کے موقف میں نہیں ہے، اسی وجہ سے پارٹی کے لیڈروں نے مانگ کی ہے کہ لوک سبھا انتخابات میں جنتادل (ایس) کے ساتھ مفاہمت نہ کی جائے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

جنوبی ہند کے مشہور ومعروف عالم دین حضرت مولانا زکریا والا جاہی کا انتقال

نوبی ہند کے مشہور ومعروف،ممتاز جیدعالم دین زکریا صاحب والا جاہی طویل علالت کے بعد آج صبح 10؍بجے اپنے مالک حقیقی سے جاملے۔ مولانا کو شیواجی نگرکے براڈوے کی ان کی رہائش پر آخری دیدار کے لئے رکھا گیا تھا۔

یڈیورپا میرے صبر کا امتحان نہ لیں؛ حکومت کو گرانے کی بارہا کوشش بی جے پی کو زیب نہیں دیتی: کمار سوامی کا بیان

وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے ریاستی بی جے پی صدر یڈیورپا کو متنبہ کیا ہے کہ بارہا ریاستی حکومت کو گرانے کی کوشش کرکے وہ ان کے صبر کا امتحان نہ لیں۔اگر یہ کوشش جاری رہی تو یڈیورپا کو اس کی بھاری قیمت ادا کرنی پڑے گی۔

ارکان اسمبلی کو خریدنے کی کوشش پرسدرامیا نے کہا؛ اپوزیشن کار ول ادا کرنے کی بجائے بی جے پی بے شرمی پر اتر آئی ہے

سابق وزیر اعلیٰ اور ریاستی  حکمران اتحاد کی رابطہ کمیٹی کے چیرمین سدرامیا نے کہا ہے کہ ریاست میں بی جے پی کو ایک تعمیری اپوزیشن پارٹی کا رول ادا کرنا چاہئے، لیکن ایسا کرنے کے  بجائے انتہائی بے شرمی سے یہ پارٹی ریاستی حکومت کو گرانے کی کوششوں کو اپنا معمول بناچکی ہے۔