بھٹکل میں صبح سے زوردار بارش اور وزیراعلیٰ سدرامیا کادورہ بھٹکل؛ اسٹیج کے قریب کیچڑ جمع ہوجانے سے منتظمین پریشان؛ ڈی سی اور ایس پی نے لیا جائزہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 6th December 2017, 9:48 AM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل 6/ڈسمبر (ایس او نیوز) بھٹکل میں رات کو ہلکی ہلکی بارش شروع ہوجانے کے بعد صبح  اچانک زوردار بارش شروع ہوگئی اور کئی گھنٹوں تک مسلسل ہونے والی بارش سے بھٹکل ساگر روڈ پر منعقدہ وزیراعلیٰ سدرامیا کے پروگرام پر منتظمین سخت پریشانی میں مبتلا ہوگئے۔ بارش سے اسٹیج کے نیچے اور عوام کے بیٹھنے والی جگہوں پر جابجا پانی جمع ہوجانے سے جگہ  جگہ کیچڑ نظر آرہی ہے۔

ضلع کے ڈپٹی کمشنر ایس ایس نکھول اور ایس پی  ونائک پاٹل سمیت پوری ضلعی انتظامیہ صبح کو ہی پولس پریڈمیدان میں پہنچ کر جائے وقوع کا جائزہ لیا ہے۔ ایسے میں پولس کی جانب سے پورے علاقے کو سخت سیکوریٹی فراہم کردی گئی ہے۔  صبح صبح رکن اسمبلی منکال وئیدیا نے بھی کانگریسی اراکین کے ساتھ جائے وقوع پر پہنچ کر جائزہ لیا ہے۔

صبح قریب 8:30 بجے بارش کا سلسلہ تھوڑا بہت تھم جانے کے بعد اب کیچڑ کو ہٹایا جارہا ہے اور بالخصوص اسٹیج والی جگہ کو صاف کیاجارہا ہے۔گیلی کرسیوں کو بھی صاف کرنے کا کام جاری ہے، پروگرام کو شاندار پیمانے پر منعقد کرنے ہرممکن کوشش کی جارہی ہے اور کسی بھی صورتحال سے نپٹنے کے لئے بھی انتظامیہ چوکس نظر آرہی ہے۔

بارش کا سلسلہ تھمنے کے بعد فی الحال ساگر روڈ پر پولس پریڈ میدان میں ہی پروگرام کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ البتہ اس بات پر بھی غور کیا جارہا ہے کہ عین پروگرام کے دوران پھر بارش ہوئی تو کیا ہوگا، اس لئے  فوری طور پر بارش ہونے کی صورت میں پروگرام کو کسی بڑے ہال میں منتقل کرنے کے لئے متبادل انتظامات پر بھی غوروخوض کیا  گیا ہے۔

خیال رہے کہ وزیراعلیٰ سدرامیا آج صبح قریب گیارہ بجے بھٹکل پہنچ رہے ہیں، وہ ساگر روڈ پر پولس پریڈ میدان میں عوام الناس سے خطاب کرنے کے ساتھ ساتھ کئی ایک پروگراموں کا سنگ بنیاد رکھیں گے اور کئی ایک مکمل شدہ پروجکٹ کا افتتاح بھی کریں گے۔

 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل :میڈیکل اور ڈینٹل کورسس کی فیس میں تین گنااضافہ :اے سی کے توسط سے وزیربرائے طبی تعلیم کو میمورنڈم

سال 2018-2019کے میڈیکل اور ڈینٹل کورسس کے لئے فیس میں تین گنا اضافہ کئے جانے سے غریب طلباکو  میڈیکل میدان سے محروم کئے جانے کا حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے اے بی وی پی بھٹکل شاخ  کے ممبران نے بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر کی معرفت ریاستی وزیر برائے میڈیکل تعلیم کو میمورنڈم سونپا۔

بھٹکل بس اسٹائنڈ کی بوسیدہ عمارت منہدم : کوئی جانی یا مالی نقصان نہیں

بھٹکل کے لئے  ہائی ٹیک بس اسٹانڈ کی تعمیر جاری رہتے پیر کی دوپہر بھٹکل بس اسٹانڈ کی عمارت  منہدم ہوکر تاریخ کا حصہ بن گئی ۔ بارش کی وجہ سے عمارت کی دیواریں اور پتھر ایک ایک کرکے گرنے لگے  تھے پیر کی دوپہر عمارت پوری طرح منہدم ہوگئی ۔ پیشگی طورپر خستہ حال عمارت کی بوسیدگی دیکھتے ...

ساحل آن لائن کے مینجنگ ایڈیٹر کو صحافتی خدمات کے اعتراف میں ضلعی ایوارڈ : ایوارڈ یافتہ بھٹکل کے پہلے اور ضلع کے پہلے مسلم صحافی

ملک عزیز میں اپنی شناخت رکھنے والے ریاست کرناٹک ، بھٹکل کے  معروف آن لائن نیوز پورٹل ساحل آن لائن کے مینجنگ ایڈیٹر عنایت اللہ گوائی کو ضلعی سطح کے" جی ایس ہیگڈے اجّیبل ایوارڈ" سےاتوار 15 جولائی کو ضلع اُترکنڑا کے معروف سیاحتی مقامی گوکرن میں  اُترکنڑا  ورکنگ جرنلسٹ اسوسی ایشن ...

ائیر ہوسٹس انیشیا بترا کی موت : دو سال پہلے ہوئی تھی شادی ، اکثر ہوتی تھی شوہر سے لڑائی

ہلی کے حوض خاص علاقہ میں 39 سالہ ایئر ہوسٹس انیشیا بترا کی موت کے معاملہ میں اس کے بھائی کرن بترا نے اپنے بہنوئی مینک پر سنگین الزامات عائد کئے ہیں۔ اس نے کہا کہ مینک اس کی بہن کے ساتھ مار پیٹ کرتا تھا اور اس کا استحصال کرتا تھا۔ انیشیا کے فیس بک پیج کے مطابق دونوں کی شادی فروری 2016 ...

اترپردیش میں بیٹی پیدا ہونے پر ناراض شوہر نے بیوی کو دیا تین طلاق

یم کورٹ کے تین طلاق کو غیر قانونی قرار دینے کے باوجود تین طلاق کے معاملات رک نہیں رہے ہیں۔ تازہ ترین معاملہ اتر پردیش کے شاملی کا ہے جہاں ایک مسلم عورت کو اس کے شوہر نے صرف اس وجہ سے تین طلاق دے دی کیونکہ اس نے بیٹی کو جنم دیا تھا۔

میں خوش نہیں ’وش کنٹھ‘ بن کرپی رہا ہوں زہرہلاہل : کمار سوامی 

کرناٹک کے وزیر اعلی کمار سوامی کا کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کی حکومت پر ایک بار پھر درد چھلکا ہے۔ وزیر اعلی کمارسوامی نے ایک بار پھر سے اتحاد کی حکومت کی مجبوریوں کو عوامی پلیٹ فارم سے سب کے سامنے رکھا اور اس دوران ان کے مجبوریوں کے آنسو بھی چھلکے۔ اب کرناٹک میں نئی حکومت کے قیام ...

مرکزی حکومت’’مدرسوں پرتالا‘‘نہیں بلکہ’’فارمل تعلیم کی مالا‘‘چاہتی ہے،برج کورس کے کا میاب طلبہ وطالبات کومختارعباس نقوی نے اسنادتقسیم کیں

مرکزی اقلیتی امورکے وزیرمختارعباس نقوی نے آج کہاہے کہ مرکزی حکومت’’مدرسوں پرتالا‘‘نہیں بلکہ’’فارمل تعلیم کی مالا‘‘چاہتی ہے۔یہاں وزارت برائے اقلیتی اموراورجامعہ ملیہ اسلامیہ کی جانب سے مشترکہ طورسے مدرسے طلبہء4 اوراسکول ڈراپ آؤٹس کے لئے چلائے جارہے’’برج کورس‘‘میں ...