سما لتا امبریش پرریونا کی تنقید، کمار سوامی نے معافی مانگی بندر بخار سے فوت ہونے والے افراد کے لواحقین کو معاوضہ جاری کرنا زیر غور: وزیر اعلیٰ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th March 2019, 11:48 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11؍مارچ (ایس او  نیوز) ریاست کی کسی بھی خاتون کے ساتھ توہین آمیز سلوک یا بیان بازی درست نہیں ہے ۔ یہ کہتے ہوئے وزیراعلیٰ کمار سوامی نے وزیر تعمیرات عامہ ایچ ڈی ریونا کی سما لتا امبریش پر کی گئی تنقید پر معافی مانگی۔  بروزاتوار وزیر اعلیٰ نے رہائشی دفتر کرشنا میں پلس پولیو پروگرام کا آغاز کرنے کے بعد نامہ نگاروں سے بات چیت کے دوران کہا کہ ایچ ڈی ریونا کے تنقیدی بیان پر میں معافی مانگتا ہوں ۔ ان کی باتوں سے کسی کو دلی تکلیف پہنچی ہے تو ان کی طرف سے میں معافی چاہتا ہوں ۔انہوں نے کہا کہ ذرائع ابلاغ کی جانب سے کئے گئے اکسانے والے سوال نے شاید ریونا کو اس قسم کابیان دینے پر مجبور کیا ہوگا ۔ میڈیا والوں نے ان سے جو بات چیت کی وہ حذف کردیا گیا ہے ۔ بیان کا پس منظر نہیں ہے ۔ جو بھی جیسا بھی ہو ریونا کو انتہائی ہوشیاری سے جواب دینا ہوگا ۔ ورنہ میڈیا کچھ بھی اگلوا سکتاہے ۔ بہر حال میں ان کی طرف سے معافی کا خواستگار ہوں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے کنبہ نے کبھی بھی کسی بھی خاتون کی بے عزتی نہیں کی ۔ ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے رکن اسمبلی شیون گوڈا نایک سے سابق وزیرکانگریس کے رمیش جارکی ہولی نے ملاقات کی ہے ۔ اس بارے میں مجھے سر کھپانے کی ضرورت نہیں ۔ کوئی بھی کسی سے بھی ملاقات کرے ،کسی سے ملنا نہ ملنا ان کاحق ہے ۔ اس بارے میں سر پر بوجھ نہیں ڈالوں گا اورنہ میں رمیش جارکی ہولی پر شک کروں گا۔بی ایس ایڈی یورپا کی آواز پر مشتمل آپریشن کنول کے آڈیو کی تحقیقات سے متعلق کسی کو سر خراب کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ، آڈیو کی تحقیق کے سلسلہ میں جو کارروائی کرنی ہے وہ کی جارہی ہے ۔ آپریشن کنول چلتا ہی رہے گا ۔اس پر زیادہ توجہ دینے کی ضرورت نہیں ہے ، لوک سبھا انتخابات کی تاریخ کا اعلان ہوگیا ہے ۔ دو تین دنوں کے اندر کانگریس اور جے ڈی ایس کے مابین تقسیم کاری کا معاملہ حل ہوجائے گا۔ دونوں پارٹیوں کے قائدین مل بیٹھ کر فیصلہ کریں گے ۔ میں اپنا وقت ضائع کئے بغیر ریاست کی ہمہ جہت ترقی پر اپنی توجہ مرکوز کیا ہوں۔

وزیراعظم سے ملاقات: وزیر اعلیٰ نے کہا کہ کل دہلی میں کرناٹک بھون کی نئی عمارت کی افتتاحی تقریب میں شرکت کے لئے گیا ہوا تھا ۔ اس دوران وزیراعظم سے ملاقات کی اور دوہزار کروڑ روپئے راحت رساں فنڈ جاری کرنے کامطالبہ کیا گیا ہے ۔ مرکزی حکومت کی جانب سے 900کروڑ روپئے جاری کئے جانے کے اعلان کے باوجود اب تک صرف ریاست کو 400کروڑ روپئے ملے ہیں ۔ نریگا اسکیم کے تحت بقیہ رقم جاری کرنے کا بھی وزیر اعظم سے مطالبہ کیا گیا ہے۔

بندر بخار: شیموگہ و دیگر علاقوں میں بندر بخار کی وباؤ پھیلی ہوئی ہے ۔ اس بارے میں وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بندر بخار کے سلسلہ میں عوام کوڈر اور خدشات میں مبتلا ہونے کی ضرورت نہیں ہے ۔ کیونکہ ماہ نومبر تا مئی چند کیڑے ،پتنگوں کے بندر اور انسان کو کاٹنے سے وائرس پھیلتا ہے۔ملناڈ علاقوں میں کیڑوں کی بھرمار ہے ۔ دوائیوں کی کوئی قلت نہیں ہے ۔ ہبال میں واقع کمپنی ویکسی نیشن تیار کررہی ہے ۔ ویکسین تیا رکرنے کے 60دن تک ٹیسٹنگ سے گزارا جاتا ہے ۔ اور 70دنوں کے بعد ویکسین استعمال کے لئے دستیاب کروائی جاتی ہے ۔ اب تک ویکسی نیشن کیلئے 1.20لاکھ روپئے خرچ کئے گئے ہیں۔ امسال 1762مشتبہ معاملات کا ٹیسٹ کیا گیا۔ جس میں 250معاملات پازیٹیو پائے گئے ۔ بندر بخار سے 10افراد ہلاک ہوئے ہیں ۔ ساگر میں 8اور تیرتھ ہلی میں دو افراد ہلاک ہونے کی اطلاع ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بندر بخار کے معاملہ کو حکومت نے سنجیدگی سے لیا ہے ۔ اس سلسلہ میں مستقل حل ڈھونڈنکالنے کا فیصلہ کیاگیا ہے۔ اس کیلئے بجٹ میں 10کروڑ روپئے مختص کئے گئے ہیں ۔ بندر بخار سے فوت ہونے والے کنبہ کو انسانیت کی زاویہ نظر سے خصوصی معاملہ باور کرتے ہوئے معاوضہ کی رقم جاری کرنے کے سلسلہ میں غور کیا جارہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہندو لیڈر سورج نائک سونی نے اننت کمار ہیگڈے کو کہا،مودی حکومت کا داغدار وزیر؛ اُس کی مخالفت میں کام کرنے کے لئے نوجوانوں کی ٹیم تیار

ضلع شمالی کینرا میں ایک نوجوان ہندو لیڈر کے طور پر اپنی پہچان رکھنے والے کمٹہ کے سورج نائک سونی نے اخباری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ’’ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں چل رہی مرکزی حکومت میں اننت کمار ہیگڈے کی حیثیت ایک داغداروزیر کی ہے۔ اور ایسا لگتا ہے کہ انہیں ...

کرناٹک میں نوٹیفکیشن کے پہلے دن 6؍امیداروں کی نامزدگیاں داخل 

ریاست میں لوک سبھا الیکشن کے پہلے مرحلہ میں 14؍سیٹوں پر 18؍اپریل کو ہونے والے الیکشن کے لئے پرچہ نامزدگی کرنے کا آغاز ہوگیا ۔ پہلے دن چار حلقوں میں6؍ امیدواروں کی جانب سے 11؍ مزدگیاں داخل کئیں۔ یہ اطلاع ریاستی الیکشن افسر سنجیو کمار نے دی۔

بنگلورو کے تینوں پارلیمانی حلقوں میں ڈی سی پیز کی زیرنگرانی سخت بندوست لائسنس یافتہ 7؍ہزار ہتھیارات تحویل میں :پولیس کمشنر ٹی۔ سنیل کمار

پولیس کمشنر ٹی۔ سنیل کمار نے بتایا کہ بنگلور سنٹرل ،بنگلور نارتھ اور بنگلور ساؤتھ لوک سبھا حلقوں میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے لئے ڈپٹی کمشنر آف پولیس (ڈی سی پی) سطح کے پولیس افسروں کی نگرانی میں پولیس کا سخت بندوبست کیاگیا ہے۔