کمار سوامی صرف ہفتے کے روز عوام سے ملیں گے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 27th August 2018, 11:54 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،27؍اگست(ایس او نیوز) وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے اعلان کیا ہے کہ ریاستی عوام کے مسائل کو سلجھانے کے لئے وہ روزانہ کی بجائے ہفتے میں ایک دن ہفتے کو صبح گیارہ بجے سے شام ساڑھے چار بجے تک اپنی ہوم آفس کرشنا میں جنتادرشن کریں گے۔

دفتر وزیر اعلیٰ کی طرف سے جاری بیان کے مطابق جنتادرشن کے دوران سرکاری ملازمین کے تبادلوں کی کوئی درخواست قبول نہیں کی جائے گی۔ طبی امداد کے لئے جو درخواستیں دی جائیں گی ان کے ساتھ مریض کا آدھار کار، بی پی ایل کارڈ ،اسپتال کے اصلی بل ، ڈسچارج سمری کو منسلک کیاجانا چاہئے۔ ان دستاویزوں کے بغیر ملنے والی کوئی بھی درخواست خاطر میں نہیں لائی جائے گی۔ وزیر اعلیٰ کی ہدایت پر جو بھی قدم اٹھایا جائے گا اس کی اطلاع ایس ایم ایس کے ذریعے دی جائے گی ۔

وزیر اعلیٰ کی جے پی نگر کی رہائش گاہ ، کرشنا یا ودھان سودھامیں عوام کی غیر متوقع آمد کی وجہ سے وزیر اعلیٰ کی مصروفیات متاثر ہورہی ہیں، اور اس وجہ سے وزیراعلیٰ طے شدہ پروگراموں میں بروقت حاضر نہیں ہوپارہے ہیں اسی لئے دفتر وزیر اعلیٰ کی طرف سے عوام سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ نئے شیڈول کے مطابق جنتادرشن میں صرف ہفتے کو حصہ لیں۔

ایک نظر اس پر بھی

ویمن انڈیا موؤمنٹ کی جانب سے 23 ستمبر کو بنگلور سے شروع ہورہی ہے خواتین کے تحفظ کو لے کر ملک گیر مہم

ویمن انڈیا موؤمنٹ (Women India Movement) نے 23ستمبر 2018تا 8 مارچ 2019 " خواتین پر تشدد بند کرو " اور "ّ آئیے ہمارے تحفظ کیلئے لڑائی لڑیں " کے نعروں کے تحت  ایک ملک گیر مہم  شروع  کرنے کا اعلان کیا ہے جس کے لئے  ملک کی خواتین سے اپیل کی گئی  ہے کہ وہ اس ملک گیر تحریک میں شامل ہوکر اپنے حالات ...

جنوبی ہند کے مشہور ومعروف عالم دین حضرت مولانا زکریا والا جاہی کا انتقال

نوبی ہند کے مشہور ومعروف،ممتاز جیدعالم دین زکریا صاحب والا جاہی طویل علالت کے بعد آج صبح 10؍بجے اپنے مالک حقیقی سے جاملے۔ مولانا کو شیواجی نگرکے براڈوے کی ان کی رہائش پر آخری دیدار کے لئے رکھا گیا تھا۔

یڈیورپا میرے صبر کا امتحان نہ لیں؛ حکومت کو گرانے کی بارہا کوشش بی جے پی کو زیب نہیں دیتی: کمار سوامی کا بیان

وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے ریاستی بی جے پی صدر یڈیورپا کو متنبہ کیا ہے کہ بارہا ریاستی حکومت کو گرانے کی کوشش کرکے وہ ان کے صبر کا امتحان نہ لیں۔اگر یہ کوشش جاری رہی تو یڈیورپا کو اس کی بھاری قیمت ادا کرنی پڑے گی۔