بھارت بند کا کرناٹکا میں زبردست اثر؛ ہبلی میں وزیراعظم کا پتلا نذرآتش؛ مینگلورمیں بسوں پر پتھرائو؛ بھٹکل میں کاروباری ادارے بند؛کاروار میں دکانیں زبردستی بند کرانے کا الزام

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 10th September 2018, 11:14 AM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

بھٹکل 10/ستمبر (ایس او نیوز) پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں ہورہے بھاری اضافہ کے خلاف کانگریس کی طرف سے دی گئی بھارت بند کی آواز پر پورے ملک میں  بند کا اثر نظر آرہا ہے، ایسے میں ریاست کرناٹک میں بھی بھارت بند کا زبردست اثر نظر آرہا ہے۔ جگہ جگہ سے احتجاج کی خبریں موصول ہورہی ہیں اوراقتدار پر سے  مودی کو ہٹائو اور بی جے پی سے ملک کو بچائو جیسے نعرے سننے میں آرہے ہیں۔

ہبلی سے موصولہ اطلاع کے مطابق  یہاں جے ڈی ایس کارکنوں نے ایک طرف  وزیراعظم نریندر مودی کا پتلہ نذر آتش کرتے ہوئے اپنی ناراضگی ظاہر کی ہے، وہیں کچھ جگہوں پر سڑکوں پر ٹائر جلا کر بھی بھارت بند منائے جانے کی خبر ملی ہے۔ ہبلی سے ساحل آن لائن کے نمائندے نے خبر دی ہے کہ یہاں  کانگریس کارکنوں نے بھی احتجاج  درج کرتے ہوئے راستوں پر اُترآئے اور وزیراعظم نریندر مودی کے خلاف نعرے بازی کی۔ کارکنوں نے تیل کی بڑھتی مہنگائی پر قابو پانے کا مطالبہ کرتے ہوئے پٹرول اور دیزل کی  قیمتوں کو کم کرنے کی مانگ کی۔ نمائندے کے مطابق جنتادل (ایس) کے کارکنوں نے  ہبلی کے چنمّا سرکل پر جمع ہوکر مودی کے خلاف نعرے بازی کی۔

ایسے میں ایک کنڑا نیوز چینل کی خبر پر بھروسہ کریں تو ایک کھلے ہوئے  ہوٹل میں گھس کر کچھ کارکنوں کی جانب سے توڑ پھوڑ بھی مچائی گئی ہے۔

اُدھر مینگلور سے ساحل آن لائن کے نمائندے نے خبر دی ہے کہ  قریبی علاقہ بی سی روڈ اور بنٹوال میں دو سرکاری بسوں پر پتھرائو کیا گیا ہے، جس سے بسوں کے گلاس چکنا چور ہوگئے ہیں۔ اسی طرح  کلڈکا، بی سی روڈ اور مانی نامی مقاموں  پر لوگوں نے ٹائر جلا کر روڈ کو بلاک کرنے کی کوشش کی ، مگر پولس نے فوری کاروائی کرتے ہوئے ٹائروں کو ہٹادیا اور ٹریفک نظام کو متاثر ہونے سے روک دیا۔

ایسے میں مینگلور میں کچھ مقامات پر مبینہ کانگریسی کارکنوں کی جانب سے زبردستی دکانیں بند کرنے کے بھی معاملات سامنے آئے ہیں۔ مینگلور جیوتی سرکل پر دکانوں کو زبردستی بند کرنے کی کوشش کے دوران جب پولس نے مداخلت کرنے کی کوشش کی تو پولس اہلکار پر بھی حملہ کرنے کی کوشش کئے جانے کی خبر ملی ہے۔ مینگلور کے جیوتی سرکل پر سواریوں کو بھی زبردستی روکنے کی کوشش کئے جانے کی  خبر ہے، جبکہ شہر میں اکثر مقامات پر کاروباری ادارے مکمل طور پر بند ہیں۔

اِدھر بھٹکل میں صبح سےتقریباً  سبھی کاروباری ادارے بند ہیں، البتہ شمس الدین سرکل اور ہائی وے پر کچھ دکانیں اور ہوٹل کھلے نظر آئے۔  بھٹکل میں آٹو رکشہ سروس جاری ہے، البتہ آٹو پر سفر کرنے والے نظر نہیں آرہے ہیں۔ البتہ ٹیکسی سروس، سرکاری بس اور پرائیویٹ بس سروس مکمل   بند ہیں۔

کاروار سے نمائندہ ساحل آن لائن نے خبر دی ہے کہ پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف آج منعقدہ بھارت بند کے موقع پر کاروار میں مکمل بند منایا جارہا ہے، خبر ملی ہے کہ  شہر کے اِلکل روڈ پر کچھ دکانیں کھلی تھیں، مگر  مبینہ کانگریسی کارکنوں نے اُن دکانوں کو  بھی بردستی بندکرایا  ہے۔

ضلع اُترکنڑا کے انکولہ سے ملی اطلاع کے  مطابق   ایک مٹھائی کی دکان کو کھلی دیکھ کر مبینہ کانگریسی کارکن دکان میں گھس گئے  اور بند کی آواز دئے جانے کے باوجود دکان کھلی رکھنے پر سخت ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے  مٹھائیوں کو راستوں پر پھینکنا شروع کردیا۔ واردات انکولہ تعلقہ کے امبار کوڈلو میں پیش آئی ہے۔ خبر کے مطابق بعد میں پولس نے حالات پر قابو پالیا ہے۔

بھارت بند کے موقع پر کچھ جگہوں پر زبردستی دکانوں کو بند کئے جانے اور بعض جگہوں پر سواریوں  پر پتھرائو  کی وارداتوں کے  درمیان ریاست کے دیگر علاقوں میں حالات پرامن بتائے گئے ہیں۔ ایسے میں مینگلور میں بند کے دوران پولس کا زبردست انتظام کیا گیا ہے  اور جگہ جگہ پولس تعینات کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ حفاظتی  اقدامات کے طور پر تقریبا ریاست کے تمام اسکولوں اور کالجوں میں چھٹی ڈکلیر کی گئی ہے۔

مزید آپڈیٹس کے لئے ساحل آن لائن دیکھتے رہئے۔

 

ایک نظر اس پر بھی

کاروار میں اترکنڑا ماہی گیروں کی جانب سے احتجاج کے بعد گوا حکومت پربڑھ گیا مچھلی کی درآمد پر لگائے گئے نئے قانون کو ہٹانے کا دبائو

کاروار میں اترکنڑا ماہی گیروں کی جانب سے احتجاج کے بعد گوا حکومت  مچھلی کی درآمد پر لگائے گئے نئے قانون کو ہٹانے کا دبائو بڑھ گیا ہے۔ کاروار میں ہوئے  سخت احتجاج کو دیکھتے ہوئے پیر کو گوا کے پنجی میں آل انڈیا فشرمین کانگریس (AIFC) اور گوا بوٹ یونین کے درمیان مسئلہ کے حل کے لئے ...

ضلع اُترکنڑا میں 23،24،25 نومبر کو ووٹرلسٹ میں ناموں کے  اندراج کے لئےچلائی جائے گی خصوصی مہم : کاروار میں ڈپٹی کمشنر ایس ایس نکول کا بیان

ہندوستانی الیکشن کمیشن کی ہدایات کے مطابق 23،24اور 25نومبر کو اترکنڑا ضلع میں ووٹرس کے نام اندراج کے لئے خصوصی مہم کا اہتمام کئے جانے کی اطلاع ڈپٹی کمشنر ایس ایس نکول نے دی۔

ائیر فورس میں ائیر من کے لئے عرضیاں مطلوب: ڈپلوما، پی یوسی اور ڈگری میں کامیاب طلبا لازمی طورپر توجہ دیں

بھارتی فضائیہ (ائیرفورس) میں گروپ ’’وائی ‘‘[آئی اے ایف(ایس )]ٹریڈ میں ائیر مین کے لئے عرضیاں مطلوب ہیں۔ امیدواروں کے انتخاب کے لئے چامنڈی وہار کھیل میدان ، نظر آباد، میسور میں 5سے 8ڈسمبر 2018تک سلکشن ریلی کا اہتمام کیاگیا ہے۔ اہل اور خواہش مند طلبا اور افراد اس پر توجہ دیتے ہوئے ...

بھٹکل میں جوش و خروش کے ساتھ نکالا گیا میلاد النبی کا جلوس؛ مینگلور، اُڈپی اور دیگر ساحلی علاقوں میں بھی میلاد النبی کی مناسبت سے جلسے اور جلوس

بھٹکل میں جوش و خروش کے ساتھ آج منگل کو میلادالنبی ﷺ کا جلوس نکالا گیا جس میں فیض الرسول  کے  ذمہ داران سمیت   کافی لوگوں نے شرکت کی۔بھٹکل کے ساتھ ساتھ پڑوسی  علاقوں شیرور، گنگولی،  اُڈپی اور مینگلور میں بھی 12 ربیع الاول کی مناسبت سے جلسے اور جلوس کا شاندار اہتمام کیا گیا جس ...

بھٹکل کے شمس الدین سرکل پر عام لوگوں میں ’’رحمت اللعالمینﷺ ‘‘ کنڑا کتابچہ کی تقسیم : آخری رسول ﷺہر ایک کے رہنما ہیں

اللہ کے آخری نبی ﷺ کی سیرت و پیغام کو تمام لوگوں تک پہنچانے اور ہندو مسلم میں بھائی چارگی پیدا کرنے ،غلطی فہمیوں کو دور کرنے  جیسے اہم مقاصد کو لے کر ریاستی سطح پر منائی جارہی  ’حضرت محمد ﷺ بنی نوع انسان کےعظیم رہنما‘ 15 روزہ  سیرتؐ مہم کے تحت آج جماعت اسلامی ہند بھٹکل کے ...

ودھان سودھا میں میڈیا کے داخلے پر پابندی سے قریب ایک اور قدم، محکمۂ اطلاعات میں سرکاری میڈیا سنٹر کا قیام

ریاست کے مرکز اقدار ودھان سودھا میں صحافیوں کے داخلے پر پابندی لگانے پر بضد وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے آج ایک بار پھر یہ بات دہرائی کہ شہر کے محکمۂ اطلاعات کے دفتر میں قائم مہاتما گاندھی میڈیا سنٹر کا استعمال صحافی اپنی سرگرمیوں کے لئے کرسکتے ہیں۔

احتجاجی کسانوں کو منانے کمار سوامی کی پہل، شکر کارخانوں کے مالکوں کو بقایا جات ادا کرنے کی سخت ہدایت

ریاست بھر کے کسانوں کی طرف سے کل شہر میں پرزور احتجاج کے بعد آج وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے کسان قائدین کے ساتھ بات چیت کی اور گنے کے کاشتکاروں کے مسائل کو جلد ازجلد حل کرنے کی یقین دہانی کے ساتھ آج شکر کے کارخانوں کے مالکوں سے بھی تبادلۂ خیال کیا۔

کاروار میں اترکنڑا ماہی گیروں کی جانب سے احتجاج کے بعد گوا حکومت پربڑھ گیا مچھلی کی درآمد پر لگائے گئے نئے قانون کو ہٹانے کا دبائو

کاروار میں اترکنڑا ماہی گیروں کی جانب سے احتجاج کے بعد گوا حکومت  مچھلی کی درآمد پر لگائے گئے نئے قانون کو ہٹانے کا دبائو بڑھ گیا ہے۔ کاروار میں ہوئے  سخت احتجاج کو دیکھتے ہوئے پیر کو گوا کے پنجی میں آل انڈیا فشرمین کانگریس (AIFC) اور گوا بوٹ یونین کے درمیان مسئلہ کے حل کے لئے ...