دھنیا شری خودکشی معاملہ: کلیدی ملزم گرفتار۔ وہاٹس ایپ گروپس کے اراکین پر پولیس کی نظر

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th January 2018, 10:13 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

چکمگلورو11؍جنوری (ایس او نیوز)مسلم لڑکے کے ساتھ دوستی کے معاملے کو لے کر زعفرانی مورل پولیسنگ بریگیڈ کی ہراسانی کی وجہ سے موڈی گیرے کامرس کالج طالبہ دھنیا شری نے جو خود کشی کرلی تھی، اس تعلق سے کلیدی ملزم جنوبی کینرا بنٹوال تعلقہ کے سنتوش(20سال) کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

خیال رہے کہ سنتوش نے دھنیا شری سے وہاٹس ایپ پر مسلم لڑکے کے ساتھ اس کی دوستی کے تعلق سے بحث کی تھی اور یہ تمام گفتگو بجرنگ دل کے کارکنان اور کچھ دیگر افراد کو فارورڈ کردی تھی۔ جس کے بعدبجرنگ دل کے لیڈروں کی طرف سے دھنیا شری کو دھمکیاں دی جانے لگیں۔ سنتوش اور اس کے ساتھیوں کے بارے میں یہ بھی کہا جاتا ہے کہ انہوں نے دھنیا شری کے والدین کو بھی دھمکیاں دی تھیں۔جس کے بعدذہنی دباؤ کی وجہ سے دھنیا نے پھانسی لگاکر خودکشی کی تو سنتوش فرار ہوکر بنگلورو میں روپوش ہوگیا تھا۔بالآخر مصدقہ اطلاع پر کارروائی کرتے ہوئے موڈی گیرے پولیس اسٹیشن ہاوس افیسر ایم رفیق اور ان کی ٹیم نے سنتوش کو گرفتار کرلیااور مزید دو افراد کی تلاش جاری ہے۔اس سے پہلے اسی معاملے میں بی جے پی یوا مورچہ کے ایک لیڈر انیل کو پولیس نے گرفتارکرلیا تھا۔

دھنیا شری کے والد نے ابتدا میں پولیس کو بیان دیا تھا کہ دھنیا شری موبائل فون پر اجنبیوں سے چیاٹنگ میں مصروف رہتی تھی۔ چونکہ امتحانات قریب تھے اس لئے انہوں نے اس کے موبائل استعمال کرنے پر پابندی لگادی تھی۔ اس سے ناراض ہوکر اس نے خود کشی کی ہے۔ لیکن پولیس نے تفتیش کے دوران دھنیا شری کے گھر سے ’ڈیتھ نوٹ‘ برآمد کرلیا جس سے خود کشی کا اصل سبب سامنے آگیا۔

دوسری طرف پولیس کا کہنا ہے کہ اس نے اشتعال انگیز مسیج وہاٹس ایپ پر شیئر نہ کرنے کی ہدایت جاری کردی ہے۔یاد رہے کہ ہندولڑکیوں کو غیر ہندو لڑکوں کے ساتھ دوستی نہ کرنے کی وارننگ دینے والا مسیج ’موڈی گیرے بجرنگ دل گروپ‘ میں پوسٹ ہواتھا اور وہاں سے دیگر گروپس میں شیئر اور فارورڈ ہوتا گیا ۔اب پولیس موڈی گیرے وہاٹس ایپ گروپس کے ان اراکین پر تفتیشی نظر بنائے ہوئے ہیں جنہوں نے اس مسیج کو پھیلانے میں حصہ لیا ہے۔ 

چکمگلورو کے ایس پی انّا ملائی نے کہا ہے کہ’’ اس قسم کا مسیج سوشیل میڈیا پر عام کرنا ایک جرم ہے۔6جنوری کو جس دن یہ مسیج عام ہواتھا اسی دن دھنیا شری نے خود کشی کرلی تھی۔اس لئے ہم نے ایسے افراد کے خلاف کارروائی کرنے کا فیصلہ کیا ہے، جنہوں نے اس مسیج کو شیئر یا فارورڈ کیا تھا۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں کٹے ویرا کے زیراہتمام تین روزہ اسٹیٹ لیول کبڈی ٹورنامنٹ کا آج سے ہوا شاندار آغاز

کٹے ویرا اسپورٹس سینٹر کے زیراہتمام اسٹیٹ لیول کبڈی ٹورنامنٹ کا آج جمعہ شام سے یہاں ساگر روڈ پر گرو سدھیندرا کالج میدان میں بھٹکل رکن اسمبلی منکال وئیدیا کے ہاتھوں شاندار آغاز ہوا۔  تین روز ٹورنامنٹ کا فائنل مقابلہ اتوار کو کھیلا جائے گا جس میں اول آنے والی ٹیم کو ایک لاکھ ...

22جنوری ووٹرلسٹ میں نام درج کرنے یاترمیم و اضافے کی آخری تاریخ 

ضلع پنچایت کے سی ای او مسٹر ایل چندرا شیکھر نے کاروارآکاش وانی کے فون اِن پروگرام میں سوالات کے جواب دیتے ہوئے بتایا 18سال کی عمر کو پہنچنے والے ملک کے ہر باشندے کا یہ حق ہے کہ اس کا نام ووٹر لسٹ میں شامل ہو اور اسے حق رائے حاصل ہوجائے۔

بھٹکل:شرالی کے چتراپور سرکاری پرائمری اسکول کےمسئلہ کو حل کرنے عوام کا مطالبہ

شرالی کے چتراپور میں واقع سرکاری پرائمری اسکول کی زمین چتراپور مٹھ کی انتظامیہ کی تحویل میں آتی ہے۔ اسکول کے مستقبل کو دیکھتے ہوئے زمین اسکول کے نام رجسٹرڈ کرنے کاجمعہ کو منعقد کی گئی میٹنگ میں عوام نے مطالبہ کیا۔

اُلائی بیٹو فساد کے تعلق سے وجرے دیہی مٹھ سوامی کو عدالت میں حاضری کا سمن جاری

منگلورو سے قریب اُلائی بیٹو نامی مقام پر9دسمبر 2014کو ہوئے فساد سے متعلق معاملے کی سماعت کے دوران منگلورو کی سیکنڈ جے ایم ایف سی عدالت نے گروپور کے وجرے دیہی مٹھ کے سوامی راج شیکھرا نندا کو شخصی طور پر عدالت میں حاضر رہنے کا سمن جاری کردیا ہے۔

اننت کمار ہیگڈے بیت الخلاء کی بدبو کی مانند

قومی شاعر کوئمپو کے خلاف دئے جانے والا مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے کا بیان انتہائی مذموم ہے۔ اب وہ معاف کئے جانے کے بھی قابل نہیں رہے۔ یہ باتیں کانگریس کے ریاستی نگراں کا روینوگوپال نے کہیں ۔

جماعت اسلامی ہند کی’’حق وانصاف ‘‘ سہ روزہ کانفرنس

جماعت اسلامی ہند بنگلورو سٹی کے صدر وسہ روزہ کانفرنس کے کنوینر ڈاکٹربلگامی محمد سعد،سکریٹری شیخ ہارون اور بورڈآف اسلامک ایجوکیشن (بی آئی ای ) کے سکریٹری ریاض احمد نے مشترکہ اخباری کانفرنس کے دوران بتایا کہ جماعت اسلامی ہند بنگلورو میٹرو کے زیر اہتمام19؍تا 21؍جنوری سہ روزہ ...

کیا آنگن واڑی کارکن تمہارے گھر کے کتے سے بھی گئے گزرے ہیں؟ بنگلورو میں مرکزی وزیر اننت کمار کے دفتر کے سامنے احتجاج

نریندر مودی کی زیر قیادت مرکزی بی جے پی حکومت بیٹی بچاؤ،بیٹی پڑھاؤ کا نعرہ لگاتی ہے۔ ان دونوں منصوبوں کو حقیقی طور پر عملی شکل دینے والے آنگن واڑی،آشا اور مڈ ڈے میل کے کارکن ہیں۔اس کے باوجود ان کارکنوں کو نظرانداز کیا جارہاہے۔