تینوں ریاستوں میں کانگریس سرکاربنائے گی ، کمل ناتھ کادعویٰ

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 7th December 2018, 12:33 AM | ملکی خبریں |

بھوپال:6/دسمبر (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) کانگریس مدھیہ پردیش کے صدر کمل ناتھ نے آج کہاہے کہ پارٹی نے کرناٹک اور گجرات کی غلطیوں سے سبق لیا ہے اورپارٹی کی جھولی میں مدھیہ پردیش کی 140 سے زائد سیٹیں آ رہی ہیں۔ آج یہاں صحافیوں سے گفتگو کے دوران مسٹر کمل ناتھ نے کہا کہ انہوں نے ریاست میں ایک ایک حلقے کا مطالعہ کیا ہے۔ کانگریس کے حصے میں 140 سے زائد سیٹیں آ رہی ہیں۔ گجرات اور کرناٹک میں پارٹی سے جو غلطیاں ہوئیں، ان سے سبق لیا گیا ہے۔انہوں نے بر سر اقتدار پارٹی بی جے پی پرالیکشن میں پیسے کی طاقت کا غلط استعمال کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کو پیسے بانٹنے سے کچھ نہیں ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کے عوام سمجھدار ہیں اور انہوں نے ریاست اور ترقی کے حق میں ووٹ دیا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ انتظامی مشینری کے نا جائز استعمال کی پوری کوشش ہوئی، لیکن انتظامی باڈی نے کسی طرح کی جانبداری نہیں کی، جس کے لیے وہ مبارکباد کے مستحق ہیں۔ ریاست میں تبدیلی پر زور دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ انگریزوں کے زمانے سے چلی آ ر ہے نظام کے تحت کئی عہدوں کے نام آج بھی وہی ہیں، جو اس وقت تھے۔ انہوں نے اس سلسلے میں کلیکٹر کی مثال دیتے ہوئے کہاہے کہ کلیکٹ کرنے والے کو یہ نام دیا گیا۔ اب اس فکر میں تبدیلی کی ضرورت ہے۔ انہوں نیکہاکہ نام میں نہ سہی پوسٹ میں تبدیلی کی ضرورت ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیراعظم مودی نے کابینہ سمیت سونپا صدرجمہوریہ کو استعفیٰ، 30 مئی کو دوبارہ حلف لینےکا امکان

لوک سبھا الیکشن کے نتائج کے بعد جمعہ کی شام نریندرمودی نے وزیراعظم عہدہ سے استعفیٰ دے دیا۔ ان کے ساتھ  ہی سبھی وزرا نے بھی صدرجمہوریہ کواپنا استعفیٰ سونپا۔ صدر جمہوریہ نےاستعفیٰ منظورکرتےہوئےسبھی سے نئی حکومت کی تشکیل تک کام کاج سنبھالنےکی اپیل کی، جسے وزیراعظم نےقبول ...

نوجوت سنگھ سدھوکی مشکلوں میں اضافہ، امریندر سنگھ نے کابینہ سے باہرکرنے کے لئے راہل گاندھی سے کیا مطالبہ

لوک سبھا الیکشن میں زبردست شکست کا سامنا کرنے والی کانگریس میں اب اندرونی انتشار کھل کرباہرآنے لگی ہے۔ پہلےسے الزام جھیل رہے نوجوت سنگھ سدھو کی مشکلوں میں اضافہ ہونےلگا ہے۔ اب نوجوت سنگھ کوکابینہ سےہٹانےکی قواعد نے زورپکڑلیا ہے۔

اعظم گڑھ میں ہارنے کے بعد نروہوا نے اکھلیش یادو پر کسا طنز، لکھا، آئے تو مودی ہی

بھوجپوری سپر اسٹار نروہوا (دنیش لال یادو) نے لوک سبھا انتخابات کے دوران سیاست میں ڈبیو کیا تھا،وہ بی جے پی کے ٹکٹ پر یوپی کی ہائی پروفائل سیٹ اعظم گڑھ سے انتخابی میدان میں اترے تھے لیکن اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے سامنے نروہا ٹک نہیں پائے۔