مخلوط حکومت کے متعلق بیان بازی سڑکوں پر نہ کی جائے: دیوے گوڈا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2019, 2:37 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو 9جنوری (ایس او نیوز) سابق وزیراعظم اور جے ڈی ایس کے قومی سربراہ ایچ ڈی دیوے گوڈا نے ریاستی مخلوط حکومت میں شامل کانگریس جے ڈی ایس دونوں پارٹیوں کے لیڈروں کو نصیحت کی ہے کہ حکومت میں کسی بھی اختلاف کے متعلق بیان بازی سڑکوں پر نہ کی جائے۔

پچھلے دنوں سرکاری بورڈز اور کارپوریشنوں کے تقرر کے متعلق وزیربرائے تعمیرات عامہ ایچ ڈی ریونا اور سابق وزیر ایچ ایم ریونا کے درمیان ہوئی سیاسی نوک جھونک پر اپنا سخت ردعمل ظاہر کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نے کہاکہ دونوں پارٹیوں کے لیڈر مخلوط حکومت میں کسی بھی مسئلے کی صورت میں اس سے اپنی اپنی پارٹی کے رہنماؤں کو آگاہ کرائیں، جے ڈی ایس قائدین اپنی شکایت ان تک یا وزیراعلیٰ کمار سوامی تک پہنچائیں اور کانگریس قائدین رابطہ کمیٹی کے چیرمین سدرامیا ، نائب وزیر اعلیٰ پرمیشور اور کے پی سی سی صدر سے رجوع ہوں۔ ایسا کرنے کی بجائے اگر مخلوط حکومت کے بارے میں بیان بازی فٹ پاتھوں پرکھڑے ہوکر کی گئی تو اس سے حکومت کی ساکھ متاثر ہوگی۔ اور اپوزیشن پارٹیوں کو حکومت کے خلاف بیان بازی کا موقع ملے گا۔ وہ نہیں چاہتے کہ مخلوط حکومت کسی طرح کے انتشار کا شکار ہو، کرناٹک میں کانگریس اور جے ڈی ایس نے سیکولر قوتوں کو متحد کرنے کا جو کامیاب تجربہ کیا ہے اس سے استفادہ پورے ملک کی سیاسی پارٹیاں اٹھانے کی کوشش کررہی ہیں۔ قومی سطح پر فرقہ پرست طاقتوں کو آگے بڑھنے سے روکنے کے لئے کرناٹک کی پہل کو کامیاب ترین مانا جارہا ہے۔ ان حالات میں دونوں پارٹیوں کی کوشش یہی ہونی چاہئے کہ اس پہل سے استفادہ کرتے ہوئے کرناٹک میں فرقہ پرست جماعت کو محدود کیاجائے۔ اور آنے والے لوک سبھا انتخابات میں کانگریس جے ڈی ایس اتحاد اتنی سیٹوں پر کامیابی ضرور حاصل کرے کہ اس کی بدولت بی جے پی کو اقتدارپر آنے سے روکا جاسکے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک سدھ گنگا مٹھ کے سوامی شیو کمارکا 111 سال کی عمر میں انتقال؛ ریاست بھر میں ماتم؛ کل منگل کو اسکولوں میں چھٹی

ریاست کرناٹک کے معروف سوامی اور سدھ گنگا پیٹھ کے سربراہ 111سالہ شیو کمار سوامی جی آج پیر کو  انتقال کرگئے۔ ان کے انتقال پر پوری ریاست میں ماتم چھا گیا اور  وزیر اعلی ایچ ڈی کمارسوامی نے کل منگل کو  سبھی اسکولوں اور کالجوں میں چھٹی  کا اعلان کیا۔

ہم بے قصور تھے، مگر وہ ہماری زبان سمجھنے سے قاصر تھے، ایرانی حراست سے رہا ہونے کے بعد ماہی گیروں کا بھٹکل میں والہانہ استقبال

دبئی سمندر میں ماہی گیر ی کے دوران ایرانی پولیس کی تحویل میں رہنے کے بعد واپس لوٹنے والے کمٹہ اور بھٹکل کے ماہی گیروں کا کہنا ہے کہ ان کے لئے سب سے بڑا مسئلہ زبان کا تھا۔ ایرانی افسران ان کی زبان سمجھ نہیں رہے تھے ۔ اور ایرانی سمندری سرحد پار نہ کرنے کا یقین دلانے کے باوجود وہ لوگ ...

کاروار: بیچ سمندر میں کشتی اُلٹ گئی؛ دس سے زائد ہلاک ؛ راحت اور بچاو کا کام جاری، 25 سے زائد لوگ تھے کشتی پر سوار

کاروار میں کورم گڑھ جاترا کے لئے نکلی ایک کشتی بیچ سمندر میں ڈوب جانے سے کشتی پر سوار چھ لوگوں کی موت واقع ہونے کی اطلاع موصول ہوئی ہے، بتایا گیا ہے کہ مرنے والوں کی تعداد میں اضافہ ہونے کا خدشہ ہے کیونکہ کشتی پر موجود 25 سے زائد لوگوں میں دو چار لوگوں کو ہی بچانے کی خبر ملی  ہے، ...

ناگور جمعہ مسجد میں خنزیر کے اجزاء پھینکے جانے کا معاملہ؛ بیندور پولس نے کیا 5 ملزمین کو گرفتار

ایک ہفتے قبل رات کے اندھیرے میں ناگور کی نور جمعہ مسجد کے کمپاؤنڈ میں شرپسندوں نے خنزیر کے کٹے ہوئے اجزاء پھینک کر فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا کرنے کی کوشش کی تھی ، اس سلسلے میں بیندور پولیس نے 5ملزمین کو گرفتار کرلیا ہے۔

ہائی کمان کہے تو وزارت چھوڑ نے کیلئے بھی تیار : ڈی کے شیو کمار

ریاست میں سیاسی گہما گہمی کا فی تیز ہونے لگی ہے ۔ ایک طرف جہاں کانگریس اور جنتادل( سکیولر) اپنی مخلوط حکومت کو بچانے میں لگے ہیں وہیں بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی ) نے آپریشن کنول کے ذریعہ دیگر پارٹیوں کے اراکین اسمبلی کو خریدکر برسر اقتدار آنے کے حربے جاری رکھے ہیں۔