حیدرآباد کے قریب کوڑمیال کی جامع مسجد پر بھگوا پرچم لہرانے پر مقامی مسلمانوں میں زبردست ناراضگی؛احتجاج کے بعد پرچم نکال دیا گیا 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 19th June 2017, 11:59 AM | ملکی خبریں |

ملیال 19/جون؍(ایس او نیوز؍ایجنسی)حیدرآباد کے قریب ضلع جگتیال کے کوڑمیال منڈل مستقر پر واقع جامع مسجد کے مینار پر بعض شرپسندوں نے بھگوا پرچم لہراتے ہوئے ماہ رمضان میں فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا کرنے کی کوشش کی جس کے خلاف مقامی مسلمانوں نے سخت ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے مسجد کے روبرو زبردست احتجاج کیا ۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی  ضلع ایس پی جگتیال اننت شرما کوڑمیال پہنچ گئے اور احتجاجیوں سے گفتگو  کرتے ہوئے احتجاج کو ختم کرنے کی اپیل کی۔ تاہم مقامی نوجوانوں نے خاطیوں کی گرفتار کرنے تک احتجاج جاری رکھنے کی دھمکی دی جس پر ضلع ایس پی نے مقامی مسلم قائدین کو یقین دلایا کہ  24 گھنٹے کے اندر اندر خاطیوں کو گرفتار کرتے ہوئے ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ایس پی  کی یقین دھانی  کے بعد احتجاج ختم ہوگیا اوراُن ہی  کی موجودگی میں مسجد کے مینار سے بھگوا پرچم کو نکال دیا گیا۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق کریم نگر سے تقریباً 40کلو میٹر دورکوڑمیال منڈل مستقر میں واقع جامع مسجد کے باب الداخلہ کے مینار پر ہفتہ کی رات دیر گئے بعض نامعلوم شرپسندوں نے بھگوا پرچم باندھ دیا تھا۔جب فجر کی نماز کے لئے لوگ مسجد پہنچے تو  انہوں نے مینار پر بھگوا پرچم دیکھ کر  مسجد کمیٹی کے ذمہ داروں کو  اطلاع دی۔ کمیٹی کے ذمہ داروں نے پولیس کو جانکاری دی۔ فجر کی نماز کے بعد مقامی مسلمانوں نے مسجد کے روبرو واقع سڑک پر بیٹھ کر کافی دیر تک دھرنا دیا۔ مقامی مسلمانوں نے کریم نگر اور جگتیال کے مسلم قائدین کو بھی شرپسندوں کی اس حرکت کی اطلاع دی۔ نقیب ملت بیر سٹراسدالدین اویسی صدر مجلس و ایم پی کی ہدایت پر سابق ڈپٹی میئر و صدر ٹاؤن مجلس اتحادالمسلمین کریم نگر محمد عباس سمیع کوڈمیال منڈل پہنچ گئے۔ انہوں نے مسجد کا تفصیلی معائنہ کیا۔ مسجد کے ذمہ داروں اور مقامی مسلمانوں سے بات چیت کی۔ مسجد میں اجلاس کو مخاطب کرتے ہوئے محمد عباس سمیع نے کہا کہ چند مٹھی بھر فرقہ پرست لوگ حالات کو بگاڑنے کی کوشش کررہے ہیں۔ ہم ان کے منصوبوں کو  کامیاب ہونے نہیں دیں گے ۔انہوں نے ضلع ایس پی سے خاطیوں کی جلد گرفتاری کا مطالبہ کیا۔ اس موقع پر محمد عباس سمیع کے ساتھ معتمد مجلس سید برکت علی، محمد ساجد علی، سید قمرالدین ، سینئر قائد کے علاوہ کورٹلہ وائس چیرمین و صدر مجلس محمد رفیع الدین، سرسلہ کے صدر مصطفی ویملواڑہ ، جگتیال ، میڈپلی کے جماعت کے ذمہ داروں اور نوجوانوں کی کثیر تعداد موجود تھی ، مسجد کے  زمہ داران نے بھی اس واقعہ کے خلاف شدید احتجاج کرتے ہوئے خاطیوں کی گرفتاری کے سلسلہ میں ضلع ایس پی اور مقامی پولیس کو تحریری یادداشت پیش کی۔ ضلع ایس پی نے حالات کو سنگین ہوتا دیکھ کر مسجد اور کوڑمیال موضع کے اطراف پولیس کی بھاری جمعیت کو تعینات کردیا۔ انہوں نے مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ صبر و تحمل کا مظاہرہ کریں۔ ضلع سے جلد خاطیوں کو گرفتار کیا جائے گا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کاغذات نامزدگی بھرنے کے بعد رام ناتھ کووندنے کہا،جب سے گورنر بنایاتب سے میری کوئی پارٹی نہیں

صدارتی انتخابات کے لئے این ڈی اے کے امیدوار رام ناتھ کووند نے نامزدگی بھر دی ہے۔اس دوران ان کے ساتھ پی ایم مودی، سینئر لیڈر لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی اور بی جے پی صدر امت شاہ بھی موجود تھے۔

کرناٹک کا دیرینہ خواب شرمندۂ تعبیر بنگلور شہر اسمارٹ سٹی کی فہرست میں شامل

بشمول راجدھانی بنگلور ملک کے 30؍شہروں کو مرکزی حکومت نے اسمارٹ سٹی کے طورپر ترقی دینے کے لئے منتخب کرلیاہے۔ مرکزی وزیر برائے شہری ترقیات وینکیا نائیڈونے آج اس کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ مرکزی اسمارٹ سٹی اسکیم کے تحت ان 30؍شہروں کو ترقی دی جائے گی۔

سری نگر میں ڈی ایس پی محمد ایوب کا قتل، ہنس راج اہیر بولے قصورواروں کو چھوڑا نہیں جائے گا

 سری نگر میں بھیڑ کی طرف سے ڈی ایس پی کو پیٹ پیٹ کر بغیر وجہ قتل کئے جانے پر سرینگر سے دہلی تک غصہ ہے۔وزیر داخلہ ہنس راج اہیر نے بھی اس واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے مجرم لوگوں کے خلاف سخت کارروائی کی بات کی ہے۔ہنس راج اہیر کا کہنا ہے کہ جمعرات کاواقعہ بہت افسوسناک ہے

میراکی امیدواری پربوکھلایابی جے پی خیمہ ! یوگی نے کہا، لوگوں کو لڑوانے کے لئے بنایا میرا کمار کو امیدوار؛ کانگریس کاجوابی حملہ،دلت کوامیدواربنانے سے بی جے پی کے گناہ نہیں دھلیں گے

این ڈی اے کے صدارتی امیدوار رام ناتھ کووند نے اپنا نامزدگی بھر دیا ہے۔نامزدگی کے دوران این ڈی اے نے اپنی پوری طاقت دکھائی۔اس دوران کووند کے ساتھ وزیر اعظم نریندر مودی، بی جے پی صدر امت شاہ، بی جے پی کے قدآور لیڈر لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی بھی موجود رہے،

نئی دہلی قادری مسجدمیں ہزاروں لوگوں نے لگائے بھارت۔فلسطین زندہ باد کے نعرے

شاستری پارک کی سب سے بڑی قادری مسجد میں یوں تو جمعہ کی نماز کے لئے عام طور پر ہزاروں نمازی آتے ہیں لیکن رمضان کے آخری جمعہ کی نماز میں یہ تعداد چار گنا ہو جاتی ہے. نماز کے بعد فلسطین کے حق میں ہوئے احتجاج میں تقریبا دس ہزار لوگ جمع ہو گئے اور بھارت اور فلسطین زندہ باد کے نعرے لگانے ...